کیا شمالی کینرا سے شیورام ہیبار کے لئے وزارت کا قلمدان محفوظ رکھا گیا ہے؟

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 21st August 2019, 12:07 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں |

کاروار 21/اگست (ایس او نیوز) کرناٹکاکے وزیراعلیٰ  ایڈی یورپا نے دو دن پہلے اپنی کابینہ کی جو تشکیل کی ہے اس میں ریاست کے 13اضلاع کو اہمیت دیتے ہوئے وہاں کے نمائندوں کو وزارتی قلمدان سے نوازا گیا ہے۔اور بقیہ 17اضلاع کو ابھی کابینہ میں نمائندگی نہیں دی گئی ہے۔

 خاص بات یہ ہے کہ جنوبی کینرا، اڈپی اور شمالی کینرا جیسے تین اضلاع سے بی جے پی کے 16اراکین اسمبلی منتخب ہوئے ہیں۔ اورپورے ساحلی علاقے سے صرف کوٹا سرینواس پجاری کو وزیر بنایاتے ہوئے 15اراکین کو نظر انداز کردیا گیا ہے۔ اس سے خاص کرکے جنوبی کینرا اور اڈپی ضلع میں بی جے پی کارکنان اور لیڈران کے اندر بے اطمینانی دکھائی دے رہی ہے۔خیال رہے کہ ساحلی علاقے کے اڈپی ضلع میں سب سے زیادہ بی جے پی کے اراکین اسمبلی منتخب ہوئے ہیں۔یہاں سے ہالاڈی سرینواس شیٹی کو وزارت نہیں دئے جانے پر ان کے حامیوں کے اندر بہت زیادہ برہمی پیدا ہوگئی ہے۔

 کیا شیورام ہیبار کے لئے وزارت محفوظ ہے؟: سیاسی گلیاروں میں یہ بات سنائی دے رہی ہے کہ ضلع شمالی کینرا سے وزارتی قلمدان کانگریس پارٹی سے بغاوت کے الزام میں نااہل قرار پانے والے رکن اسمبلی شیورام ہیبار کے لئے محفوظ رکھا گیا ہے۔کیونکہ کابینہ کی تشکیل سے قبل ہی یہاں کے سینئر بی جے پی لیڈر وشویشور ہیگڈے کاگیری کو اسپیکر کا عہد ہ دیا جاچکا ہے۔ اور اب شمالی کینرا کا کوٹا سپریم کورٹ کے فیصلے تک محفوظ رکھا گیا ہے تاکہ سپریم کورٹ سے باغی اراکین کو اسپیکر رمیش کمار کی طرف سے نااہل قرار دئے جانے کا فیصلہ اگر باطل ثابت ہوتا ہے تو پھر شیورام اور ان کے علاوہ دیگرکچھ مقامات پر باغی اراکین کو وزارتی قلمدانوں سے نوازا جا سکے۔لیکن یہاں پر بی جے پی کے ٹکٹ پر کمٹہ حلقے سے دوسری مرتبہ اپنی جیت درج کرنے والے دینکر شیٹی بھی موجود ہیں اور فطری طورپر وہ بھی وزارت کے طلب گاروں میں موجود رہیں گے۔

ساحلی پٹی سے جن اراکین اسمبلی کو کابینہ میں شامل نہیں کیا گیا ہے ان کے بارے میں گمان یہ کیا جارہا ہے کہ آئندہ مزید 16قلمدانوں کے لئے جب کابینہ میں توسیع کی جائے گی تو انہیں شامل کرلیا جائے گا۔ لیکن وزیر اعلیٰ کے سامنے مسئلہ یہ ہے کہ وزارت کے امیدواروں کی تعداد بقیہ قلمدانوں سے دگنی ہے۔ ایسی صورت میں پارٹی میں پہلے موجود اراکین اسمبلی اور کانگریس اور جنتا دل سے بغاوت کرکے بی جے پی میں شمولیت اختیار کرنے والے اراکین کی کشمکش بہت زیادہ ہوسکتی ہے اور وزیراعلیٰ یا پارٹی ہائی کمان کے لئے سب کو مطمئن کرنا کسی طور بھی ممکن نظر نہیں آتا۔ 

ایک نظر اس پر بھی

منگلورو ایئر پورٹ میں بم رکھنا اور پھر ملزم کا بنگلورو چلے جاناانٹلی جنس ایجنسی کی ناکامی کانتیجہ۔ رکن اسمبلی یوٹی قادر کا بیان

سابق وزیر اور موجودہ رکن اسمبلی یوٹی قادر نے منگلورو ایئر پورٹ پر بم رکھنے کے معاملے میں کہا ہے کہ یہ پوری طرح انٹلی جنس ایجنسی کی ناکامی کا نتیجہ ہے۔

بھٹکل مجلس اصلاح وتنظیم میں عہدیداران اور عمائدین سے  جماعت اسلامی ہند کرناٹک کے امیر حلقہ ڈاکٹر بلگامی  کا خطاب

آج ملک جس طرح ظالمانہ  پالیسی کو اپنائے ہوئے جس ڈگر پر چل پڑاہےوہ مستقبل کو ملک کو بہت بڑا نقصان پہنچا ئے گا ۔ فاشسٹ قوتیں اس ملک کو خطرناک راہوں پر لے جارہے ہیں ، ملکی دستور خطرے میں ہے فی الفور ملک کے عوام کو ملک کے دستور کی حفاظت کرتےہوئے ملک بچانےکی بہت بڑی ذمہ داری عائد ہونے ...

بھٹکل کپڑا بینک کی خدمات قابل ستائش : حکومت اس طرح کے بینک دیگر مقامات پر بھی قائم کرے : ماحولیاتی تحفظ کمیٹی ممبر آل میترا

بھٹکل کے عثمانیہ کالونی میں واقع ’’کپڑا بینک ‘‘ کا دورہ کرتے ہوئے ماحولیاتی تحفظ کمیٹی کی ممبر وکیل آل میتر ا نے کپڑا بینک کی طرف سے دی جارہی خدمات کی تفصیلی جانکاری حاصل کرنے کےبعد کہاکہ ہم حکومت سے سفارش کریں گے کہ اس طرح کے کپڑا بینک ملک کے دیگر شہروں میں بھی قائم کریں۔

منگلورو بم معاملے کی شفافیت کے ساتھ جانچ کا مطالبہ لے کر بھٹکل ایس ڈی پی آئی کی جانب سے حکومت کو  میمورنڈم؛ وزیرداخلہ سے مانگا گیا استعفیٰ

منگلورو ہوائی اڈے پر پائے گئے بم معاملےکی شفافیت کے ساتھ تفتیش کرتےہوئے حقائق کو عوام کے سامنے لانے اور ریاستی وزیر داخلہ بسورا ج بومائی کے استعفیٰ کا مطالبہ لےکر سوشیل ڈیموکرٹیک آف انڈیا (ایس ڈی پی آئی ) بھٹکل کی جانب سے بھٹکل تحصیلدار کے توسط سے حکومت کو میمورنڈم سونپا گیا۔

بھٹکل میں ویلفئیر پارٹی آف انڈیا (ڈبلیو پی آئی ) کی جانب سے دستور بچاؤ،شہریت بچاؤ مہم

ویلفئیر پارٹی آف انڈیا کی طرف سے ملک گیر سطح پر23جنوری سے 30جنوری تک  منائی جارہی ’دستور بچاؤ:شہریت بچاؤ‘ مہم  کی مناسبت سے مرحلہ وار مختلف کاموں کو انجام دینے کا  ڈبلیو پی آئی اترکنڑا ضلع صدر ڈاکٹر نسیم خان نے اعلان کیا۔

منگلورو ہوائی اڈے پر رکھے گئے بم معاملہ میں کنڑا میڈیا کی رپورٹنگ میں دھماکہ خیز تبدیلی؛ غیر مسلم کا نام سامنے آتے ہی دہشت گرد ذہنی مریض بن گیا

منگلورو ہوائی اڈے پر پیر کو ایک دھماکہ خیز بیاگ پائی گئی تھی۔ بیاگ کے پتہ ہوتے ہی کنڑا میڈیا اور ٹی وی چینلس ہرمنٹ پر رنگین  بریکنگ نیوز دے رہے تھے۔ٹی وی چینلس دھماکہ خیز اشیاء کو بہت بھاری وزنی ، خطرناک بم  بتا رہے تھے۔

کیامنگلورو ائیر پورٹ پر بم رکھنے والے آدتیہ راؤ کو بچانے کی کوشش ہورہی ہے؟ گرفتاری کے بعد وزیر داخلہ بسواراج بومئی نے مشتبہ دہشت گرد کو ذہنی معذور قرار دیا 

منگلورو انٹر نیشنل ائیر پورٹ پر بم رکھ کر فرار ہونے والے ملزمین آدتیہ راؤ کی خود سپردگی کے ساتھ ہی جہاں اس ائیر پورٹ پر مشتبہ بم رکھے جانے کے معاملے کو سلجھا لیا۔

کمٹہ میں ریوینیو منسٹر آر اشوک کے ہاتھوں رکھاگیا مِنی ودھان سودھا کا سنگ بنیاد۔ طلبہ کودیا حکومت کی طرف سے لیپ ٹاپ کا تحفہ

محکمہ ریوینیو کے وزیر آر اشوک کے ہاتھوں کمٹہ میں مِنی ودھان سودھا کا سنگ بنیا درکھا گیا۔اس کے علاوہ قدرتی آفات سے متاثرہ افراد کی باز آبادکاری کے ایک مرکز کا بھی افتتاح کیا۔ اس تعلق سے منعقدہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا سیلاب زدگان کے لئے مکانات کی تعمیر کے مقصدسے فی ...

وقف بورڈ چیر مین کے انتخاب سے عین قبل ریاستی بی جے پی حکومت کی شرارت، راتوں رات ضلع وقف کمیٹیاں برخاست اور نئی کمیٹیوں کی تشکیل

ریاست کی بی جے پی حکومت کی طرف سے وقف بورڈ کو کھوکھلا کرنے اور اس کے امور میں بے جا مداخلت کرتے ہوئے راتوں رات 25ضلعی وقف کمیٹیوں کو برطرف کرنے اور ان کی جگہ نئی کمیٹیاں تشکیل دیتے ہوئے حکم نامہ جاری کرنے کا تنازع سامنے آیا ہے۔

منگلوروایئرپورٹ بم معاملہ: کمارا سوامی اور بی جے پی کے درمیان جاری ہے زبانی بمباری  

ایک طرف منگلورو ایئر پورٹ پر دھماکہ خیز مادہ (آئی ای ڈی) رکھنے والا ملزم آدتیہ راؤنے بنگلورو میں پولیس کے سامنے خودسپردگی کی ہے اور اپنا جرم قبول کرلیا ہے۔ جس کے بعد اسے گرفتار کرکے پوچھ تاچھ کی جارہی ہے۔دوسری طرف اس معاملے پر سابق وزیراعلیٰ وزیراعلیٰ کمارا سوامی اور بی جے پی ...