منگلورو: آسمانی بجلی گرنے سے ایک بچہ جاں بحق دوسرا شدید زخمی

Source: S.O. News Service | Published on 21st April 2021, 3:02 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

منگلورو ،21؍ اپریل (ایس او نیوز) منگلورو تعلقہ کے ہلے انگڈی نامی گاوں میں کھلے میدان میں کھیلنے والے دو بچے آسمانی بجلی کی زد میں آگئے جن میں سے ایک  بعد میں زخموں کی تاب نہ لاکر چل بسا، البتہ دوسرا بچہ  بھی  شدید زخمی ہوا ہے اور اُسے  بے حد  نازک حالت میں اسپتال میں داخل کیا گیا ہے۔

ذرائع سے ملی اطلاع کے مطابق منگل کے دن  ہلے انگڈی کے اندرا نگر میں  شام کے وقت یہ حادثہ  پیش آیا جب منصور کا پانچ سالہ فرزند  نیہان  اور دُرگپّا کا چھ سالہ  فرزند مروتیش  دوسرے بچوں کے ساتھ باہر میدان میں  کھیل رہے تھے۔ اس وقت اچانک بجلی  کڑکی اور یہ دونوں بچے ایک ساتھ بے ہوش ہوکر گر پڑے۔ ساتھ میں کھیل رہے بچے دوڑ کر  اپنے اپنے گھر پہنچے اور بجلی گرنے کی بات بتائی۔ تب مقامی لوگوں نے موقع پر پہنچ کر بجلی کی زد میں آنے سے زخمی ہونے والے بچوں کو موکا کے ایک نجحی اسپتال میں داخل کروایا۔ مگر چونکہ بچوں کی حالت بہت سنگین تھی اس لئے بہترعلاج کے لئے انہیں منگلورو کے نجی اسپتال میں منتقل کیا گیا ۔  مگر ان میں سے نیہان نے آج  بدھ کو اپنی آخری سانس لی اور داعی اجل کو لبیک کہہ گیا۔

 

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل میں کورونا معاملات میں ہورہا ہے اضافہ؛ آج بھی 64 کی رپورٹ آئی پوزیٹیو؛ بھٹکل میں سات علاقوں کوقرار دیا گیا کنٹیمنٹ زون

جس طرح ریاست کرناٹک میں اب ضلع اُترکنڑا میں کورونا کے معاملات میں روز بروز اضافہ دیکھا جارہا ہے اور ضلع اُترکنڑا پوری ریاست میں کورونا پوزیٹیو معاملات میں  تیسرے نمبر پر پہنچ گیا ہے، اُسی طرح بھٹکل میں بھی کورونا کے معاملات میں  تشویش کی حد تک اضافہ دیکھا جارہاہے۔

بھٹکل: شمالی کینرا میں کووڈ وباء کا بدلتا منظر نامہ : سب سے آخری پوزیشن والا ضلع پہنچ گیا سب سے آگے ؛ کون ہے ذمہ دار ؟

کورونا کی دوسری لہر جب ساری ریاست کو اپنی لپیٹ میں لے رہی تھی تو ضلع شمالی کینرا پوزیٹیو معاملات میں گزشتہ لہر کے دوران سب سے آخری پوزیشن پر تھا۔ لیکن پچھلے دو تین دنوں سے بڑھتے ہوئے پوزیٹیو اورایکٹیو معاملات کی وجہ سے اب یہ ضلع ریاست میں سب سے  اوپری درجہ میں پہنچ گیا ہے۔ بس ...

کورونا کرفیو کی وجہ سے لاری ڈرائیوروں کو سفرکے دوران کھانے پینے اور لاری کی مرمت کا مسئلہ درپیش:ڈرائیور، کلینر اور گیاریج والوں کی زندگی پنکچر

کورونا وائرس پر لگام لگانے کے لئے حکومتوں کی طرف سے  نافذ کئے گئے سخت کرفیو کی وجہ سے ہوٹل ، ڈھابے ،گیاریج ، پنکچر کی دکانیں وغیرہ بند ہیں ، جس کے نتیجے میں  ضروری اشیاء سپلائی کرنےوالی لاریوں کے ڈرائیوروں کو سفر کے دوران میں کئی مشکلات درپیش ہیں۔

کرناٹکا میں کورونا کے بڑھتے معاملات کے چلتے سرکاری اسپتالوں میں ڈیالسس کی خدمات بند : حکومت کی خاموشی پر فاؤنڈیشن کا اقدام

پیشگی احتیاطی تدابیر اورمنظم و منضبط نظام کے بغیر  کورونا وائرس پر  کنٹرول کرنے میں ناکامی  اور کووڈ ٹیکہ  کی سپلائی بند ہوجانے سے ایک طرف عوام پہلے سے پریشان ہیں، ایسے میں    حکومت کی ایک  اورنظرا ندازی  نے ریاست کرناٹک کے ہزاروں ڈیالسس کے مریضوں کو مشکلات میں ڈال دیا ہے۔

بھٹکل سمیت ساحلی کرناٹکا میں 'ٹاوکٹے' طوفان کا اثر؛ طوفانی ہواوں کے ساتھ جاری ہے بارش؛ کئی مکانوں کی چھتیں اُڑ گئیں، بھٹکل میں ایک کی موت

'ٹاوکٹے' طوفان جس کے تعلق سے محکمہ موسمیات نے پیشگی  اطلاع دی تھی کہ    یہ طوفان  سنیچر کو کرناٹکا اور مہاراشٹرا کے ساحلوں سے ٹکرارہا ہے،   اس اعلان کے عین مطابق  آج سنیچر صبح سے  بھٹکل سمیت اُترکنڑا اور پڑوسی اضلاع اُڈپی اور دکشن کنڑا میں طوفانی ہواوں کےساتھ بارش جاری ہے جس ...

ساحلی کرناٹکا میں 'ٹاوکٹے' طوفان کی دستک ۔ محکمہ موسمیات نے جاری کیا 16 مئی تک ریڈ الرٹ

ساحلی کرناٹکا کی طرف  بڑھتے  'ٹاوکٹے' طوفان کے پیش نظرمحکمہ موسمیات نے 16مئی تک ریڈ الرٹ جاری کرتے ہوئے مچھیروں اور عوام الناس کو دریا، سمندراورنشیبی و ساحلی علاقوں سے دور رہنے کی ہدایت دی ہے۔

ساحلی کرناٹکا میں 'ٹاوکٹے' طوفان کی دستک ۔ محکمہ موسمیات نے جاری کیا 16 مئی تک ریڈ الرٹ

ساحلی کرناٹکا کی طرف  بڑھتے  'ٹاوکٹے' طوفان کے پیش نظرمحکمہ موسمیات نے 16مئی تک ریڈ الرٹ جاری کرتے ہوئے مچھیروں اور عوام الناس کو دریا، سمندراورنشیبی و ساحلی علاقوں سے دور رہنے کی ہدایت دی ہے۔

بھٹکل میں بڑھ رہے ہیں کورونا پوزیٹیو معاملات؛ آج ایک ہی دن 81 کی رپورٹ آئی پوزیٹو

بھٹکل سمیت ضلع اُترکنڑا میں  کورونا پوزیٹیو کے معاملات میں دن بدن اضافہ دیکھا جارہا ہے، جس سے ذمہ داران میں تشویش پائی جارہی ہے۔ آج بدھ کو ایک ہی دن بھٹکل میں کورونا پوزیٹیو کے 81 معاملات سامنے آئے ہیں  جس کے ساتھ ہی  کورونا کی دوسری لہر میں بھٹکل میں پوزیٹیو معاملات کی تعداد ...

کورونا کا خاتمہ جولائی تک نہیں ہوگا: ایکسپرٹ

جس طرح کورونا کے نئے معاملوں کی تعداد میں کمی درج ہو رہی ہے اس سے یہ امید بنی ہے کہ ہندوستان میں کورونا کی دوسری لہر کا خاتمہ جلد ہو جائے گا لیکن وبائی بیماریوں کے ماہر شاہد جمیل کا کہنا ہے کہ بھلے ہی ابھی کچھ ریاستوں میں کورونا کے کیس کم ہوتے نظر آ رہے ہوں لیکن دوسری لہر کا ...