راجستھان میں پہلی بار آئے گی تکنیکی تعلیمی پالیسی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 23rd July 2019, 11:56 AM | ملکی خبریں |

جے پور، 23/جولائی (ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا) راجستھان حکومت تکنیکی تعلیم کی بڑھتی ہوئی اہمیت کو ذہن میں رکھتے ہوئے پہلی بار تکنیکی تعلیمی پالیسی بنانے پر غور کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس پالیسی میں کا معیار اور ہدایات وغیرہ شامل کئے جائیں گے۔ تکنیکی تعلیم کے وزیر مملکت سبھاش گرگ نے پیر کو اسمبلی میں وقفہ ئ سوال میں اس کی اطلاع دی۔انہوں نے کہا کہ فی الحال تکنیکی تعلیم کے لیے کالج کھولنے کے سلسلے میں کوئی معیار مقرر نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ یونیورسٹی اور تکنیکی یونیورسٹیوں کے لئے معیار مقرر کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا یونیورسٹی کا معیار اور معیار کو اختیار کرنے کو یقینی بنانا ہے اور حکومت صرف این او سی دیتی ہے۔ گرگ نے یہ بھی بتایا کہ سرکاری اور نجی تکنیکی کالجوں میں لی جا رہی فیس میں فی الحال زیادہ فرق نہیں ہے۔ انہوں نے بتایا کہ فی الحال سرکاری کالجوں میں 60 ہزار اور نجی کالجوں میں 70 ہزار فیس لی جا رہی ہے۔ اس سے پہلے ممبر اسمبلی کے سوال کے جواب میں گرگ نے بتایا کہ سرکاری شعبہ میں نیا انجینئرنگ کالج کھولنے کے لئے ریاستی حکومت کے کوئی کا معیار مقرر نہیں ہے۔ سرکاری شعبہ میں نیا انجینئرنگ کالج کھولنے کا فیصلہ، علاقائی ضروریات کی تشخیص کرتے ہوئے مالی وسائل کی دستیابی پر کیا جاتا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

ایڈی یورپا کو پارٹی ہائی کمان کی تنبیہ۔ وزارتی قلمدان تقسیم کرو یا پھر اسمبلی تحلیل کرو

عتبر ذرائع سے ملنے والی خبر کے مطابق بی جے پی ہائی کمان نے وزیراعلیٰ کرناٹکا ایڈی یورپا کو تنبیہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ وزارتی قملدانوں سے متعلق الجھن اور وزارت سے محروم اراکین اسمبلی کے خلفشار کو جلد سے جلد دور کرلیں ورنہ پھر اسمبلی کو تحلیل کرتے ہوئے از سرِ نو انتخابات کا سامنا ...

چار فرضی صحافیوں کو پولیس نے کیا گرفتار

گوتم بدھ نگر ضلع تھانہ بیٹا کے پولیس نے چار افراد کو گرفتار کیا جن پر الزام ہے کہ وہ صحافی ہونے کا دعوی کرکے غیر قانونی وصولی کرتے تھے اور اپنے مفاد کے لئے انتظامی حکام پر دباؤ بناتے تھے۔