ملک کے عوام بالخصوص غریبوں سے معافی مانگتا ہوں، سخت اقدامات ضروری تھے: مودی

Source: S.O. News Service | Published on 29th March 2020, 11:43 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،29؍مارچ (ایس او نیوز؍ایجنسی) وزیر اعظم نریندر مودی نے لاک ڈاؤن کی وجہ سے ملک میں تمام لوگوں کو درپیش پریشانیوں پر معذرت کر لی ہے۔ انہوں نے ’من کی بات‘ میں غریبوں کی پریشانیوں کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ کورونا وائرس کے خلاف جنگ میں لاک ڈاؤن جیسے سخت اقدامات کرنے کے سوا اور کوئی راستہ نہیں تھا۔ وزیر اعظم مودی کا یہ بیان ایسے وقت میں آیا ہے جب ہزاروں غریب مزدور دہلی سے یوپی اور بہار ہجرت کر رہے ہیں۔

وزیر اعظم مودی نے اتوار کے روز اپنے ریڈیو پروگرام ’من کی بات‘ کے دوران ایسے لوگوں کی بات چیت بھی سنائی جو کورونا کے خلاف جنگ میں جیت حاصل کر چکے ہیں۔ یہ وہ لوگ ہیں جو بیرون ملک سے آئے تھے، انہیں حکومتی نگرانی میں انہیں قرنطینہ کیا گیا اور صحتیاب ہو گئے۔ وزیر اعظم مودی نے ان لوگوں سے کہا کہ وہ اپنے تجربے کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل کریں۔

وزیر اعظم نے کہا، سب سے پہلے میں ملک کے تمام باشندگان سے معافی مانگتا ہوں۔ میرا دل کہتا ہے کہ آپ مجھے ضرور معاف کر دیں گے۔ مجھے کئی ایسے فیصلے لینے پڑے جن کی وجہ سے آپ کو کئی طرح کی مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ خاص طور پر میں اپنے غریب بھائی بہنوں کی طرف دیکھتا ہوں تو محسوس ہوتا کہ انہیں لگتا ہوگا کہ کیسا وزیر اعظم ہے! ہمیں مصیبت میں ڈال دیا، ان سے میں خاص طور پر معافی مانگتا ہوں۔

بحران کے ان لمحات میں وزیر اعظم نے لاک ڈاؤن کی اہمیت بھی بیان کی۔ انہوں نے کہا، بہت سے لوگ مجھ سے ناراض ہوں گے کہ انہوں نے کس طرح سب کو گھر میں بند رکھا ہوا ہے۔ میں آپ کی دقتیں سمجھتا ہوں، آپ کی پریشانی بھی سمجھتا ہوں لیکن ہندوستان جیسے 130 کروڑ کی آبادی والے ملک کے لئے یہ اقدامات کیے بغیر کورونا کے خلاف لڑنے کا کوئی راستہ نہیں تھا۔‘‘

انہوں نے کہا کہ کورونا کے خلاف جنگ زندگی اور موت کی جنگ ہے۔ ہمیں اس جنگ میں جیتنا ہے اور اسی وجہ سے ان سخت اقدامات کو اٹھانا بہت ضروری تھا۔ کوئی بھی ایسے اقدامات اٹھانا پسند نہیں کرتا لیکن دنیا کی صورتحال کو دیکھنے کے بعد محسوس ہتا ہے کہ یہی واحد راستہ بچا ہے۔ آپ کو اپنے کنبہ کو محفوظ رکھنا ہوگا۔

وزیر اعظم مودی نے کورونا کے چیلنج سے ہموطنوں کو متنبہ کرتے ہوئے کہا کہ اس وائرس نے دنیا کو قید کر دیا ہے۔ انہوں نے کہا یہ علم، سائنس، غریب، امیر، کمزور، طاقت ور ہر ایک کو للکار رہا ہے۔ یہ نہ تو قوم کی حدود میں بندھا ہوا ہے اور نہ ہی کسی علاقہ کو دیکھتا ہے اور نہ ہی موسم کو۔

ایک نظر اس پر بھی

منگلورو ایئر پورٹ پر بم رکھنے کا معاملہ ؛ ملزم آدتیہ راؤ سے پوچھ تاچھ کیلئے مرکزی وزارت داخلہ سے اجازت کا انتظار

گودی میڈیا نے منگلورو ایئر پورٹ پر بم رکھ کر تہلکہ مچانے والے سنگھ پریوار سے جڑے نوجوان آدتیہ راؤ کے معاملہ پر پوری طرح اب تک خاموشی اختیار رکھی ہے اور اب تک اس سلسلہ میں کوئی خبر ہی نہیں دی گئی تھی، اس معاملہ پر پردہ ڈالنے کی بھی کوشش جاری ہے ،

مزدوروں کا 85 فیصد ریل کرایہ مرکز کے ذریعہ ادا کرنے کا جھوٹ عدالت میں بے نقاب

مہاجر مزدوروں کو ان کے آبائی وطن روانہ کرنے کے لیے ریلوے کا 85 فیصد کرایہ مرکزی حکومت کی جانب سے ادا کیے جانے کا بی جے پی کاجھوٹ آج اس وقت بے نقاب ہوگیا جب سپریم کورٹ کے روبرو مرکزی حکومت کے سالیسٹر جنرل تشار مہتہ نے اس بات کا اعتراف کیا کہ ریلوے کرائے کا پورا خرچ ریاستی حکومتوں ...

بنگال بی جے پی صدردلیپ گھوش کا شرمناک بیان، کہا ”ٹرینوں میں مزدوروں کی موت معمولی واقعہ“

مغربی بنگال بی جے پی کے صدر دلیپ گھوش نے شرمک اسپیشل ٹرین میں بھوک اور پیاس کی وجہ سے ہونے والی اموات کو 'معمولی اور چھوٹا' واقعہ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اس کے لیے انڈین ریلوے کو ذمہ دار نہیں ٹھہرایا جا سکتا۔ انہوں نے کہا کہ اپوزیشن جماعتیں اس چھوٹے سے واقعے کو حد سے زیادہ حساس ...

کورونا بحران میں ہندوستانی معیشت کو لگا جھٹکا، ترقیاتی شرح نمو کم ہو کر 4.2 فیصد رہ گئی

مینوفیکچرنگ اور کنسٹرکشن شعبے کے کمزور مظاہرے کے سبب مالی برس 20-2019 میں مجموعی گھریلو پیداوار (جی ڈی پی) کی شرح نمو 19-2018 کے 6.1 فیصد سے کم ہو کر 4.2 فیصد رہ گئی۔ سینٹرل اسٹیٹِسٹِک آفس (مرکزی شماریاتی دفتر) کی جانب سے جاری اعداد و شمار میں بتایا گیا ہے کہ 31 مارچ 2020 کو ختم گزشتہ مالی ...

وزیراعظم نریندر مودی سے امیت شاہ کی ملاقات، لاک ڈاؤن 5 پر وزرائے اعلی کی رائے سے واقف کرایا

چوتھے مرحلہ کا لاک ڈاون ختم ہونے سے دو دن قبل مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ نے آج یہاں وزیراعظم نریندر مودی سے اس بارے میں تفصیلی بات چیت کی اور انہیں اس سے متعلق ریاستوں کے وزرائے اعلی کی رائے اور مشوروں سے واقف کرایا۔

مغربی بنگال حکومت کا بڑا فیصلہ، یکم جون سے مساجد سمیت تمام عبادت گاہیں کھولنے کی اجازت

وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے یکم جون سے ریاست میں مذہبی مقامات کو کھولنے کی اجازت دیتے ہوئے کہا ہے کہ مندر، مسجد گرودوارہ اور دیگر مذہبی مقامات کھولے جائیں گے مگر 10 سے زیادہ افراد ایک ساتھ جمع نہیں ہوسکتے ہیں۔