کاروار: موسلادھار بارش اور سیلاب کی وجہ سے نیشنل ہائے ویز کا رابطہ منقطع۔ گوگل پر جاری ہوا ہے نقشہ۔ فیس بک پر دستیاب ہے ریلیف سے متعلق ایپ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 11th August 2019, 12:40 PM | ساحلی خبریں |

کاروار 11/فروری (ایس او نیوز) کرناٹکا، مہاراشٹرا اور کیرالہ میں موسلادھاربرسات اور سیلاب کی وجہ سے کئی مقامات پر نیشنل ہائی ویز پر رابطہ منقطع ہوگیا ہے  جس سے سفر پر نکلے ہوئے لوگ بری طرح پھنس گئے ہیں اور جو لوگ سفر پر نکلنے والے ہیں ان کے لئے بھی خدشات پیدا ہوگئے ہیں۔

    بگڑے موسم اورقومی شاہراہوں پر درپیش مشکلات کے تعلق سے عوام اور خاص کرکے مسافروں کو صحیح معلومات پہنچانے کے لئے  انٹرنیٹ پر ’گوگل میاپ‘ کے ذریعے ان مقامات کا نقشہ’ویسٹرن انڈیا فلڈس‘ (مغربی ہندوستان کے سیلاب) کے عنوان سے پیش کیاگیا ہے، جہاں پر نیشنل ہائی ویز پانی میں ڈوب گئے ہیں اور وہاں سفر کرنا فی الحال دشوار ہوگیا ہے۔خیال رہے کہ کیرالہ اور کرناٹکا میں کئی جگہوں پرچٹانیں کھسکنے کی وجہ سے سڑکیں ناقابل استعمال ہوگئی ہیں۔قدرتی آفت کے اس مشکل وقت میں بہت سارے دیہات پانی میں ڈوب گئے ہیں اور ان کا دوسرے شہروں اورگاؤں سے بھی راستہ ٹوٹ گیا ہے۔گوگل میاپ نے اپنے ایپلی کیشن کے ذریعے ایسے مقامات کی طرف سفر کرنے سے عوام کو باز رکھنے کے لئے رہنمائی کاکام کیا ہے۔اس ایپ پر ہر ایک منٹ پر ان مقامات کی حقیقی صورتحال کے بارے میں معلومات اپڈیٹ کی جارہی ہیں۔ جن مقامات پر ٹریفک روک دی گئی ہے اور سفر کے لئے اس طرف گزرنا ممکن نہیں ہے، ان مقامات پر سرخ نشان لگائے گئے ہیں۔جہاں پرسفر اور موٹر گاڑیوں کی آمد ورفت بند ہونے کے امکانات موجود ہیں اسے گہرے پیلے رنگ سے نمایاں کیا گیا ہے۔اس کے علاوہ گوگل میاپ استعمال کرنے والے خود بھی اپنے طور پر سیلاب یا راستہ ناقابل استعمال ہونے کی معلومات اس پر اپلوڈ کرسکتے ہیں۔

    اس کے علاوہ سوشیل میڈیا کے معروف پلیٹ فارم فیس بک نے بھی ریلف حاصل کرنے یا پہنچانے کے لئے سہولت فراہم کی ہے۔فیس بک پر ’فلڈ‘ (سیلاب) کے عنوان سے تلاش کرنے پر ’کرائسس ریسپانس‘ مینو نظر آتا ہے۔اسے کھولنے کے بعد سیلاب سے متاثرہ حصوں میں مقیم فیس بک فرینڈز کی تفصیلات سامنے آتی ہیں۔ اس کے علاوہ اگر سیلاب زدہ افراد کو ریلیف پہنچانی ہوتو ’آفر ہیلپ‘کاکالم موجود ہے۔اس کے ذریعے امداد پہنچانا یا پھر امداد حاصل کرنا ممکن ہوجاتا ہے۔اس کے لئے ضروری تفصیلات درج کرنے کے بعد ضرورت مند وہاٹس ایپ یا میسنجر کے ذریعے رابطہ قائم کرسکیں گے۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل میں مہرشی والمیکی جینتی پروگرام : وید اور پران کسی ایک طبقے تک محدود نہیں : جئے شری موگیر

مہرشی والمیکی نے سماج میں مساوات، بھائی چارگی ، آپسی اعتماد ، پیار و محبت پیدا کرنے والے مہان شخصیت تھے۔ وید اور پران کسی بھی ایک طبقے تک محدود نہیں ہونے کا اترکنڑا ضلع پنچایت صدر جئے شری موگیر نے خیال ظاہر کیا۔

بھٹکل کے وینکٹاپور برج پر لاریوں کی آپسی ٹکر : کوئی جانی نقصان نہیں

سامان سے لدی لاری اور مچھلی سپلائی سواری کے درمیان آپسی تصادم میں دونوں سواریوں کو شدید نقصان پہنچنے اور کرشماتی طورپر ڈرائیور اور کلینر بغیر کسی جانی نقصان سے عافیت پانے کا واقعہ سنیچر کی رات وینکٹاپور پُل پرپیش آیاہے۔

بھٹکل میں آدھار کارڈ کے سینٹرس تمام پنچایت دفتروں میں قائم کرنے کا مطالبہ لے کر کانگریس مائناریٹی کمیٹی کی جانب سے ڈپٹی کمشنر کو میمورنڈم

کانگریس ضلع مائناریٹی کمیٹی کی جانب سے ڈپٹی کمشنر کے نام ایک میمورنڈم دیا گیاجس میں مطالبہ کیاگیا ہے کہ آدھار کارڈ رجسٹریشن اور اس سے متعلقہ دوسری کارروائیوں کے لئے بھٹکل میں آدھار سنٹرز میں اضافہ کیا جائے اور تمام گرام پنچایتوں میں بھی ایسے سینٹرز قائم کیے جائیں۔

بھٹکل میں کی گئی شراب کا نشہ چھوڑنے والوں کی تہنیت

بھٹکل کے نسچل مکھی وینکٹر ا منا مندر میں اکھل کرناٹکا جن جاگرتی ویدیکے، دھرمستھلا گرام ابھیرودّی یوجنے بی سی ٹرسٹ (رجسٹرڈ)شمالی کینرااور کرناٹکا راجیہ مدھیہ پان سمیم منڈلی بنگلوروکے اشتراک سے ضلعی سطح پر گاندھی سمرتی، جن جاگرتی جتھا اور شراب کی لت چھوڑنے والوں کو تہنیت کا ...

کاروار میں مہرشی والمیکی جینتی پروگرام میں طلبا کی تہنیت : جدید ترقی نے زند گی کو بدل کررکھ دیا ہے : ڈی سی

بدلی ہوئی جدید زندگی میں لوگوں کے اصول واقدار میں بھی تبدیلیاں ہوئی ہیں۔ نئی نسل میں پہلے جیسے  بزرگوں کا احترام باقی نہیں رہا،نئی نسل کے نوجوان صرف  ظاہری اصولوں پر اکتفا کرنا افسوس ناک ہے۔ والدین خاص کر اس سلسلے میں نوجوانوں پر توجہ دے کر تربیت و رہنمائی کرنےکی اترکنڑا ضلع ...

ہوناور:قرض داروں کے تقاضے سے تنگ آکرآنگن واڈی کارکن خاتون نے کی خود کشی۔ ہراساں کرنے والوں کے خلاف قانونی کاروائی کا مطالبہ کرتے ہوئے احتجاجی مظاہرہ

بھاری شرح سود پرقرضہ دینے والوں کے تقاضے اور ہراسانی سے تنگ آکرکلسین موٹے کے مقام پر ایک آنگن واڈی کارکن نیتراوتی(31سال) نامی خاتون نے شراوتی ندی میں کود کرجمعہ کے دن خود کشی کرلی۔اس کے خلاف عوام نے تعلقہ اسپتال کے سامنے احتجاجی مظاہرا کرتے ہوئے مطالبہ کیا کہ قرض واپس لوٹانے کے ...