منی لانڈرنگ کیس: انیل دیشمکھ نے سچن وازے سے لئے تھے 4.7 کروڑ، پیسوں کے لین دین کا اشارہ

Source: S.O. News Service | Published on 20th September 2021, 11:13 AM | ملکی خبریں |

ممبئی،20؍ستمبر (ایس او نیوز؍ایجنسی)ممبئی کی ایک خصوصی عدالت نے کہا کہ پیسے کے لین دین سے بادی النظر میں یہ ظاہر ہوتا ہے کہ مہاراشٹر کے سابق وزیر داخلہ انیل دیشمکھ نے سابق پولیس اہلکار سچن وازے اور ان کے معاون کندن شندے سے 4.7 کروڑ روپے لیے تھے-عدالت نے مبینہ منی لانڈرنگ کیس کے ایک معاملہ میں وازے اور دیگر کیخلاف داخل چارج شیٹ پر نوٹس لیا ہے - ای ڈی نے دیشمکھ کے پرائیویٹ سکریٹری (ایڈیشنل کلکٹر کے عہدے کا افسر) سنجیو پلاندے، پرسنل اسسٹنٹ شندے اور 11 دیگر کے خلاف چارج شیٹ داخل کیا تھا-خصوصی جج ایم جی دیش پانڈے نے 16 ستمبر کو چارج شیٹ کا نوٹس لیا تھا اور ہفتہ کو عدالت کا تفصیلی حکم دستیاب ہوا- اپنے حکم میں عدالت نے کہا کہ پیسے کے لین دین سے بیانات اور الزامات کا محتاط تجزیہ ظاہر کرتا ہے کہ انیل دیشمکھ نے سچن وازے اور کندن شندے سے 4.7 کروڑ روپے وصول کئے-عدالت نے کہا کہ دیش مکھ نے رشی کیش دیشمکھ کی ہدایات پر یہ رقم حوالہ کے ذریعے اس کیس کے تمام ملزموں سریندر جین اور وریندر جین کو بھیجی- پھر یہ رقم کمپنیوں کے ذریعہ سری سائی تعلیمی ادارے کے اکاؤنٹ میں جمع کرائی گئی،جومحض کاغذ پر موجود تھی- عدالت نے کہا کہ منی لانڈرنگ ایکٹ (پی ایم ایل اے) سے متعلقہ دفعات کے تحت ملزم کیخلاف مقدمہ چلانے کیلئے ابتدائی طور پر کافی شواہد موجود ہیں -

ایک نظر اس پر بھی

اتراکھنڈمیں بارش سے تباہی ،نینی تال کا بُرا حال۔مسلسل موسلا دھار بارش سےمعمولات زندگی درہم برہم

  پہاڑی ریاست اتراکھنڈ میں گزشتہ 2؍روز  سےجاری  موسلا دھار بارش نے معمولات زندگی درہم برہم کر دئیے ہیں۔ انتظامیہ کی جانب سے متعدد علاقوں میں مزید بارش کا انتباہ جاری کیا گیا ہے اور انتظامیہ کو  الرٹ پر  رکھا گیا ہے۔

مدھیہ پردیش: عید میلادالنبی پر کئی اضلاع میں ہنگامہ، دھار کے بعد جبل پور اور بڑوانی میں حالات کشیدہ

مدھیہ پردیش میں منگل کو عید میلاد النبی کے موقع پر کئی اضلاع میں خوب ہنگامہ ہوا۔ اس دوران کئی مقامات پر شرپسندوں نے پتھراؤ بھی کیا جس میں متعدد لوگ زخمی ہو گئے۔ جبل پور، دھار اور بڑوانی میں تو فرقہ وارانہ خیر سگالی کو بگاڑنے کی کوششیں بھی ہوئیں۔ ریاست میں کورونا وبا کے سبب ...