بھٹکل نیو شمس اسکول طلبا  کی جانب سے  1لاکھ  سے زائد روپئے کا  عطیہ تنظیم کے ریلیف فنڈ میں جمع کیا

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 7th September 2019, 7:34 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل:7؍ستمبر(ایس اؤ نیوز) نیو شمس اسکول کے طلبا و اساتذہ کی طرف سے سیلاب متاثرین کےلئے 1،08،630روپئے مجلس اصلاح وتنظیم بھٹکل کے متاثرین فنڈ کو  عطاکی گئی ۔سنیچر کو اسکول ہال میں منعقدہ مختصر تقریب میں اسکول کے ذمہ داروں نے تنظیم کے جنرل سکریٹری عبدالرقیب ایم جے کو رقم منتقل کی۔

 صدارتی خطاب کرتےہوئے تربیت ایجوکیشن سوسائٹی کے نائب صدر اور جماعت اسلامی ہند بھٹکل کے امیر مقامی حافظ انجنئیر قاضی نذیر احمد نے حدیث کا حوالہ دیتے ہوئے کہاکہ دینے والا ہاتھ مانگنے والےہاتھ سے بہتر ہے۔ ہم سب کو اپنی بساط بھر متاثرین کی مدد کرنا سیکھیں ، معاشرے میں دینے والے ہاتھوں کا احترام کئے جانےکی بات کہی۔ انہوں نے اللہ کے نبی ﷺ کو بطور نمونہ پیش کرتےہوئے کہاکہ آپﷺ ہمیشہ معاشرے کے کمزور، لاچار، بےسہاروں کے لئے فکر مند اور عملی کام کرتے تھے۔ مہمان خصوصی ادارے کے سابق صدر عبدالقادر باشا رکن الدین نے کہاکہ اسکول کے طلبا کا اس طرح سماجی خدمت میں تعاون کرنا ایک بہتر قدم ہے ،نئی نسل کو معاشرتی خدمت میں مشغول کرنےکی خاطر ملک میں جہاں سماوی حادثات ہوتےہیں ان کی مدد و تعاون کے لئے ہمارے طلبا نے خلوص کے ساتھ مدد کی ہے۔ انہوں نےتنظیم کے سماجی خدمات کو پیش کرتے ہوئے کہاکہ پچھلے سوبرسوں سے یہ کام جاری ہے۔ شمس اسکول کے طلبا نے ایک لاکھ سے زائد کی رقم بطور تعاون پیش کرتےہوئے تنظیم کے سماجی خدمات کو مضبوط کرنے کی بات کہی۔ تنظیم کے جنرل سکریٹری عبدالرقیب ایم جے نے طلبا کی سماجی فکر کی ستائش کرتے ہوئے کہاکہ یہی طلبا مستقبل میں معاشرے کے مضبوط ستون ہونگے۔

پرنسپال فہمیدہ خضر نے استقبال کرتےہوئے افتتاحی کلمات پیش کئے تو مولانا عزیز الرحمان رکن الدین ندوی نے شکریہ اداکیا۔ اسکول کونسل کے لیڈر نادر ائیکیری نے نظامت کی۔ عبداللہ ارمار کی تلاوت قرآن سے تقریب کا آغاز ہوا۔ ڈائس پر ایس ایم سید شکیل ، محمد سلیم سعدا، مولانا سید یاسر ندوی برماور، تنظیم کے نائب صدر محمد ہاشم محتشم وغیرہ موجود تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل میں بجلیوں کی چمک اور بادلوں کی گرج کے ساتھ موسلادھار بارش؛ بینگرے میں ایک گھرکو نقصان، ماولی میں الیکٹرانک اشیاء جل کر راکھ؛ الیکٹرک سٹی سپلائی بری طرح متاثر

آج منگل دوپہر کو ہوئی موسلادھار بارش اور بجلیاں گرنے سے ایک مکان کو نقصان پہنچا وہیں دوسرے ایک مکان کی الیکٹرانک اشیاء جل کر خاک ہوگئی۔

بھٹکل: جے این یو کے لاپتہ متعلم نجیب احمد کو ڈھونڈ نکالنے  اور اُس کے ساتھ انصاف کرنے  کا مطالبہ لے کر ایس آئی اؤ آف انڈیا کا ملک گیر احتجاج : بھٹکل اسسٹنٹ کمشنر کو بھی دیا گیا میمورنڈم

15اکتوبر 2016کو جواہر لال یونیورسٹی میں ایم ایس سی کےفرسٹ ائیر میں زیر تعلیم نجیب  احمد یونیورسٹی کے ہاسٹل سے لاپتہ ہوئے تین سال ہورہےہیں ،گمشدگی کی پہلی رات کو ہاسٹل میں اے بی وی پی کے کارکنان نے حملہ کیا تھا، مگر اس معاملے میں ابھی تک کوئی پیش رفت نہیں ہونے پر اسٹوڈنٹس اسلامک ...

بھٹکل کے اسسٹنٹ کمشنر ساجد ملا کا تبادلہ :ایماندار آفسران کے تبادلوں پر عوام میں حیرت ؛کے اے ایس آفیسر  اے رگھو ہونگے نئے اے سی

بھٹکل کے اسسٹنٹ کمشنر ساجد ملا کا تبادلہ کرتےہوئے ریاستی حکومت نے حکم نامہ جاری کیا ہے، ساجد ملا کے عہدے پر کے اے ایس جونئیر گریڈ کے پروبیشنری افسر اے رگھو کا تقر ر کیاگیا ہے۔ اس طرح تعلقہ کے اہم کلیدی عہدوں پر فائز ایماندار افسران کے تبادلوں کولے کرعوام تعجب کا اظہار کیا ہے۔

محکمہ جنگلات کے افسران کے خلاف بھٹکل پولس اسٹیشن کے باہر احتجاج؛ اے ایس پی کو دی گئی تحریری شکایت

جنگلاتی زمین کے حقوق کے لئے لڑنے والی ہوراٹا سمیتی کے کارکنان نے آج بھٹکل ٹاون پولس تھانہ کے باہر جمع ہوکر محکمہ جنگلات کے اہلکاروں کے خلاف کاروائی کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے احتجاج کیا اور بھٹکل سب ڈیویژن کے اسسٹنٹ ایس پی  کے نام میمورنڈم پیش کیا۔ 

ضلع شمالی کینرا میں آج بھی 24ہزار خاندان گھروں سے محروم ! کیا آشریہ اسکیم کے ذریعے صرف دعوے کئے جاتے ہیں ؟

حکومت کی طرف سے بے گھروں کو مکانات فراہم کرنے کی اسکیمیں برسہابرس سے چل رہی ہیں۔ اس میں سے ایک آشریہ اسکیم بھی ہے۔ سرکاری کی طرف سے ہر بار دعوے کیے جاتے ہیں کہ بے گھروں اور غریبو ں کا چھت فراہم کرنے کے منصوبے پوری طرح کامیاب ہوئے ہیں۔

بھٹکل کے آٹو رکشہ ڈرائیور بھی ایماندار؛ بھٹکل میں تین لاکھ مالیت کے زیورات سے بھری بیگ لے کر رکشہ ڈرائیور پہنچا پولس اسٹیشن

  بھٹکل میں  راستے پر  کوئی  قیمتی چیز کسی کو گری ہوئی ملتی ہے  تو اکثر لوگ  اُسے اُس کے اصل مالک تک  پہنچانے کی کوشش کرنا عام بات ہے،  بالخصوص مسلمانوں کو راستے میں پڑی ہوئی  کوئی قیمتی چیز مل جاتی ہے تو     لوگ یا تو خود سے سوشیل میڈیا  میں پیغام وائرل کرکے  اُسے اُس کے اصل ...