ٹرمپ سے متعلق انکشافات پر مبنی کتاب کی اشاعت پر پابندی

Source: S.O. News Service | By INS India | Published on 1st July 2020, 6:52 PM | عالمی خبریں |

 نیویارک یکم/جولائی(آئی این ایس انڈیا) امریکہ کی ریاست نیو یارک کے ایک جج نے صدر ڈونلڈ ٹرمپ سے متعلق ایک کتاب کی اشاعت پر عارضی پابندی لگا دی ہے۔ اس کتاب کے بارے میں دعویٰ کیا جا رہا ہے کہ اس میں امریکی صدر کے بارے میں کچھ ایسی معلومات شامل ہیں جو ان کے لیے شرمندگی کا باعث بن سکتی ہیں۔

ریاست نیو یارک کی سپریم کورٹ کے جج ہال گرین والڈ نے جس کتاب کی اشاعت روکی ہے وہ صدر ٹرمپ کی بھتیجی میری ٹرمپ نے لکھی ہے۔ اس کتاب کا عنوان ہے ٹو مچ اینڈ نیور اینف: ہاؤمائی فیملی کری ایٹڈ دی ورلڈز موسٹ ڈینجرس مین‘۔ یہ کتاب 28 جولائی کو مارکیٹ میں آنی ہے۔ لیکن جج گرین والڈ نے کہا ہے کہ وہ کتاب کے خلاف درخواست دینے والے صدر ٹرمپ کے بھائی کا موقف سن کر اس بات کا حتمی فیصلہ کریں گے کہ یہ کتاب شائع ہو گی یا نہیں۔ عدالت میں درخواست دائر کرنے والے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے بھائی رابرٹ نے موقف اپنایا ہے کہ میری ٹرمپ خاندان کے ایک معاہدے کے تحت اس بات کی پابند ہیں کہ وہ خاندان کے دیگر افراد کی اجازت کے بغیر ٹرمپ فیملی سے متعلق کوئی کتاب نہیں لکھ سکتیں۔ میری ٹرمپ کے وکیل تھیوڈور باؤٹروس جونیئر نے عدالت کی جانب سے کتاب کی اشاعت پر پابندی کو امریکی آئین کی واضح خلاف ورزی قرار دیا ہے۔ واضح رہے کہ امریکی آئین میں ہونے والی پہلی ترمیم میں اظہارِ رائے کی آزادی کو عوام کا بنیادی حق قرار دیا گیا ہے۔ باؤٹروس جونیئر نے کہا ہے کہ یہ کتاب ایک ایسے وقت شائع ہو رہی ہے جب امریکہ میں انتخابات ہونے والے ہیں اور ایک ایسے شخص سے متعلق ہے جو دوسری مدت کے لیے صدر کا انتخاب لڑ رہا ہے۔ وکیل کے بقول اس کتاب میں ایسے عوامل پر بات کی گئی ہے جو عوام کے لیے جاننا ضروری ہیں اور اس لیے اس کتاب کی اشاعت کو ایک دن کے لیے بھی نہیں روکنا چاہیے۔ دوسری جانب امریکی صدر کے بھائی رابرٹ ٹرمپ کے وکیل چارلس ہارڈر نے میری ٹرمپ اور ان کی کتاب کے پبلشرز کے اقدامات کو انتہائی قابلِ مذمت قرار دیا ہے اور کیس کو بھرپور انداز میں لڑنے کا عندیہ دیا ہے۔ واضح رہے کہ میری ٹرمپ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے بڑے بھائی آنجہانی فریڈ ٹرمپ جونیئر کی صاحب زادی ہیں۔ فریڈ ٹرمپ شراب نوشی کی لت میں مبتلا تھے اور 1981 میں دل کا دورہ پڑنے سے ان کی موت ہو گئی تھی۔ عدالتی احکامات کے بعد کتاب کے پبلشر سائمن اینڈ شوسٹر کی ویب سائٹ سے اس کتاب سے متعلق معلومات ہٹا دی گئی ہیں۔ ویب سائٹ پر دیے گئے کتاب کے تعارف میں کہا گیا تھا کہ یہ کتاب امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جابر شخصیت اور ان کے خاندان کی زہر آلود زندگی کا احاطہ کرتی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بحرین کی اسرائیل سے ڈیل،علاقائی سلامتی کو تقویت ملے گی: شیخ سلمان کی نیتن یاہو سے گفتگو

بحرین کے ولی عہد شیخ سلمان بن حمد آل خلیفہ نے اسرائیلی وزیراعظم بنیامین نیتن یاہو سے ٹیلی فون پر بات چیت کی ہے۔انھوں نے عالمی سلامتی اور امن کو مضبوط بنانے اور امن ، استحکام اور خوش حالی کے فروغ کے لیے مسلسل کوششیں جاری رکھنے کی ضرورت پر زوردیا ہے۔

ایردوآن نے یو این میں اٹھایا مسئلہ کشمیر، ’اندرونی معاملات میں دخل نہ دے ترکی‘ انڈیا کی تاکید

 جموں و کشمیر کے حوالہ سے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں ترکی کے صدر رجب طیب اردوآن کے بیان پر اقوام متحدہ میں ہندوستان کے مستقل نمائندہ ٹی ایس ترومورتی نے سخت احتجاج کرتے ہوئے کہا ہے کہ ترکی کو دوسرے ممالک کی خودمختاری کا احترام کرنا سیکھنا چاہئے۔