سدارمیا سے ملے بی جے پی کے دو سابق ممبر اسمبلی، مانگا کانگریس کا ٹکٹ

Source: S.O. News Service | Published on 11th November 2019, 11:44 PM | ریاستی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بنگلورو،11/نومبر(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا) کرناٹک میں بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے دو سابق ممبران اسمبلی نے کانگریس کے سینئر لیڈر اور سابق وزیر اعلیٰ سدارمیا اور ڈی شوکمار سے ملاقات کی ہے۔کانگریس لیڈر سے ملنے والے بی جے پی کے دونوں سابق ممبر اسمبلی 2018 کا عام انتخابات ہار گئے تھے۔کاگواڑ سے رکن اسمبلی رہے بی جے پی لیڈر راجو کاگے اور گوکک سے رکن اسمبلی رہے اشوک پجاری نے پیر کو بنگلور میں کانگریس لیڈر سدارمیااور ڈی شیو کمار سے ملاقات کی۔اب آئندہ اسمبلی ضمنی انتخابات کے لئے کانگریس سے ٹکٹ کا مطالبہ کر رہے ہیں۔ حالانکہ سدھارمیا اور ڈی شیو کمار نے ممبران اسمبلی کو ٹکٹ دینے کی یقین دہانی کرائی ہے یا نہیں؟ یہ بات واضح نہیں ہے۔ بتا دیں کہ کرناٹک اسمبلی کی 15 سیٹوں پر ضمنی انتخابات کے لئے ووٹنگ کی تاریخوں کا اعلان ہو گیا ہے۔کرناٹک کے الیکشن کمشنر سنجیو کمار نے بتایا کہ 5 دسمبر کو ووٹنگ ہوگی اور 9 دسمبر کو نتیجے آ جائیں گے۔اس کے ساتھ ہی پوری ریاست میں آج یعنی 11 نومبر سے انتخابی ضابطہ اخلاق نافذ ہو گیا ہے۔ کرناٹک میں 5 دسمبر کو 15 اسمبلی حلقوں میں ضمنی انتخابات ہونے ہیں، اسے دیکھتے ہوئے ان علاقوں میں پیر سے مثالی ضابطہ اخلاق نافذ ہو گئی ہے۔مشرق کی مخلوط حکومت کے خلاف مظاہرہ کرتے ہوئے کانگریس کے 14 اور جنتا دل-سیکولر (جے ڈی ایس) کے تین باغی ممبران اسمبلی نے جولائی میں اپنے اسمبلی حلقہ سے استعفی دینے کے بعد انہیں نااہل ٹھہرائے جانے کے بعد ضمنی انتخابات کرائے جا رہے ہیں۔ریاست میں پانچ دسمبر کو اتھانی، کاگواڈ، گوکک، ییلاپورا، ہیریکیرور، رانی بینور، وجئے نگر، چک بلاپورا، کے آر پورہ، یشونت پورا، مہالکشمی لے آؤٹ، شواجی نگر، ہوس کوٹ، کے آر پیٹے، ہنسور میں ضمنی انتخابات ہوں گے۔ اس کے لئے 11 نومبر سے 18 نومبر تک پرچہ نامزدگی داخل کی جاسکتی ہے جبکہ 21 نومبر تک نامزدگی واپس لئے جا سکیں گے۔بتا دیں کہ 5 دسمبر کو ووٹ ڈالے جائیں گے جبکہ 9 دسمبر کو ووٹوں کی گنتی ہوگی۔

ایک نظر اس پر بھی

اُلال کے رکن اسمبلی یوٹی قادر سے ایس ڈی پی آئی کا مطالبہ

جنوبی کینرا بنٹوال تعلقہ کے سجی پانڈو دیہات میں ہر سال بارش کے موسم میں گزشتہ 30 برسوں سے لوگوں کو ہمیشہ  پریشانی کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ یہ علاقہ اُلال کے رکن اسمبلی یوٹی قادر کے حلقہ میں آتا ہے اور یہاں مسلمانوں کی کثیر آباد ی ہے۔

منگلورو۔کاسرگوڈ سرحد پر مسافروں کیلئے پریشانی

ریاست میں گزشتہ ماہ اپریل سے ہی کورونا وائرس پھیلنے کے نتیجہ میں کیرالہ ۔ کرناٹک کی سرحد پر واقع کاسرگوڈ اور منگلورو کے درمیان روازنہ ملازمت اور تعلیم کے سلسلہ میں آنے جانے والے لوگوں کیلئے ہر دن نت نئی پریشانیوں کا سامنا کرناپڑرہا ہے۔

کرناٹک میں کووڈ۔19 کمیونٹی پھیلاؤ کا کوئی امکان نہیں، مرکزی ٹیم کا چیف منسٹر و عہدیداروں کے ساتھ تبادلہ خیال؛ سری راملو کی پریس کانفرنس

کرناٹک نے منگل کے روز مرکز ی ٹیم کو بتایا کہ ریاست میں کووڈ۔19 کے کمیونٹی پھیلاؤ کا کوئی امکان نہیں ہے۔ریاستی وزیر صحت و خاندانی بہبود بی سری راملو نے میڈیا سے کہا ’’ ہم نے یہ واضح کردیا ہے کہ یہاں کمیونٹی پھیلاؤ کا امکان نہیں ہے۔ ہم ، دوسرے اور تیسرے مرحلہ کے درمیان ہیں‘‘۔

کرناٹک میں کورونا کا قہر جاری؛ پھر 1498 نئے معاملات، صرف بنگلور سے ہی سامنے آئے 800 پوزیٹیو

کرناٹک میں کورونا کا قہر جاری ہے اور ریاست  میں روز بروز کورونا کے معاملات میں اضافہ دیکھا جارہا ہے، ریاست کی راجدھانی اس وقت  کورونا کا ہاٹ اسپاٹ بنا ہوا ہے جہاں ہر روز  سب سے زیادہ معاملات درج کئے جارہے ہیں۔ آج منگل کو پھر ایک بار کورونا کے سب سے زیادہ معاملات بنگلور سے ہی ...

کورونا: ہندوستان میں ’کمیونٹی اسپریڈ‘ کا خطرہ، اموات کی تعداد 20 ہزار سے زائد

  ہندوستان میں کورونا انفیکشن کے بڑھتے معاملوں کے درمیان کمیونٹی اسپریڈ یعنی طبقاتی پھیلاؤ کا  اندیشہ بڑھتا نظر آرہا ہے۔ بالخصوص کرناٹک  میں کورونا انفیکشن کے کمیونٹی اسپریڈ کا اندیشہ ظاہر کیا جارہا ہے ۔ کرناٹک کے علاوہ گوا، پنجاب و مغربی بنگال کے نئے ہاٹ اسپاٹ بننے کے ...

منگلورو:گروپور میں منڈلارہا ہے مزید پہاڑی کھسکنے کا خطرہ۔ قریبی گھروں کو کروایا گیاخالی۔ مکینوں میں مایوسی اور دہشت کا عالم

گروپور میں اتوار کے دن بنگلے گُڈے میں پہاڑی کھسکنے سے جہاں  تین  مکان زمین بوس اور دو بچے، صفوان (16سال) اور سہلہ (10سال) جاں بحق ہوگئے تھے وہاں پر مزید پہاڑی کھسکنے کا خطرہ لوگوں کے سر پر منڈلا رہا ہے۔

اُترکنڑا میں آج پھر کورونا کے 20 کیسس؛ بھٹکل کے ایک شخص کی مینگلور میں موت سمیت 13 پوزیٹیو

اُترکنڑا میں کورونا کے معاملات رُکنے کا نام نہیں لے رہے ہیں اور ہرروز  کورونا سے متاثرہ لوگ یہاں سامنے آرہے ہیں، حیرت کی بات یہ ہے کہ ضلع کے بھٹکل میں بھی کورونا پوزیٹیو معاملات  تھمنے کا نام نہیں لے رہے ہیں، ایک طرف ضلع میں 20 کورونا پوزیٹیو کے معاملات سامنے آئے ہیں تو اس میں ...

منگلورو۔کاسرگوڈ سرحد پر مسافروں کیلئے پریشانی

ریاست میں گزشتہ ماہ اپریل سے ہی کورونا وائرس پھیلنے کے نتیجہ میں کیرالہ ۔ کرناٹک کی سرحد پر واقع کاسرگوڈ اور منگلورو کے درمیان روازنہ ملازمت اور تعلیم کے سلسلہ میں آنے جانے والے لوگوں کیلئے ہر دن نت نئی پریشانیوں کا سامنا کرناپڑرہا ہے۔

خطرے میں اسپین، 95 فیصد آبادی ہو سکتی ہے کورونا کا شکار: تحقیق

کورونا وائرس یعنی کووڈ-19 کے حوالہ سے اسپین میں کی گئی اسٹڈی میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ اسپین کی آبادی کا صرف 5فیصد ہی اینٹی باڈیز تیار کرسکا ہے، جس سے یہ بات ثابت ہوتی ہے کہ کورونا سے بچاؤ کے لیے ’ہرڈ امیونٹی‘ حاصل نہیں کی جاسکتی۔

کاروار اسپتال سے 12 مزید لوگ ڈسچارج

بھلے ہی  ضلع اُترکنڑا میں کورونا پوزیٹیو کے معاملے ہر روز سامنے آرہے ہوں، لیکن کاروار اسپتال میں ایڈمٹ کورونا کے متاثرین  روبہ صحت ہوکر ڈسچارج ہونے کا سلسلہ بھی برابر جاری ہے۔