نفرت جیت گئی، فنکارہار گیا،الوداع : منور فاروقی،اسٹینڈ اَپ کامیڈی کوخیرباد، بھگوا عناصر کی دھمکیوں کی بنا پر 2؍ مہینوں میں 12؍ شو منسوخ

Source: S.O. News Service | Published on 29th November 2021, 12:24 PM | ریاستی خبریں | ملکی خبریں |

ممبئی، 29؍نومبر (ایس او نیوز؍ایجنسی) معروف اسٹینڈ اَپ کامیڈین منور فاروقی    جو بھگوا عناصر کے نشانے پر ہیں، نے اتوار کو بنگلور میں بھی ہندوتواوادی شرپسندوں کی دھمکی کی وجہ سے اپنا شومنسوخ ہونے پر اسٹینڈ  اپ کامیڈی کو الوداع کہنے کا اشارہ دیا ہے۔جو لطیفہ انہوں  نے مبینہ طور سنایا  ہی نہیں،اس کی پاداش میں ایک ماہ تک جیل میں  رہنے   والے منور فاروقی  کے جیل سے رہائی کے بعد شو نہیں ہونے دیئے جارہے ہیں۔ گزشتہ ۲؍ مہینوں میں ان کے ۱۲؍ شو صرف اس لئے  منسوخ کردیئے گئے کہ ہندوتوا وادیوں  نے توڑ پھوڑ اور حملے کی دھمکی دی تھی۔ شری عناصر کو روکنے کے بجائے پولیس کی جانب سے شو کو ہی منسوخ کرنے کی اس روش   سے کبیدہ خاطر ہوکر منور فاروقی  نے اتوار کو  بنگلور میں اپنا شو منسوخ ہونے پر جذباتی پیغام لکھ کر الوداع کہا ہے۔  اتوار کو شام ۵؍ بجے بنگلور کے گُڈ شیفرڈ آڈیٹوریم میں’’ڈونگری سے نو وہیر‘‘ (ڈونگری سے کہیں نہیں)  کے عنوان سے منور فاروقی کا اسٹینڈ اَپ کامیڈی شوہونے والاتھا جس کیلئے ۶؍ سوٹکٹ فروخت ہوگئے تھے مگر بھگو ا عناصر نے شو ہونے پر شرانگیزی کی دھمکی دے ڈالی۔ نتیجے میں  پولیس نے ایک مکتوب لکھ کرمنور فاروقی کو ’’متنازع شخصیت‘‘قرار دیتے ہوئے  شو منسوخ کرنے کی ہدایت دی ۔  پولیس نے اس کیلئے نظم ونسق کا مسئلہ پیدا ہونے کا جواز پیش کیا۔ اس سے قبل ممبئی میں بھی بجرنگ دل کی دھمکیوں کی وجہ سے منور فاروق کا شو منسوخ ہوچکاہے۔ بنگلور میں ہندو جاگرن سمیتی  کے لیڈر موہن گوڑا کا دعویٰ ہے کہ اس نے پولیس کمشنر سے ملاقات کرکے شو منسوخ کرنے کی دھمکی دی تھی  اور آگاہ کردیا تھا کہ اگر شو ہوا تووہ اپنے ساتھیوں کے ساتھ اس کے خلاف احتجاج کریںگے۔ شو کی منسوخی سے دلبرداشتہ ہوکر منور فاروقی نے اسے ناانصافی قرار دیتے ہوئے اسٹینڈ اَپ کامیڈی کو ہی الوداع کہنے کا اعلان کیا اوراس کیلئے انسٹا گرام پر ایک تفصیلی پوسٹ بھی کی۔ انہوں نے لکھا ہے کہ ’’میرے خیال سے یہ اختتام ہے۔  میرا نام منور فاروقی ہے اور شاید اتنا ہی میرا وقت تھا۔ آپ بہت اچھے سامع تھے۔ الوداع ، میں تھک گیا ہوں۔‘‘  اس سے قبل انہوں نے لکھا ہے کہ ’’آج بنگلور کا شو (توڑ پھوڑ کے اندیشوں کے پیش نظر ) منسوخ ہو گیا۔ ہم نے ۶؍ سو سے زیادہ ٹکٹ فروخت کئے تھے۔‘‘ انہوں  نےبتایا کہ اس شو کے ذریعہ وہ آنجہانی پونیت راج کمار کی تنظیم کیلئے عطیہ اکٹھا کرنے والے تھےمگر تنظیم کے مشورہ پر اس کا اعلان نہیں کیاگیاتھا۔ اپنے ساتھ ہونے والی ناانصافی کے خلاف آواز بلند کرتے ہوئے انہوں  نے انسٹا گرام پوسٹ پر مزید لکھا ہے کہ’’ایک ایسے لطیفے کیلئے جو میں نے سنایا ہی نہیں ایک ماہ تک مجھے جیل میں رکھنے سے لے کر میرے ان پروگراموں کی منسوخی تک جن میں کچھ متنازع تھا ہی نہیں، سب کچھ نامناسب ہے۔‘‘ بنگلور کے مجوزہ  شو کے تعلق سے انہوں بتایا کہ ’’بلا تفریق مذہب اس شو کو غیر معمولی پیار ملا ۔ ہمارے پاس سینسر سرٹیفکیٹ بھی ہے۔ اس میں واضح طور پر کچھ بھی متنازع نہیں ہے۔ ہم ۲؍ مہینوں میں ۱۲؍ جگہوں  پر اپنے شو حملے اور سامعین کو خطرات کی دھمکیوں کی وجہ سے منسوخ کرچکے ہیں۔‘‘اس کے ساتھ ہی  انہوں  نے کامیڈی کو الوداع کہنے کا اشارہ کرتے ہوئے شاعری کی ہے کہ’’ٹوٹنے پہ ان کی خواہش ہوگی پوری، صحیح کہتے ہیں میں ستارہ بن گیا ہوں۔‘‘ منور فاروق کے اس اعلان پر سوشل میڈیا پر سمجھدار صارفین نے افسردگی کااظہار کیا ہے۔ فلم اداکارہ سورا بھاسکر نے منور کا پیغام شیئر کرتے ہوئے کہا ہے کہ ’’یہ دل توڑ دینے والا ا ور شرمناک ہے کہ کیسے ہم نے اپنے سماج میں دھمکیوں کو معمول بننے دیا۔ ‘‘ 

ایک نظر اس پر بھی

کوروناکے معاملات میں مسلسل اضافہ۔ رام نگرم ضلع کا کووڈ ہاٹ اسپاٹ ہونا خود عوام کو ستانے لگا

پچھلے دنوں ریاست بھر میں کووڈ کی تیسری لہرکے دوران اور اومیکرون کے تیزی سے پھیلنے کے باوجود ضلع میں کووڈ کے مریضوں کی تعداد کم ہی نظرآرہی تھی،مگر پچھلے ایک ہفتے سے کووڈ کے مریضوں کی تعداد میں اضافہ ہواہے۔

اس موسم میں سردی و بخار عام ہے، گھبرانے کی ضرورت نہیں، 25؍ جنوری تک کورونا معاملوں میں اضافہ ہوسکتا ہے: وزیر صحت کے سدھاکر

کرناٹک میں جنوری کی آخر تک کورونا معاملوں میں سب سے زیادہ اضافہ ہونے کے خدشات کے درمیان منگل کو کورونا متاثرین کی تعداد میں معمولی کمی دیکھی گئی۔ 

بنگلورو: 19سے زیادہ جرائم سے معا ملات میں ملوث ملزم راہل پر ہنومنت نگر پو لیس گو لی چلا کر گرفتار کرنے میں کا میاب

منشیات کے دھندہ سمیت جرائم کے19معا ملات میں ملوث ہوکر عدالت سے8مرتبہ وارنٹ جاری ہو نے کے باوجود پو لیس کو چکمہ دے کر فرار ہو رہے غنڈہ راہل پر گو لی چلا کر ہنو منت نگر پو لیس گرفتار کر نے میں کامیاب رہی۔

کووڈ پر قابو پانے کے لئے مہا لکشمی لے آ ؤٹ علاقہ میں وار روم کاقیام، کورونا متا ثرین کو فوری علاج کیلئے درکار اقدامات کئے جا ئیں گے:ریاستی وزیرگو پا لیا

ریاستی وزیر برائے آبکاری کے گوپالیا نے کہا کہ شہر میں روزانہ کووڈ معا ملات میں اضافہ کے پیش نظر اس پر قابو پانے کے لئے ریاستی حکومت نے احتیاطی اقدامات کئے ہیں۔

بنگلورو میں کووڈ کے بڑھتے معا ملات، سلیکان سٹی ڈینجر سٹی میں تبدیل ہوتادکھا ئی دے رہا ہے

بنگلورو شہر میں روزانہ کووڈ کے معا ملات میں اضافہ کے پیش نظر سلیکان سٹی ڈینجر سٹی کے طور پر تبدیل ہوتے دکھا ئی دے رہا ہے۔آنے والے دنوں میں شہر میں کووڈ کے معا ملات میں مزید اضافہ کے خدشات ہیں۔کل شہر میں کووڈ کے 23ہزار معاملات درج ہو ئے تھے،جس سے شہریوں میں خوف کا ماحول دکھا ئی ...

کووڈ کی دوسری اور ممکنہ تیسری لہر کے خدشات کے باوجود۔ بی بی ایم پی نے2,589کروڑ روپئے جائیدادا ٹیکس کے طور پر وصول کئے

کووڈ کی دوسری لہر اور ممکنہ تیسری لہر کے درمیان ہی بروہت بنگلور مہا نگر پا لیکے(بی بی ایم پی) نے جاریہ ما لی سال کے9ماہ کے دوران جملہ2,589 کروڑ روپیوں کا جائیداد ٹیکس وصول کیا ہے۔

ایئر انڈیا نے کیا 5 جی معاملہ پر امریکہ کے لئے پروازوں میں تخفیف کا اعلان

ایئرانڈیا سمیت کئی بین الاقوامی ہوائی کمپنیوں نے 5جی موبائل فون سروس اور پیچیدہ ہوا بازی ٹیکنالوجیز کے درمیان مداخلت کی وجہ سے غیر یقینی صورتحال کے باعث بدھ سے امریکہ کے لیے پروازیں بند کر دی ہیں۔ ایئر انڈیا نے کہا کہ اس نے دہلی سے امریکہ میں سان فرانسسکو، شکاگو اور جے ایف کے ...

اعظم خان رامپور سے میدان میں، بیٹے کو بھی ٹکٹ۔اعظم خان رامپور شہر سیٹ سے 9 مرتبہ فتح حاصل کرچکے ہیں،فی الحال یہاںسے رُکن پارلیمنٹ ہیں،بیٹے عبداللہ اعظم سوار ٹانڈہ سے قسمت آزمائیں گے

سماج وادی پارٹی نے رامپور ضلع کی پانچوں اسمبلی سیٹوں سے اپنے امیدواروں کا اعلان کردیا ہےجس میں سب سے بڑا اور اہم نام پارٹی کے قد آور مسلم لیڈر اور موجودہ رکن پارلیمنٹ اعظم خان کا ہے۔

ہندوستان میں مکمل لاک ڈاؤن کی ضرورت نہیں، کورونا کو روکنے کیلئے موجودہ اقدامات کافی، مکمل لاک ڈاؤن سے فائدے کم، نقصانات زیادہ:ڈبلیو ایچ او

ہندوستان میں کورونا وائرس کی تیسری لہر کے بڑھتے ہوئے کیسوں کے باوجود فی الحال مکمل لاک ڈاؤن نافذ کرنے کی ضرورت نہیں ہے- یہ بات ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن(ڈبلیو ایچ او)نے کہی -

علی گڑھ شہر سمیت ضلع کے 7 اسمبلی حلقوں میں سے 4 پر کانگریس امیدوار انتخابی میدان میں

اپنی گنگا-جمنی تہذیب کے لئے دنیا بھر میں مشہور علی گڑھ ضلع کی سات اسمبلی نشتوں میں سے پہلے انتخابی مرحلے کے لئے چار پر امیدواروں کا اعلان ہو چکا ہے، جبکہ باقی تین حلقوں چھرہ، اگلاس و کھیر اسمبلی حلقوں میں امیدواروں کا اعلان ہونا ابھی باقی ہے۔

اومیکرون کا سخت پلٹ وار، اب حاملہ خواتین کو بھی بنانے لگا ’نشانہ‘

ملک میں کرونا کی پہلی ، دوسری اور اب تیسری لہر کی تباہ کاریاں جاری ہیں۔ دریں اثنا تخلیق شدہ نئی قسم اومیکرون بھی دنیا کو پریشان کرنا شروع کر دیا ہے۔ دہلی میں بھی اس کے کیسز میں مسلسل اضافہ ہوتا نظر آرہا ہے،