مینگلور : دکشن کنڑا میں ایک ہفتہ تک جاری رہنے والے لاک ڈاون کا آج سے ہوا نفاذ، راستے سنسان، دکانیں بند، عام زندگی مفلوج

Source: S.O. News Service | Published on 16th July 2020, 3:33 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں |

منگلورو، 16؍جولائی (ایس او نیوز)  کورونا کے بڑھتے معاملات اور روز بروز اضافہ کو دیکھتے ہوئے  ایک ہفتہ طویل لاک ڈاون کا آج  سے مینگلور سمیت دکشن کنڑا ضلع میں نفاذ عمل میں آیا جس کے دوران شہر کی سڑکیں سنسان اور بہت زیادہ چہل پہل والے علاقوں میں بھی سناٹا نظر آیا۔ 

بدھ کی شام سے جاری یہ لاک ڈاون 23 جولائی صبح پانچ بجے تک لاگو رہے گا۔لاک ڈاون میں کے ایس آر ٹی سی اور  پرائیویٹ بسوں پر پابندی عائد کی گئی ہے اور سختی کے ساتھ راستوں پرسواریوں کو  گذرنے سے منع کیا گیا ہے۔  خانگی گاڑیوں کو صرف  ایمرجنسی کے موقعوں پر راستوں پر سے گذرنے کی اجازت ہوگی، دیگر کسی بھی معاملے پر سواریوں کے گذر پر پابندی لگائی گئی ہے۔  کنٹین منٹ علاقوں کو مہر بند کیا گیا ہے، البتہ راشن و کرانہ کی دکانیں ،دودھ،  ترکاری ، مچھلیاں اور گوشت  کی دکانیں صبح 8 بجے سے  11 بجے تک کھلی رہیں گی اور لوگوں کو اس درمیان خریداری کی اجازت دی گئی ہے۔

جنوبی کینرا کی ڈپٹی کمشنر سندھو بی روپیش نے لاک ڈاؤن کے تعلق سے بتایا کہ  شراب خانے  پوری  طرح بند رہیں  گی۔ جم ، اسٹیڈیم سوئمنگ پولس ، تفریحی پارکس، آڈیٹوریم اور میٹنگ ہالس میں عوامی داخلہ ممنوع رہےگا۔ علاوہ ازیں تمام مذہبی اور عبادت گاہوں میں مذہبی تقاریب کے علاوہ سماجی ، سیاسی، کھیل کود اور ثقافتی پروگرامس کی بھی اجازت نہیں ہوگی۔

ہیلتھ ، میڈیکل ، ایجوکیشن ، پولیس ، ہوم گارڈس، پبلک سیکوریٹی، فائر بریگیڈ، ایمرجنسی خدمات، آفات و سماوی مینجمنٹ فورس، منگلورو سٹی کارپوریشن اور جیل معمول کے مطابق کام کریں   گے۔ پروازیں اور ٹرین سروس  لاک ڈاؤن کے دوران شیڈول کے مطابق چلیں گی، مسافرین کے ٹکٹ کو ہی پاس سمجھا جائے گا۔ عوام کو ٹیکسی اور آٹو رکشا میں سفر کی اجازت رہے گی  تا کہ وہ ائیر پورٹ اور ریلوے اسٹیشن جاسکیں۔ 

 سندھو بی روپیش نے بتایا  کہ اسکول کالجس اور دیگر تعلیمی اور کوچنگ ادارے بند رہیں گے۔ آن لائن کلاسس جاری رہیں گے تا ہم کووڈ۔19 کنٹرول پر قومی رہنما خطو ط کے تحت امتحانات کا شیڈول جاری کیا جائے گا۔ امتحانات میں پرچہ سوالات کا جواب دینے والے طلبہ سفری پاس  کی حیثیت سے ہال ٹکٹس کا استعمال کرسکتے ہیں۔ وہ امتحان ہال پہنچنے کے لئے ٹیکسی اور آٹو رکشا کا بھی   استعمال کرسکتے ہیں۔ ٹیچرس کو ایس ایس ایل سی جانچ مراکز تک سفر کی اجازت دی گئی ہے۔ ہوٹل اور ریسٹورنٹ صرف ٹیک اوے غذا فراہم کرسکتے ہیں۔ فوڈ پروسسنگ ، متعلقہ صنعتیں ، بینک ، انشورنس آفس، اے ٹی ایم، پرنٹ و الکٹرانک میڈیا گھرانوں کو کام کی اجازت رہے گی۔ فاصلاتی مواصلات، انٹرنٹ ، سرکولیشن اور کیبل سرویسس ، انفارمیشن ٹکنالوجی اور متعلقہ خدمات بھی جاری  رہیں گی۔

ایک نظر اس پر بھی

کیرالہ میں پیش آیا چٹان کھسکنے کا خطرناک حادثہ۔ 15ہلاک اور60سے زائدافراد ہوگئے لاپتہ۔ ملبے میں دب گئیں 30جیپ گاڑیاں 

کیرالہ کے مشہور تفریحی مقام ’مونار‘ سے قریب ’ایڈوکی‘ میں چٹان کھسکنے کا ایک خطرناک حادثہ پیش آیا جس میں تاحال 15افراد ہلاک ہونے اور 60سے زیادہ لوگ لاپتہ ہونے کے علاوہ 30جیپ گاڑیاں چٹان کے ملبے میں دب کر رہ جانے کی خبر ہے۔

کیرالہ میں پیش آیا چٹان کھسکنے کا خطرناک حادثہ۔ 15ہلاک اور60سے زائدافراد ہوگئے لاپتہ۔ ملبے میں دب گئیں 30جیپ گاڑیاں 

کیرالہ کے مشہور تفریحی مقام ’مونار‘ سے قریب ’ایڈوکی‘ میں چٹان کھسکنے کا ایک خطرناک حادثہ پیش آیا جس میں تاحال 15افراد ہلاک ہونے اور 60سے زیادہ لوگ لاپتہ ہونے کے علاوہ 30جیپ گاڑیاں چٹان کے ملبے میں دب کر رہ جانے کی خبر ہے۔

کورونا کی وبا اور دعوت رجوع الی اللہ، اس عنوان کے تحت جماعت اسلامی ہند، کرناٹک کی 15 روزہ مہم کا آغاز

  کورونا کی وبا سے اس وقت پوری انسانیت پریشان ہے۔ اس مرض کا مقابلہ کرنے کیلئے حفاظتی اور احتیاطی تدابیر اختیار کرتے ہوئے لوگ اپنے رب سے رجوع ہوں۔ کورونا جیسی بیماریوں پر قابو پانے کیلئے طبی علاج کے ساتھ روحانی اور اخلاقی طاقت کا ہونا بھی ضروری ہے۔

کرناٹک سے 40 امیدوار سیول سرویسز امتحان میں کامیاب

کرناٹک سے زائداز 40 امیدواروں نے 2019 کے یونین پبلک سرویس کمیشن (یو پی ایس سی ) سیول سرویس امتحان میں کامیابی حاصل کی اور اب آئی اے ایس ، آئی ایف ایس اور آئی پی ایس اور دیگر میں ملازمت حاصل کریں گے۔