کورونا بحران: نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف اوپن اسکولنگ امتحانات 2020 منسوخ کرنے کا فیصلہ

Source: S.O. News Service | Published on 11th July 2020, 11:41 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،11؍جولائی(ایس او نیوز؍ایجنسی)  نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف اوپن اسکولنگ (این آئی او ایس) نے مارچ 2020 کے لیے مقرر سیکنڈری اور ہائر سیکنڈری کورسیز کے لیے اپنے امتحانات رد کر دیے ہیں۔ فروغ انسانی وسائل کے مرکزی وزیر ڈاکٹر رمیش پوکھریال نشنک نے آج کہا کہ "اب تک ہم نے اپنے تمام فیصلے طلبا کی صحت اور مفادات کو مدنظر رکھتے ہوئے کیا ہے، اسی طرح این آئی او ایس سے تعلیم حاصل کرنے والے طلباء کی صحت اور ان کے مفادات کے مدنظر ہم نے ان امتحانات کو منسوخ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ میں ایک بار پھر تمام طلباء اور والدین کو یقین دلاتا ہوں کہ حکومت ہند اور فروغ انسانی وسائل کی وزارت تمام طلبا کا مستقبل محفوظ رکھ کر ہی کام کرے گی"۔

قبل ازیں یہ امتحانات کورونا بحران کے پیش نظر مارچ سے 17 جولائی تک شیڈول کیے گئے تھے۔ اس کے علاوہ، تجرباتی امتحانات (پریکٹیکل) کو بھی درمیان میں ہی روک دیا گیا تھا۔ طلبا کی صحت اور مفادات کا خیال کرتے ہوئے این آئی او ایس کی "مجاز کمیٹی" ایویلیوشن پلان کی بنیاد پر طلبا کا ایویلیوشن (تشخیص، اندازہ) کرے گی۔ اس امتحان کے لیے 3.67 لاکھ سے زیادہ طلبا نے رجسٹریشن کروایا ہے۔ سینئر سیکنڈری امتحانات کے لیے 2.10 لاکھ طلبا نے رجسٹریشن کروایا تھا۔

اس کے علاوہ این آئی او ایس نے طلباء کی کارکردگی کو بہتر بنانے کے لیے اگلے امتحانات یا آن ڈیمانڈ امتحانات دینے کا آپشن بھی دیا ہے۔ یہ امتحانات اس وقت منعقد کیے جائیں گے جب حالات سازگار ہوں گے۔ اس سلسلے میں تمام معلومات این آئی او ایس کی ویب سائٹ پر دستیاب ہوں گی۔

ایک نظر اس پر بھی

کشمیر میں بی جے پی کارکنان کو ایک منصوبہ کے تحت نشانہ بنایا جارہا: الطاف ٹھاکر

 بی جے پی جموں و کشمیر یونٹ کے ترجمان الطاف ٹھاکر نے پارٹی کارکنوں پر ہونے والے حملوں کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ کشمیر میں بی جے پی کے کارکنوں کو ایک منصوبہ بند سازش کے تحت نشانہ بنایا جا رہا ہے۔

مرکزی حکومت کا ہتھیاروں کی درآمد پر پابندی کا فیصلہ ناقابل فہم: سوگت رائے

مرکزی حکومت کے ذریعہ 101ملٹری ہتھیاروں کی درآمدگی پر پابندی عاید کیے جانے پر ترنمول کانگریس نے سوال کھڑے کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ قدم اٹھانے سے قبل ملک میں اسلحہ سازی کی صلاحیت میں اضافہ کرنے کی ضرورت تھی اور اس کے لئے روڈ میپ تیار کیا جانا چاہیے۔

کشمیر: ڈاکٹر شاہ فیصل نے اٹھایا حیرت انگیز قدم، پارٹی کے صدارتی عہدہ سے دیا استعفیٰ

 کشمیری قوم کے لئے نیلسن منڈیلا بننے کی تمنا رکھنے والے 36 سالہ سابق آئی اے ایس افسر ڈاکٹر شاہ فیصل نے گزشتہ برس مارچ میں 'ہوا بدلے گی' نعرے کے تحت لانچ کردہ اپنی جماعت 'جموں و کشمیر پیپلز موومنٹ' کے صدارتی عہدے سے استعفیٰ دے دیا ہے۔ ان کی جگہ پر پارٹی کے نائب صدر فیروز پیرزادہ کو ...