دبئی کے مشہور و معروف تاجر بی آر شیٹی کا منصوبہ۔کمٹہ میں ملٹی اسپیشالٹی ہاسپٹل کا قیام۔کیاجلد پورا ہوگا ضلع کے عوام کا خواب؟!

Source: S.O. News Service | Published on 21st September 2019, 9:37 PM | ساحلی خبریں | اسپیشل رپورٹس | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

کاروار 21/ستمبر (ایس او نیوز) ضلع شمالی کینرا میں ایک جدید سہولیات والے اسپتال کی ضرورت بہت شدت سے محسوس کی جارہی ہے۔ ایک عرصے سے اس سلسلے میں تجاویز اور منصوبے مختلف اداروں کی جانب سے زیر غور رہے ہیں۔ ابھی حال ہی میں کینرا مسلم خلیج کاونسل اور بھٹکل مسلم خلیج کاونسل کے ذمہ داران کے علاوہ بھٹکل اور اطراف کے این آر آئی ڈاکٹروں اور مقامی ڈاکٹروں کی ایک مشترکہ کانفرنس بھی اسی موضوع پر منعقد ہوئی تھی اور جدید ترین طبی سہولتیں فراہم کرنے کے سلسلے میں عملی اقدامات کا نقشہ بھی بنایاگیا تھا۔

 اب تازہ معلومات کے مطابق دبئی ہیلتھ کیئر کی سہولیات فراہم کرنے کے لئے پہچانے جانے والے مشہور تاجر اور رئیس منگلورو کے رہنے والے بی آر شیٹی نے اس سمت میں قدم آگے بڑھا یا ہے۔ بتایاجاتا ہے کہ وہ 21ستمبر کو بنگلورو میں کمٹہ کے رکن اسمبلی دینکر شیٹی کے ساتھ اپنے اس منصوبے پر بات چیت کرنے کے لئے خصوصی چارٹرڈ طیارے سے پہنچے ہیں۔تاج ویسٹ اینڈ ہوٹل میں اس تعلق سے میٹنگ منعقد کی گئی ہے۔

 خیال رہے کہ کچھ مہینوں پہلے سوشیل میڈیا پر ضلع میں سوپر اسپیشالٹی ہاسپٹل قائم کرنے کے موضوع پر سوشیل میڈیا پر زور دار مہم چلائی گئی تھی۔اس پس منظر میں پرنٹ اور الیکٹرانک میڈیا پر بھی اسپتال کی ضرورت واہمیت کو نمایاں طور پر اُجاگر  کیاگیا تھا۔کیونکہ اس وقت ضلع شمالی کینرا میں اہم طبی سہولتوں اور ماہر ڈاکٹروں کی کمی کی وجہ سے سنگین معاملات میں مریضوں کو شمالی کینرا کے دوردراز علاقوں سے کبھی اڈپی، منی پال او رمنگلورو کی طر ف لے جانا پڑتا ہے تو کبھی ہبلی، شیموگہ اور گوا کی طرف مریضوں کو منتقل کرنا پڑتا ہے۔اس میں جان بچانے اور مریضوں کو راحت پہنچانے میں کام آنے والا قیمتی وقت دوردراز کے لمبے سفر میں ضائع ہوجاتا ہے۔خاص کرکے جان لیوا سڑک حادثات جب ہوتے ہیں تو زخمیوں کو مناسب ابتدائی طبی امداد نہ ملنے کی وجہ سے کئی بار ہلاکتوں میں اضافہ ہوجاتا ہے۔

معلوم ہوا ہے کہ بی آر شیٹی نے اب کمٹہ میں ملٹی اسپیشالٹی ہاسپٹل کے قیام کا تہیہ کرلیا ہے اور ان کے نمائندوں نے اس علاقے کا دورہ کرنے کے بعد ہلدی پور کے پاس پہاڑی علاقے میں اسپتال کے لئے ضروری ۶ تا ۷ ایکڑ زمین کی نشاندہی کرلی ہے۔اس سے پہلے بھی بی آر شیٹی نے ضلع شمالی کینرا میں ملٹی اسپیشالیٹی اسپتال قائم کرنے میں دلچسپی دکھائی تھی۔ یہ بھی پتہ چلاہے کہ ایک طبقے کی طرف سے انکولہ میں اسپتال قائم کرنے کے لئے بی آر شیٹی پر جنوبی کینرا کے ایک سوامی کی معرفت سے دباؤ بھی ڈالا جارہاتھا۔ لیکن بی آر شیٹی نے عوام اور مریضوں کی سہولت کو سامنے رکھتے ہوئے شمالی کینرا کے وسط میں واقع کمٹہ شہر کو ترجیح دی ہے۔

 بتایا جاتا ہے کہ اسپتال قائم کرنے کے لئے بی آر شیٹی گروپ کے نمائندوں نے تین مناسب ترین نجی جگہوں کی نشاندہی کی ہے، اس میں سے ایک مقام پر اسپتال کے قیام کا قطعی فیصلہ رکن اسمبلی کے ساتھ منعقد ہونے والی میٹنگ میں کیا جائے گا۔تقریباً 7ایکڑ احاطے میں قائم ہونے والے اس جدید ترین اسپتال پر 100کروڑ روپے خرچ آنے کا تخمینہ لگایا گیا ہے۔کمٹہ کے رکن اسمبلی دینکر شیٹی نے ضلع میں ملٹی اسپیشالٹی اسپتال کے قیام کا خواب پورا ہونے کی امیدجتاتے ہوئے کہا ہے کہ ہم اس منصوبے کا خوش دلی سے استقبال کرتے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

شہریت ترمیمی قانون کے خلاف ہلیال میں دیا گیا میمورنڈم

مرکزی حکومت کی جانب سے متنازع شہریت ترمیمی بل منظور کیے جانے کے خلاف ہلیال میں جمیت العلماء الہند ضلع کاروارکے پرچم تلے مسلمانوں اور غیر مسلم ایس سی / ایس ٹی لیڈروں نے مشترکہ طور پر تحصیلدار کی معرفت سے صدر ہند کو میمورنڈم پیش کیا۔

بی جے پی حکمرانی کا زوال: 29 سے گھٹ کر 10 ریاستوں تک محدود ... آز: م. افضل

بی جے پی کے جولوگ کل تک کانگریس مکت بھارت کا نعرہ چیخ چیخ کر لگارہے تھے اب خاموش ہیں شایداس لئے کہ اب بی جے پی کا ہی دائرہ سمٹنے لگاہے، این ڈی اے بکھررہا ہے ،مودی کے مصنوعی طلسم کی قلعی بھی کھلتی جارہی ہے اور ایک ایک کرکے ریاستیں اس کی حکمرانی کی قید سے آزادہوتی جارہی ہیں ، تازہ ...

ہوناورمیں پریش میستا کی مشتبہ موت کوگزرگئے2سال۔ سی بی آئی کی تحقیقات کے باوجود نہیں کھل رہا ہے راز۔ اشتعال انگیزی کرنے والے ہیگڈے اور کرندلاجے کے منھ پر کیوں پڑا ہے تالا؟

اب سے دو سال قبل 6دسمبر کو ہوناور میں دو فریقوں کے درمیان معمولی بات پر شرو ع ہونے والا جھگڑا باقاعدہ فرقہ وارانہ فساد کا روپ اختیار کرگیا تھا جس کے بعد پریش میستا نامی ایک نوجوان کی لاش شنی مندر کے قریب واقع تالاب سے برآمد ہوئی تھی۔     اس مشکوک موت کو فرقہ وارانہ رنگ دے کر پورے ...

6 دسمبر، جس نے ملک کی سیاست کا نقشہ بدل دیا۔۔۔۔۔۔۔۔از: ظفر آغا

’دسمبر 6‘ ہندوستانی سیاست کا وہ سنگ میل ہے جس نے سیاست کا نقشہ ہی پلٹ دیا۔ اسی روز 1992 کو ایودھیا میں مغل شہنشاہ بابر کے دور کی ایک چھوٹی سی مسجد منہدم ہوئی اور بس سمجھیے کہ اس روز ہندوستانی آئین میں سیندھ لگ گئی۔

ایودھیا معاملہ سے منسلک وہ شخصیات، جن کےکام کی وفاداری مذہب پربھاری ثابت ہوئی

سپریم کورٹ کے فیصلےکے بعد ایودھیا معاملے(مندر- مسجد تنازعہ) کا خاتمہ ہوگیا ہے۔ 135 سال پہلے1885 میں شروع ہوئےایودھیا تنازعہ کی قانونی لڑائی میں کچھ کردارایسے رہے ہیں، جنہیں ان کی ڈیوٹی کے فرائض کولےکرہمیشہ یاد رکھا جائےگا،

میڈیا کی پیش کردہ تصویر سے کوسوں دورہے میرا شہر بھٹکل :  سرکاری اسپتال کی میڈیکل آفیسر ڈاکٹر سویتا کا تجربہ

برائیوں میں ڈوبی دنیا میں آج بھی  انسانیت ہے،ایسی ہی ایک زندہ مثال میرےاپنے امن وامان کے لئے مشہور  شہر بھٹکل میں خود میرے ساتھ پیش آئی ہے ،جب کہ میرے اس شہر کے متعلق میڈیا ہزار باتیں لکھتا ہےاور جو دکھاتا ہے وہ اس سے کوسو ں دور ہے۔ بھٹکل سرکاری اسپتال کی میڈیکل آفیسر ڈاکٹر ...

بھٹکل نیشنل ہائی وے پر تیزرفتار بس، لاری سے ٹکراگئی؛ 25 سے زائد زخمی

یہاں وینکٹاپور نیشنل ہائی وے 66 پر ایک تیز رفتار بس، پارک کی ہوئی لاری سے  ٹکراگئی جس کے نتیجے میں بس پر سوار 25 سے زائد مسافر زخمی ہوگئے، جن میں سے دو کو کنداپور اور باقی کو بھٹکل سرکاری اسپتال میں داخل کیا گیا ہے۔

  وزیر داخلہ امت شاہ کی پراسرار ’تسلی‘ کہا؛   ہندوستانی مسلمان، ہندوستانی تھے اور آئندہ بھی رہیں گے

وزیر داخلہ امت شاہ نے بدھ کو متنازعہ شہریت ترمیمی بل کو راجیہ سبھا میں بحث کے لیے پیش کرتے ہوئے کہا کہ بھارت کے مسلمان ہندوستانی شہری تھے، ہیں اورآئندہ بھی رہیں گے۔پاکستان، بنگلہ دیش اور افغانستان کے غیر مسلم تارکین وطن کو بھارتی شہریت فراہم کرنے کی فراہمی والے اس بل کو پیش ...