مرکزی وزیر میناکشی لیکھی نے مظاہرین کسانوں کوبتایا’موالی‘ ؛ کسان اورعوام میں شدید ناراضگی،گرمائی سیاست، استعفیٰ کا مطالبہ

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 23rd July 2021, 12:50 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی، 22 جولائی (آئی این ایس انڈیا) زرعی قوانین کے خلاف احتجاج کررہے کسانوں کو لے کر مرکزی وزیر میناکشی لیکھی نے متنازعہ بیان دیتے ہوئے کسانوں کا موازنہ  موالیوں سے کردیا جس پر سیاست گرماگئی ہے اور احتجاجی کسانوں سمیت عوام میں بھی سخت ناراضگی ظاہر کی جارہی ہے۔ میناکشی لیکھی نے  موالی کہنے کے ساتھ ساتھ یہ بھی کہا  کہ کسان جس طرح احتجاج کررہے ہیں،  اس طرح احتجاج کرنا جرم ہے انہوں  نے  اپوزیشن پر الزام لگایا کہ وہ  ایسی چیزوں کو ہوا دے رہی ہے۔ لیکھی کے اس بیان  کی  کانگریس نے  سخت مخالفت کی ہے۔ اس نے لکھی کے استعفیٰ کا مطالبہ بھی کیا ہے۔

جمعرات کو میڈیا سے بات کرتے ہوئے میناکشی لیکھی نے کہا کہ وہ کسان نہیں، وہ موالی ہیں،  اور وہ لوگ جو کررہے ہیں   یہ سبھی مجرمانہ سرگرمیاں ہیں۔ 26 جنوری کو جو بھی ہوا وہ بھی شرمناک تھا، وہ مجرمانہ سرگرمیاں تھیں، اس میں حزب اختلاف کی طرف سے چیزوں کو ہوادی جارہی ہے۔زرعی قوانین کے خلاف احتجاج کررہے کسانوں سے پوچھے گئے سوال پر لیکھی نے یہ بیان دیا۔ انہوں نے صحافی سے کہا کہ آپ اسے دوبارہ کسان کہہ رہے ہیں، وہ موالی ہیں۔

اس بیان کے فورا بعد ہی حزب اختلاف نے لیکھی پر حملہ کردیا۔ دہلی میں چار بار ایم ایل اے رہے سینئر کانگریس لیڈر مکیش شرما نے لیکھی سے اپنے بیان پر معافی مانگنے کو کہا۔ انہوں نے ٹویٹ کیاکہ شرم کرو! میناکشی لیکھی جی! کاشتکار موالی نہیں بلکہ کھانا مہیا کرنے والے ہیں، اس لئے معافی مانگو یا استعفیٰ دو۔کسان لیڈر راکیش ٹکیت نے مرکزی وزیر میناکشی لیکھی کے بیان پر افسوس کا اظہار کیا۔ انہوں نے کہا کہ لیکھی کو ایسا بیان نہیں دینا چاہئے۔ ٹکیت نے کہا کہ زرعی قوانین کے خلاف مظاہرہ کرنے والے موالی نہیں کسان ہیں، کسانوں کے بارے میں ایسی بات نہیں کرنی چاہئے۔ 

ایک نظر اس پر بھی

مانسون اجلاس: پیگاسس اور کسانوں کے مسئلہ پر حزب اختلاف کا ہنگامہ جاری، راجیہ سبھا کی کارروائی تک ملتوی

راجیہ سبھا میں اپوزیشن جماعتوں کے ارکان نے پیگاسس جاسوسی کیس، کسانوں کے مسائل اور مہنگائی پر راجیہ سبھا میں شور و غل اور ہنگامہ کیا، جس کی وجہ سے ایوان کو دوپہر 2 بجے تک ملتوی کر دیا گیا۔ صبح ضروری دستاویزات میز پر رکھے جانے کے بعد چیئرمین ایم وینکیا نائیڈو نے کہا کہ ضابطہ 267 کے ...

دہلی: ریپ کے بعد قتل کی گئی بچی کے اہل خانہ سے راہل گاندھی کی ملاقات، ’انصاف کے راستہ پر میں ساتھ ہوں‘

  کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی نے بدھ کی صبح راجدھانی دہلی میں عصمت دری اور قتل کی شکار ہونے والی بچی کے اہل خانہ سے ملاقات کی۔ ملک کو شرمسار کر دینے والے اس واقعہ کا المناک پہلو یہ ہے کہ متاثرہ بچی کی لاش کو اہل خانہ کی مرضی کے بغیر نذر آتش کر دیا گیا۔ راہل گاندھی صبح کے وقت ...

دہلی سنبھال نہیں پا رہے ہیں، وزیر داخلہ یو پی کو دے رہے ہیں سرٹیفکیٹ: پرینکا گاندھی

کانگریس کی جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی نے دہلی میں ایک بچی کے ساتھ ہوئے حادثے کی مذمت کرتے ہوئے وزیرداخلہ امت شاہ کو ہدف تنقید بنایا اور کہا کہ وہ دہلی کا لاء اینڈ آرڈر سنبھال نہیں پا رہے ہیں اور اترپردیش میں بہتر نظم و نسق کا سرٹیفکیٹ بانٹ رہے ہیں۔

راہل گاندھی کی ’ناشتہ پارٹی‘ کے بعد کانگریس نے کہا ’یہ آنے والے 2024 کی تصویر ہے‘

 کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی کی دعوت پر آج صبح 9.30 بجے 17 اپوزیشن پارٹیوں کے لیڈران کانسٹی ٹیوشن کلب پہنچے اور چائے و ناشتہ کی دعوت میں شرکت کی۔ اس سلسلے میں کانگریس ترجمان ابھشیک منو سنگھوی نے ایک پریس کانفرنس کر ان سبھی اپوزیشن پارٹی لیڈران کا شکریہ ادا کیا جنھوں نے راہل ...

دہلی میں 9 سالہ دلت بچی کی عصمت دری اور قتل کے خلاف کانگریس سراپا احتجاج

دہلی میں 9 سالہ دلت بچی کی عصمت دری اور قتل معاملہ کو لے کر کانگریس نے سخت ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے دہلی کی کیجریوال حکومت اور دہلی پولیس کے ساتھ ساتھ مرکز کی مودی حکومت کو بھی تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔