ایمس میں دستیاب طبی سہولتیں ریاست کے سرکاری اسپتالوں میں مہیا کرائی جائیں گی:سری راملو

Source: S.O. News Service | Published on 7th September 2019, 11:01 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،7؍ستمبر(ایس او نیوز) ریاست میں ڈاکٹروں کے 1500خالی عہدے بہت جلد پر کئے جائیں گے۔ یہ بات ریاستی وزیر محنت و خاندانی بہبود سری راملو نے کہی۔ ودھان سودھا کی تیسری منزل پر واقع اپنے دفتر میں پوجا پاٹ کے ساتھ داخل ہونے کے بعد اخباری نمائندوں سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ریاست کے سرکاری اسپتالوں کے انتظام و انصرام میں سدھار لایا جائے گا۔ سرکاری اسپتالوں میں ڈاکٹروں کی قلت نہ ہو، اس بات کو یقینی بنایا جائے گا۔ڈاکٹروں کے خالی عہدوں پر ایم بی بی ایس ڈاکٹروں کا تقرر کیاجائے گا۔ اس کے علاوہ ٹیکنیشینز کے تمام عہدے پر کرنے کے لئے اقدامات کئے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ انہیں معلوم ہوا ہے کہ ریاست میں بیشتر سرکاری اسپتالوں کی حالت ٹھیک نہیں ہے، اس سلسلے میں کئی شکایات موصول ہوئی ہیں۔سرکاری اسپتالوں میں پائی جانے والی خامیوں کو درست کرتے ہوئے اسپتالوں کے انتظام و انصرام میں سدھار لایا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ 2009میں جب وہ وزیر صحت تھے۔ انہوں نے ریاست میں 108ایمبولینس خدمات کی شروعات کی تھی، ریاست میں 108ایمبولینس کی خدمات آج بھی جاری ہیں۔ اسے مزید بہتر بنایا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ سرکاری اسپتالوں کا معیار بہتر بنانے کی طرف زیادہ توجہ دی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ سرکاری اسپتالوں میں جانچ کے مراکز (لیاب) کی حالت درست نہیں ہے۔ ریاست کے سرکاری اسپتالوں میں دہلی کے آل انڈیا انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنس(ایمس) کے طرز پر لیاب کی سہولتیں مہیا کرائی جائیں گی۔ انہوں نے کہا کہ ایمس میں خون کے نمونوں کی جانچ کیلئے جدید ٹکنالوجی کا استعمال کیا جاتا ہے۔ خون کے نمونے کی 16ٹسٹ کے ذریعہ جانچ کی جاتی ہے۔وزیر صحت نے کہا کہ جب وہ رکن پارلیمان تھے،انہیں ایک بات کاتجربہ ہوا۔ ایمس میں خون کے نمونے کی جانچ کے ذریعہ جسم کی تمام بیماریوں کا پتہ لگایا جاتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ خون کی جانچ کیلئے ایمس میں جو مشین اور ٹیکنالوجی استعمال کی جاتی ہے اسے ریاست کے سرکاری اسپتالوں میں مہیا کرانے کے بارے میں غور کیا جارہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ریاست میں سرکاری اسپتالوں اور سرکاری ڈاکٹروں کے کئی مسائل ہیں انہیں جلداز جلد حل کرنے کیلئے اقدامات کئے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ سابقہ حکومتوں کے دور اقتدار میں سرکاری اسپتالوں میں دوائیوں کی خریدی کے معاملے میں کئی بدعنوانیاں سامنے آئی تھیں۔ ان تمام معاملوں کی جانچ کے لئے اقدامات کئے جائیں گے۔

ایک نظر اس پر بھی

مسلمانوں، اور کمزور طبقات کو ووٹ ڈالنے کے حق سے محروم کرنے کی کوشش، قوانین شہریت پر ممتاز دانشور و صحافی ظہیر علی خان کی تنقید؛ شاہین باغ گلبرگہ کے احتجاجی جلسہ میں ہزاروں مرد و خواتین کی شرکت

ریاست آسام میں 18لاکھ لوگوں کو فہرست رائے دہندگان سے باہر کردیا گیا ہے ان میں سے 4لاکھ 10ہزار مسلمان ہیں جب کہ مابقی 15لاکھ ہندو بھائی ہیں۔ لیکن ان 15لاکھ ہندوؤں میں سے تمام کے تمام اقوام درج فہرست، قبائل درج فہرست اور نہایت غریب قسم کے ہندو لوگ ہیں۔  18لاکھ کی فہرست میں اعلیٰ ذات کے ...

 آئی اے ایس آفیسر منیش موڈگل کا تبادلہ

آئی اے ایس عہدیدار منیش موڈگل جنہیں مرکزی حکومت نے گزشتہ ہفتہ ای گورننس کے لیے قومی ایوارڈ عطا کیا تھا، کا کمشنر سروے ، سیٹلمنٹ اور لینڈ ریکارڈس کے عہدہ سے تبادلہ کردیا گیا ۔ منیش کو اب محکمہ پر سونل اور انتظامی اصلاحات کا سکریٹری مقرر کیا گیا۔ کے وی تری لوک چندر جو پہلے ...

کرناٹک کے چن پٹن میں سی اے اے، این آر سی کے خلاف زبردست احتجاج، سابق وزیر اعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی، سی ایم ابراہیم کے علاوہ جے این یو کی طالبہ امولیا کی شرکت

چن پٹن کے شہریوں کی جانب سے 14/ فروری بروز جمعہ دوپہر 3.30/ بجے بمقام پیٹا اسکول گراؤنڈ چن پٹن شہریت ترمیمی قانون (سی اے اے) این آر سی اور این پی آر کے خلاف احتجاجی جلسہ منعقد کیا گیا۔