اترپردیش کے متھرا میں ماب لنچنگ، گوشت لے جانے پر دو مسلم نوجوانوں کی بے رحمی سے پٹائی

Source: S.O. News Service | Published on 26th September 2021, 10:51 AM | ملکی خبریں |

متھرا، 26؍ستمبر(ایس او نیوز؍ایجنسی)اترپردیش کے متھرا میں ایک ایسے علاقے سے گوشت لے جانے کیلئے بھیڑ کے ذریعہ دو لوگوں کو روکا گیا اور بے رحمی سے پیٹا گیا، جہاں گوشت کی مصنوعات پر پابندی ہے۔ واقعہ کی کچھ ویڈیو بھی منظر عام پر آئی ہیں، جو اب سوشیل میڈیا پر خوب وائرل ہو رہی ہیں۔خبر رساں ایجنسی آئی اے این ایس کی رپورٹ کے مطابق دونوں نوجوانوں کی شناخت ایوب اور محسن کی شکل میں ہوئی ہے۔ نوجوانوں پر حملہ کرنے والے رائٹ ونگ تنظیمیں فیس بک پر لائیو ہوگئے اور انہوں نے حملے کی ریکارڈنگ کی اور ناظرین سے ویڈیو شیئر کرنے کیلئے کہا۔ تقریباً 15لوگوں کی بھیڑ نے دونوں نوجوانوں کو بہت بری طرح سے پیٹا۔رپورٹ کے مطابق 40 سالہ ایوب رایا شہر میں ایک لائسنس یافتہ گوشت کی دکان چلاتا ہے اور وہاں سے گوشت لے رہا تھا،جبکہ 23 سالہ محسن اس کے ساتھ تھا۔ گاڑی کے ڈرائیور ایوب، محسن اور بہادر کو عبادت گاہ کو ناپاک کرنے اور مبینہ گؤ کشی کے الزام میں گرفتار کیا گیا ہے۔متھرا کے ضلع صدر سیتارام شرما نے کہا کہ بدھ کو انہیں اطلاع ملی تھی کہ گوشت پر پابندی کی خلاف ورزی کی جا رہی ہے اور پابندی کے باوجود مذکورہ شخص مبینہ طور پر گائے کا گوشت لے جارہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے مخبر نے ہمیں بتایا تھاکہ گوشت آگرہ سے متھرا لے جایا جا رہا تھا جو غیر قانونی ہے۔گؤ رکشک دل کے صدر روی کانت شرما نے کہاکہ جمنا ایکسپریس وے سے باہر نکلنے کے بعدہم نے انہیں مہاویر کالونی میں روکا اور پولیس کو سونپ دیا۔ ایوب اور محسن کوآئی پی سی کی دفعہ 295 (کسی عبادت گاہ کونقصان پہنچانا یا ناپاک کرنا) اور 429(جانوروں کو مارنا یا معذور کرنا)اور گؤ کشی روک تھام ایکٹ کے تحت گرفتار کیا گیا۔متھرا کے ایس پی(سٹی)ایم پی سنگھ نے بتایا کہ تقریباً160کلو گوشت ضبط کیا گیا ہے اور اس کے نمونے جانچ کیلئے بھیجے گئے ہیں۔ ملزموں کو عدالتی تحویل میں بھیج دیا گیا ہے۔ ایس پی نے مزید کہا کہ ملزم کے پاس نہ تو ٹرانزٹ پرمٹ تھا اور نہ ہی خراب ہونے والی چیزوں کے گاڑی کیلئے ریفریجریٹر جو دونوں لازمی ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

سپریم کورٹ نے مرکزی حکومت سے سینٹرل وسٹا پروجیکٹ پر جواب طلب کیا

سپریم کورٹ نے ہزاروں کروڑ روپے کے سینٹرل وسٹا پروجیکٹ پر سوال اٹھانے والی عرضی پر پیر کو مرکزی حکومت سے جواب طلب کیا۔ جسٹس اے۔ ایم کھانولکر اور جسٹس سی ٹی روی کمار کی بنچ نے سماجی کارکن راجیو سوری کی درخواست پر مرکزی حکومت سے جواب طلب کیا ہے۔

جموں و کشمیر کو جلد ہی مکمل ریاست کا درجہ ملنا چاہیے:ادھیررنجن چودھری

کانگریس لیڈر ادھیر رنجن چودھری نے ہفتہ کو جموں و کشمیر میں سیاسی نظم و ضبط کی بحالی کا مطالبہ کیا اور جموں و کشمیر کو ریاست کا درجہ بحال کرنے کا مطالبہ کیا تاکہ جلد سے جلد اسمبلی انتخابات کرائے جا سکیں۔

اننیا پانڈے این سی بی کے سامنے پیش نہیں ہوئیں

بالی ووڈ اداکارہ اننیا پانڈے منشیات سے متعلق کیس میں گرفتار آرین خان کے ساتھ مبینہ واٹس ایپ چیٹ کے سلسلے میں پوچھ گچھ کے لیے پیر کو یہاں نارکوٹکس کنٹرول بیورو (این سی بی) کے سامنے پیش نہیں ہوئیں۔