یو پی: مرینا میں خاتون فوریسٹ افسر پر کانکنی مافیا کا حملہ، 2 ماہ میں نویں بار قتل کی کوشش

Source: S.O. News Service | Published on 11th June 2021, 12:18 AM | ملکی خبریں |

مرینا، 10؍جون (ایس او نیوز؍ایجنسی) اتر پردیش میں غیر قانونی کانکنی کے لیے بدنام مرینا میں کانکنی مافیاؤں کی دہشت ایک بار پھر دیکھنے کو ملی ہے۔ بدھ کی شب کانکنی مافیا کے لوگوں نے خاتون فوریسٹ افسر شردھا پانڈھیر پر حملہ کر دیا۔ پانڈھیر پر یہ گزشتہ دو مہینے میں نواں حملہ بتایا جا رہا ہے۔ کچھ سال پہلے ہی یہاں آئی پی ایس افسر نریندر کمار کا مافیاؤں نے قتل کر دیا تھا۔

خبروں کے مطابق محکمہ جنگلات کی سب ڈویژنل افسر شردھا پانڈھیر بدھ کی شب کو سیکورٹی فورس اور محکمہ جنگلات کے عملے کے ساتھ گشت پر تھیں۔ اسی دوران انھیں غیر قانونی ریت سے بھری گاڑیاں ملیں تو انھیں روکا اور ضبط کر لیا۔ اس کی خبر دیو گڑھ تھانہ کی پولس کو دی گئی، لیکن مدد نہیں ملی۔ اس کے بعد پانڈھیر کے ساتھ جو سیکورٹی اہلکار تھے، وہی ضبط گاڑی کو تھانہ لے جانے لگے۔ لیکن راستے میں پٹھان پورہ گاؤں میں کچھ لوگوں نے کنٹیلے تار ڈال کر ان کا راستہ روک دیا اور محکمہ جنگلات کی ٹیم پر حملہ کر دیا۔ حملہ آوروں کے پاس بندوق، فرسا، لاٹھی وغیرہ اسلحے تھے۔ اس دوران بھیڑ نے فوریسٹ افسر پانڈھیر پر حملہ کر دیا، لیکن ایک سیکورٹی جوان نے بچاؤ کیا تو اس کے ہاتھ میں چوٹ آ گئی۔

فوریسٹ افسر شردھا پانڈھیر نے میڈیا کو بتایا کہ جب انھوں نے دیہی عوام اور مافیا کے لوگوں سے پوچھا کہ پولس انھیں کیوں نہیں روک رہی ہے تو انھوں نے بتایا کہ وہ پولس کو انٹری فیس دے رہے ہیں۔ فوریسٹ افسر کا الزام ہے کہ پولس بالکل بھی تعاون نہیں کر رہی ہے۔ بدھ کی رات بھی پولس خبر دینے کے باوجود نہیں آئی۔

ایک نظر اس پر بھی

 جموں و کشمیر کے راجوری میں گئو رکشکوں کے ذریعے 20 سالہ نوجوان کا پیٹ پیٹ کر قتل! محبوبہ مفتی نے متاثرہ کنبہ کے حق میں اٹھائی آواز

جموں و کشمیر کے راجوری ضلع میں ایک 20 سالہ نوجوان اعجاز ڈار کو کچھ نامعلوم افراد نے اس وقت قتل کر دیا جب وہ اپنی بھینس لے کر جا رہے تھے۔ یہ واقعہ مراد نگر گاؤں کے نزیک پیر کے روز پیش آیا۔

وجے مالیا، نیرو مودی اور میہل چوکسی کے ضبط شدہ 9371 کروڑ روپے سرکاری بینکوں کو منتقل

سرکاری بنیکوں سے اربوں روپے کے قرض لیکر فرار کاروباریوں وجے مالیا، نیرو مودی اور میہول چوکسی کے ملک و بیرون ملک میں ضبط 18170.02 کروڑ روپے اور املاک میں 9317.17 کرور روپے بینکوں اور حکومت کو منتقل کر دیئے گئے ہیں۔