جنوبی کینرا ایم پی نلین کمار کٹیل نے کی مہاتما گاندھی کے قاتل ناتھو رام گوڈسے کی حمایت

Source: S.O. News Service | Published on 18th May 2019, 11:37 AM | ساحلی خبریں |

منگلورو،18/مئی (ایس او نیوز) بھوپال سے بی جے پی کی پارلیمانی امیدوار پرگیہ سنگھ ٹھاکور نے مہاتما گاندھی کے قاتل ناتھو رام گوڈسے کی ستائش کرتے ہوئے کہا تھا کہ وہ ایک اصلی دیش بھکت تھا۔ اس متنازعہ بیان کی ہرطرف سے مذمت ہورہی تھی مگراس کی حمایت میں اب ضلع جنوبی کینرا کے ایم پی نلین کمار کٹیل اور ضلع شمالی کینرا کے ایم پی اور مرکزی وزیر اننت کمار ہیگڈے بھی میدان میں اتر چکے ہیں۔

 نلین کمار کٹیل نے ایک ٹویٹ میں کہا ہے کہ”ناتھو رام نے صرف ایک شخص کو قتل کیا۔ اجمل قصاب نے 72لوگوں کی جان لی۔ راجیو گاندھی کو قتل کرنے والوں نے 17ہزار لوگوں کو مارڈالا ہے۔ اب آپ لوگ ہی بتاؤ کہ ان میں سب سے زیادہ ظالم کون ہے؟“اس طرح نلین کمارکٹیل نے گاندھی کے قاتل کی درپردہ حمایت کا مظاہرہ کیا ہے۔جس سے سوشیل میڈیا پر ایک نیا تنازعہ کھڑاہوگیا ہے۔

 ضلع شمالی کینرا کے ایم پی اننت کمار ہیگڈے کا کہنا ہے کہ ان کا ٹویٹر اکاؤنٹ ہیاک کرکے اس پر متنازعہ بیان پوسٹ کیا گیا تھا۔ انہوں نے اسے ہٹا دیا ہے۔ اور وہ مہاتما گاندھی کا پوری طرح احترام کرتے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ گاندھی کا قتل کرنے والوں کے ساتھ ہمدردی کرنے یا اسے درست قرار دینے کا سوال  پید انہیں ہوتا۔تمام ہندوستانیوں کوملک کے لئے گاندھی کی بے پناہ خدمات کا اعتراف ہے۔

 بی جے پی کے قومی صدر امیت شاہ نے پرگیہ سنگھ ٹھاکور، وزیر اننت کمار ہیگڈے اور نلین کمار کٹیل کے متنازعہ بیانات کو ان کے اپنے نجی بیانات سے تعبیر کرتے ہوئے کہا ہے کہ ”اس سے بی جے پی کا کوئی تعلق نہیں ہے۔ بی جے پی اعلیٰ اخلاقی اقدار کی حامل پارٹی ہے اور اس طرح کے بیانات عوامی زندگی اور پارٹی کے اخلاقی معیار کے منافی ہیں۔متنازعہ بیانات دینے والوں نے سوشیل میڈیا سے اپنے بیانات ہٹادئے ہیں اور اس کے لئے معذرت بھی کرلی ہے۔ پھر بھی پارٹی نے یہ معاملہ ڈسپلنری کمیٹی کے حوالے کردیا ہے۔اور کمیٹی نے ان لوگوں کو وضاحت پیش کرنے کے لئے مراسلہ بھیجا ہے۔ ان تینوں کی طرف سے آنے والی وضاحتوں کے تعلق سے دس دنوں کے اندر پارٹی لیڈرشپ کے سامنے رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت جاری کی گئی ہے۔“

ایک نظر اس پر بھی

اڈپی ڈکیتی معاملہ پولیس نے 24گھنٹے کے اندر کیا حل۔ دو ملزمین گرفتار۔مسروقہ نقدی اور چاندی بر آمد

اڈپی ضلع کے اولاکاڈو علاقے میں 12ستمبر کو ڈکیتی کی جو واردات پیش آئی تھی اور چوروں نے 22لاکھ روپے نقد اور آدھا کلو چاندی پر جو ہاتھ صاف کیا تھا اس معاملے کو پولیس نے 24گھنٹے کے اندر حل کرتے ہوئے دو ملزمین کو مہاراشٹرا اور مڈگاؤں ریلوے اسٹیشن سے گرفتار کرلیاہے۔ 

بھٹکل تعلقہ فاریسٹ زمین حق کے لئے اتی کرم دارہوراٹ گارر ویدیکے کی جانب سے 17ستمبر کو میٹنگ

بھٹکل تعلقہ کے تحصیل اور فاریسٹ اتی کرم داروں کے علاقے میں شیموگہ جنگلات زون میں شامل کئے جانے کے پس منظر میں 17ستمبر 2019بروز منگل کی صبح 10بجے شہر کے ستکار ہوٹل کے صحن میں تعلقہ فاریسٹ اتی کرم داروں کی میٹنگ انعقاد کئے جانے کی بھٹکل تعلقہ فاریسٹ ہوراٹ گارر ویدیکے کے تعلقہ صدر ...

سرسی کے پی یو کالج میں منایا گیا’موبائل ہیمرنگ ڈے‘۔ چوری چھپے کلاس روم میں لائے گئے موبائل فون پر چلایا گیا ہتھوڑا!

پری یونیورسٹی بورڈ کی طرف سے کالجوں میں زیر تعلیم طلبہ کے لئے کالج احاطے میں موبائل لانے اوراس کے استعمال پر پابندی لگائی گئی ہے۔ لیکن ریاست بھر میں تقریباً ہر پی یو سی کالج میں طلبہ اساتذہ کی نظریں بچاکر موبائل فون استعمال کرتے ہوئے پائے جاتے ہیں۔

کاروار:مساجد اور گھروں میں جاکر امداد مانگنے والے کشمیری نوجوانوں کو پولیس نے لیاحراست میں۔ گہری تفتیش کے بعد ہوئی رہائی

کاروار کی لاڈج میں کشمیری نوجوان کے قیام اور ان کے ذریعے با ر بار کشمیر سے ٹیلی فون پر رابطہ کیے جانے کی اطلاع سرکاری خفیہ ایجنسی کی طرف سے ملنے کے بعد پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے جمعرات کے دن آدھی رات کو مذکورہ تین کشمیری نوجوانوں کو اپنی حراست میں لیا۔ پھر گہری چھان بین اور ...