میانمار : مظاہرین پر فائرنگ،91 ہلاک

Source: S.O. News Service | Published on 28th March 2021, 11:46 AM | عالمی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

نیپیتا، 28؍مارچ (ایس او نیوز؍ایجنسی) میانمار میں فوجی حکومت کے خلاف ہورہے احتجاجی مظاہروں کے دوران کم از کم 91 لوگ مارے گئے ہیں۔میانمار ناؤ کی سنیچر کو شائع رپورٹ کے مطابق مقامی وقت چار بجکر 30 منٹ تک احتجاجی مظاہروں کے سبب 91لوگ مارے گئے ہیں۔ مظاہروں کے دوران یانگون، باگو، منڈالیہ اور نزدیکی علاقوں میں لوگ مارے گئے ہیں۔

ذرائع کے مطابق میانمار میں سنیچر کو مسلح افواج کا دن منایا جا رہا تھا،اس موقعے پر مظاہرین نے ینگون (رنگون) اور دیگر شہروں میں بھی مظاہرے کیے۔ اطلاعات کے مطابق 90سے زیادہ افراد مارے جاچکے ہیں۔ ایک اور اندازے کے مطابق مرنے والوں کی تعداد سو کے قریب ہو گئی ہے۔فوجی بغاوت کے قائد مِن آنگ ہلینگ نے سنیچر کو قومی ٹی وی پر خطاب میں کہا کہ وہ ’جمہوریت کا تحفظ‘ کریں گے۔ اْنھوں نے انتخابات کا وعدہ تو کیا، تاہم کوئی تاریخ نہیں دی۔

واضح رہے کہ فوج کی جانب سے طاقت کے مہلک استعمال کی دھمکی کے باوجود فوجی بغاوت کے خلاف متحرک کارکنوں نے سنیچر کو بڑے مظاہروں کا اعلان کیا تھا۔سکیورٹی فورسز بڑی تعداد میں مظاہروں کو روکنے کے لیے موجود تھیں۔ خاص طور پر ینگون میں سکیورٹی فورسز کی بڑی تعداد نظر آئی۔اموات کی تعداد کی تصدیق کرنا مشکل ہے تاہم نیوز ویب سائٹ دی ایراوادی کے مطابق 28 مقامات پر تین بچوں سمیت قریب 90افراد ہلاک ہوئے ہیں۔میانمار ناؤ کا کہنا تھا کہ ینگون کے مضافاتی علاقے میں پولیس اسٹیشن کے باہری چار ہلاکتوں سمیت 50 افراد ہلاک ہوئے ہیں۔

ایک صحافی نے خبر رساں ادارے اے ایف پی کو بتایا کہ پولیس نے شمال مشرقی شہر لاشیو میں مظاہرین کے خلاف اصلی گولیوں کا استعمال کیا تھا۔فوجی بغاوت کے مخالف ایک گروہ سی آر پی ایچ کے ترجمان ڈاکٹر ساسا نے خبر رساں ادارے روئٹرز سے کہا: ‘آج مسلح افواج کے لیے شرم کا دن ہے۔ فوجی جنرل 300 سے زیادہ معصوم شہریوں کو قتل کرنے کے بعد مسلح افواج کا دن منا رہے ہیں،وہیںسنیچر کو اپنی براہِ راست نشر ہونے والی تقریر میں مِن آنگ ہلینگ نے کہا کہ ‘فوج جمہوریت کے تحفظ کے لیے قوم کے ساتھ مل کر کام کرنا چاہتی ہے۔مطالبات کی خاطر استحکام اور تحفظ کو متاثر کرنے والے پرتشدد اقدامات غیر مناسب ہیں۔

’اْنھوں نے مزید کہا کہ فوج کو اقتدار پر قبضہ جمہوری طور پر منتخب آنگ سان سوچی اور اْن کی جماعت کے ‘غیر قانونی اقدامات’ کی وجہ سے کرنا پڑا۔لیکن اْنھوں نے واضح طور پر یہ نہیں کہا کہ فوج کو قتل کے ارادے سے گولی مارنے کے احکامات دیے گئے ہیں۔ اس سے قبل فوجی رہنماؤں کی جانب سے کہا گیا ہے کہ گولیاں مظاہرین کی جانب سے ہی چلائی گئیں۔غور طلب ہے کہ میانمار میں مسلح افواج کا دن 1945 میں جاپانی قبضے کے خلاف میانمار کی فوجی مزاحمت کی یاد میں منایا جاتا ہے۔اس دن ہونے والی پریڈ میں مختلف ممالک کے حکام شریک ہوتے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

برطانیہ کا ڈیجیٹل کرنسی ’برِٹ کوائن‘ بنانے پر غور

بینک آف انگلینڈ اور برطانوی وزارت خزانہ نے پیر کے روز کہا ہے کہ وہ مشترکہ طور پر ایک سینٹرل بینک ڈیجیٹل کرنسی بنانے کے امکان پر توجہ مرکوز کیے ہوئے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ عام طور پر ہارڈ کرنسی کا استعمال کم ہو رہا ہے جبکہ کورونا وباء کی وجہ سے نوٹوں کا استعمال مزید کم ہو کر رہ ...

ہانک کانگ نےہندوستان،پاکستان اور فلپائن کی پروازوں پر لگائی دو ہفتوں کی پابندی

کورونا وبا کےپھیلاؤ کےپیش نظر ہانگ کانگ نے فیصلہ کیا ہےکہ وہ اگلےدوہفتوں کےلئےہندوستان، پاکستان اور فلپائن سےآنےوالی پروازوں پر پابندی لگارہا ہے۔ہانگ کانگ نےان تین ممالک سےآنےوالی تمام پرواز یں معطل کر دی ہیں۔ہانک کانگ کےذمہ داران اس کی وجہ کووڈ19 کے ایشیائی ممالک میں ...

اُڈپی ضلع کے کوڈؤر کی جامعہ مسجد کی زمین پر غیرقانونی سرگرمیوں کا الزام: اے پی سی آر کی جانب سے انسانی حقوق کمیشن میں شکایت درج

کوڈؤور کلمات مسجد کی رجسٹرڈ زمین پر زور زبردستی داخل ہوکر غیر قانونی سرگرمیوں کو انجام دیا گیا ہے اور مسجد آنے والوں کو رکاوٹ پیدا کرنے کے متعلق اے پی سی آر اُڈپی نے 15اپریل کو کرناٹکا حقوق انسانی کمیشن میں شکایت درج کی ہے۔

بھٹکل تنظیم اور بھٹکل میونسپل صدر نے لیا کووِڈ ٹیکہ؛ بھٹکل میں کورونا ٹیکہ لگانے کے معاملے میں مسلمان پیچھے، آگے بڑھ کر ٹیکہ لینے کی ضرورت

آج منگل کو  بھٹکل کے قومی سماجی ادارہ مجلس اصلاح وتنظیم کےصدر جناب ایس ایم پرویز اور بھٹکل میونسپالٹی کے صدر جناب قاسمجی پرویز نے  سرکاری اسپتال پہنچ کر کووڈ ٹیکہ لگوایا  اور مسلمانوں پر زور دیا کہ کوویڈ سےمحفوظ رہنے کے لئے  تمام لوگوں کو کووڈ ٹیکہ لگوانا ضروری ہے۔ انہوں نے ...

مینگلور کے قریب کڈبا میں دو نوجوان ندی میں ڈوب کر جاں بحق

مینگلور سے قریب  85 کلو میٹر دور کڈبا تعلقہ کے اِچیلم پانڈے کی ایک ندی میں غرق ہوکر دو نوجوان جاں بحق ہوگئے جن کی نعشیں ندی سے برآمد کرلی گئی ہیں۔ حادثہ پیر کی شام کو پیش آیا جب یہ دونوں ندی میں نہانے کےلئے اُترے تھے۔

مدھیہ پردیش میں کووڈ کا قہر، 30 اپریل تک کورونا کرفیو کا نفاذ

مدھیہ پردیش میں حکومت کی تمام کوششوں کے باوجود کورونا کا قہرجاری ہے۔ ریاست میں کورونا کے ایکٹو مریضوں کی تعداد جہاں اڑسٹھ ہزار کو تجاوز کر گئی ہیں وہیں پچھلے چوبیس گھنٹےمیں ریاست میں کورونا کے بارہ ہزار دو سو اڑتالیس نئے معاملے درج کئے گئے ہیں ۔