این ڈی اے میں شامل مانجھی نے دلتوں کے ساتھ ہو رہے سلوک پر بی جے پی کو بنایا نشانہ

Source: S.O. News Service | Published on 24th September 2021, 12:18 AM | ملکی خبریں |

پٹنہ،24؍ستمبر(ایس او نیوز؍ایجنسی) بھگوان رام کے وجود پر انگلی اٹھانے کے بعد بہار کے سابق وزیر اعلیٰ جیتن رام مانجھی کو بی جے پی لیڈروں کی لگاتار تنقید کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ جمعرات کو انھوں نے بی جے پی لیڈروں پر جوابی حملہ کرتے ہوئے کہا کہ انھیں (بی جے پی کو) بھی مندروں میں دلتوں کے داخلے کے بارے میں بولنا چاہیے۔ مانجھی کرناٹک کے اس واقعہ کا تذکرہ کر رہے تھے جہاں مندر انتظامیہ نے ایک دلت والد پر 23 ہزار روپے کا جرمانہ لگایا، جو مندر کے دروازے کے باہر پوجا کر رہا تھا لیکن اس کا دو سال کا بیٹا 4 ستمبر کو اس میں داخل کر گیا۔

مانجھی نے کہا کہ ’’مذہبی مافیا ایسے واقعات کے بارے میں کچھ نہیں کہیں گے۔ وہ اس کے بارے میں خاموش ہو جاتے ہیں۔ کوئی بھی دلت طبقہ کے مندروں میں داخلے پر پابندی لگانے پر نہیں بولے گا۔ وہ دلت لوگوں کو مندروں میں داخل کرنے یا مذہبی کتابیں پڑھنے کو ٹھیک نہیں سمجھتے۔‘‘ مانجھی نے اس تعلق سے کیے گئے ایک ٹوئٹ میں لکھا ہے کہ ’’میں جو کچھ بھی کہہ رہا ہوں... صدیوں کے درد کا نتیجہ ہے۔ ہم نے اب تک اپنا غصہ ظاہر نہیں کیا۔‘‘

واضح رہے کہ مانجھی نے منگل کے روز اپنے ایک بیان میں کہا تھا کہ انھیں بہار کے اسکولی نصاب میں رامائن کو شامل کرنے کو لے کر کوئی اعتراض نہیں ہے، لیکن رامائن کی کہانی سچائی پر مبنی نہیں ہے۔ مانجھی نے صاف لفظوں میں کہا تھا کہ ’’رامائن میں کئی اچھی چیزیں ہیں جن کا استعمال ہمارے بچوں اور خواتین کو تعلیم یافتہ کرنے کے لیے کیا جا سکتا ہے۔ ہمارے بڑوں اور خواتین کی عزت کرنا اس کتاب کی خصوصیات ہیں۔ مجھے رامائن کو نصاب میں شامل کرنے میں کوئی اعتراض نہیں ہے، لیکن میں نجی طور سے مانتا ہوں کہ یہ ایک خیالی کتاب ہے اور مجھے نہیں لگتا کہ رام ایک عظیم شخص تھے اور وہ زندہ تھے۔‘‘

مانجھی کے اس بیان ے بعد بی جے پی رکن اسمبلی ہری بھوشن ٹھاکر نے کہا تھا کہ ’’مانجھی نے رام کے وجود پر سوالیہ نشان لگایا ہے۔ میں مانجھی سے سوال پوچھنا چاہتا ہوں کہ ان کے والدین نے ان کا نام جیتن رام مانجھی کیوں رکھا۔ وہ مریادا پرشوتم بھگوان شری رام کے نام پر گھٹیا سیاست کر رہے ہیں۔‘‘

ایک نظر اس پر بھی

تریپورہ  میں مسلمانوں اور اُن کی عبادت گاہوں پر شرپسندوں کے حملے؛ جماعت اسلامی ہند کا تریپورا کے شر انگیز عناصر کے خلاف سخت کاروائی کا مطالبہ

گذشتہ دو تین دنوں سے ریاست تریپورہ  میں مسلمانوں پر اور اُن کی عبادت گاہوں پر شرپسندعناصرکی جانب سے مسلسل حملوں کی اطلاعات مل رہی ہیں۔ مسجدوں میں آگ زنی، مسلمان مرد و خواتین پر تشدد،  انہیں ہراساں کرنے اور گھروں پر بھگوا جھنڈے لہرانے کے واقعات کی اطلاعات  ہیں۔اشرار بلاخوف ...

100 ؍کروڑ ٹیکوں پر ملک میں جشن لیکن سوالات برقرار

  ملک میں 100؍ کروڑ ٹیکے لگائے جانے پر جشن کا ماحول ہونے کا دعویٰ حکومت کررہی ہے۔ اسی لئے وزیر اعظم مودی نے جمعہ کو صبح 10؍ بجے قوم سے خطاب کرتے  100؍ کروڑ ٹیکوں کو غیر معمولی کارنامہ قرار دیا۔

جے این یو طلبا شرجیل امام کی ضمانت عرضی خارج

دہلی کی ساکیت عدالت نے سٹیزن شپ امینڈمنٹ ایکٹ (سی اے اے) اور قومی شہریت رجسٹر (این سی آر) کے خلاف دہلی میں تحریک کے دوران اشتعال انگیز تقریر دینے کے الزام میں بند جواہر لال نہرو یونیورسٹی (جے این یو) کے طالب علم شرجیل امام کی ضمانت کی عرضی جمعہ کو خارج کردی۔ عدالت نے کہا کہ شرجیل ...

آئندہ لوک سبھا انتخاب کو لے کر کانگریس نے کیا بڑا اعلان، بہار کی تمام 40 سیٹوں پر تنہا انتخاب لڑے گی

 بہار میں اسمبلی کی دو سیٹوں پر ہو رہے ضمنی انتخاب کے مابین راشٹریہ جنتادل (آرجے ڈی) زیر قیادت مہا گٹھ بندھن سے ناراض حلیف کانگریس نے آج واضح کر دیا کہ آئندہ لوک سبھا انتخاب پارٹی سبھی سیٹوں پر تنہا لڑے گی ۔