تاریخ کے سب سے چیلنجنگ اولمپک کھیلوں کی کامیاب تکمیل

Source: S.O. News Service | Published on 9th August 2021, 11:18 AM | اسپورٹس |

ٹوکیو، 9؍اگست (ایس او نیوز؍ایجنسی) تاریخ کے سب سے زيادہ چیلنج سے بھرے اولمپک کھیلوں کااتوارکے روز یہاں الوداعی تقریب کے ساتھ کامیاب اختتام ہوگیا۔ 67 ہزار شائقین کی گنجائش والے اسٹیڈیم میں شائقین کے بغیر غیرمعمولی ٹوکیواولمپک کھیلوں کا اختتام ہوا۔

بین الاقوامی اولمپک کمیٹی (آئی اوسی) کےصدر تھامس باک نے الوداعی تقریب میں کھلاڑیوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ’’اس بے حد مشکل وقت میں ہم سب جی رہے ہیں اوران سب کے درمیان دنیا کوامید کی کرن دکھائی ہے اوراب میں ٹوکیو میں سب سے چیلنجنگ اولمپک سفرکے اختتام کااعلان کرناچاہتا ہوں۔ میں 32 ویں اولمپیاڈ کو ختم کرنے کااعلان کرتا ہوں۔ یہ کھیل امن، اتحاد اورامید کی علامت تھے۔ اب آپ سب سے پیرس میں ملاقات ہوگی۔

اس غیرمعمولی اولمپک کی افتتاحی تقریب کی طرح خالی اسٹیڈیم میں الوداعی تقریب کا انعقاد ہوا جس میں صرف ایتھلیٹ، ٹیم کے اہلکار، وی آئی پی اشخاص اورمیڈیا کے نمائندے موجود تھے۔ ایتھلیٹ سخت بائیو سیکیور ماحول میں کھیل گاوں میں رہے تھے اورانہیں کھانے، سونے اور مقابلہ کرنے کے علاوہ ہروقت ماسک لگانا تھا۔

اختتامی تقریب میں کھلاڑیوں کی پریڈکے دوران ہندوستانی دستے کی قیادت 65 کلوگرام فری اسٹائل زمرے میں کانسے کا تمغہ جیتنے والے پہلوان بجرنگ پونیانے کی۔باک کے اولمپک کو ختم کرنے کے اعلان کے ساتھ ہی اولمپک کاپرچم 2024 پیرس اولمپک کے میزبان فرانس کو سونپ دیا گیا۔ اولمپک کھیلوں کے اختتام کے ساتھ اولمپک مشعل کو بجھادیا گیا لیکن ٹوکیو 2020 میں نظرآئے کھیل جذبات اس میں حصہ لینے والے ایتھلیٹوں اوراسے دیکھنے والوں کے دلوں میں جلتی رہے گی۔اختتامی تقریب کے بعد اسٹیڈیم کے چاروں جانب آتش بازی سے آسمان جگمگااٹھا اوراسٹیڈیم میں لکھاآیا اریگاتویعنی شکریہ۔واضح رہے ہندوستان کے لئے بھی یہ اولمپک تاریخی رہے کیونکہ ہندوستان نے اس اولمپک میں اب تک سب سے زیادہ سات تمغے حاصل کئے اور پہلی مرتبہ ایتھلیٹکس میں گولڈ کا تمغہ حاصل کیا۔

ایک نظر اس پر بھی

نیوزی لینڈ کو 372 رنز سے شکست، ہندوستان نے گھریلو میدان پر لگاتار 14ویں ٹیسٹ سیریز جیتی

آف اسپنر روی چندرن اشون اور جینت یادو کے چار چار وکٹوں کی بدولت ہندوستان نے دوسرے کرکٹ ٹسٹ میچ کے صبح کے سیشن میں نیوزی لینڈ کو 167 رنز پر ٖڈھیر کرنے کے بعد 372 رنز سے شکست دے کر دو میچوں کی سیریز 1-0 سے جیت لی۔

اعجاز پٹیل کے ’پرفیکٹ 10‘ کے بعد نیوزی لینڈ کی پوری ٹیم 62 رن پر آؤٹ

ورلڈ ٹیسٹ چمپئن نیوزی لینڈ کی ٹیم اپنے بائیں ہاتھ کے اسپنر اعجاز پٹیل کی ہندوستانی اننگ میں تمام دس وکٹیں لینے کی شاندار کارکردگی سے تحریک نہیں لے سکی اوراس کےبلے بازوں نے ہندوستانی گیندبازوں کے سامنے یہاں دوسرے اور آخری ٹسٹ میچ کے دوسرے دن ہفتہ کو محض 62 رن پر گھٹنے ٹیک دئے۔

ممبئی ٹیسٹ: اعجاز پٹیل نے ایک اننگ میں 10 وکٹ لے کر رقم کی تاریخ، ایسا کرنے والے دنیا کے تیسرے گیندباز

نیوزی لینڈ کے گیندباز اعجاز پٹیل نے کسی ٹیسٹ میچ کی ایک اننگ کے تمام 10 وکٹ حاصل کر کے تاریخ رقم کر دی ہے۔ اعجاز پٹیل ایسا کرنے والے نیوزی لینڈ کے پہلے اور دنیا کے تیسرے گیند باز ہیں۔ اعجاز سے پہلے یہ کارنامہ انیل کمبلے اور جیم لیکر انجام دے چکے ہیں۔

تمل ناڈو نے تیسری بار سیدمشتاق علی ٹرافی کا خطاب جیتا

دھماکہ خیز بلے باز شاہ رخ خان کی 15 گیندوں پر 33 رن کی زبردست اننگ کی بدولت تمل ناڈو نے یہاں پیر کو دہلی کے ارون جیٹلی اسٹیڈیم میں فائنل مقابلے میں کرناٹک کو چار وکٹ سے شکست دے کر تیسری بار سید مشتاق علی ٹرافی کاخطاب جیت لیا۔