منگلورو: ہاتھرس احتجاج کے معاملہ میں گرفتار طلبہ کی رہائی کا مطالبہ ۔ کیمپس فرنٹ نے کیا احتجاجی مظاہرہ

Source: S.O. News Service | Published on 14th October 2021, 7:41 PM | ساحلی خبریں |

منگلورو، 14؍ اکتوبر (ایس او نیوز) اتر پردیش کے ہاتھرس میں دو سال قبل پیش آئے عصمت دری سانحہ کے بعد ہوئے احتجاج کے پس منظر میں گرفتار4 طلبہ کی رہائی کا مطالبہ کرتے ہوئے کیمپس فرنٹ آف انڈیا نے احتجاجی مظاہرہ کیا ۔ 
    
شہر کے کلاک ٹاور کے پاس سے جنوبی کینرا ڈپٹی کمشنر دفتر تک نکالی جانے والی طلبہ کی ریلی کو پولیس نے روکنے کی کوشش کی مگر ریلی آگے بڑھی اور اس کے بعد ڈی سی دفتر کے سامنے دھرنا دیا گیا ۔ اس مظاہرے میں طلبہ نے اتر پردیش حکومت کے خلاف نعرے بازی کی اپنی ناراضی کا اظہار کیا ۔ مظاہرین سے  خطاب کرتے ہوئے  سی ایف آئی کے ریاستی صدر عطاءاللہ پونجالکٹے نے کہا کہ اگر حکومت یہ سمجھتی ہے کہ طلبہ لیڈروں کی گرفتاری سے سی ایف آئی احتجاج کرنا بند کردے گی تو یہ اس کی بے وقوفی  ہے ۔ پولیس کی طرف سے مقدمے، جیل اور لاٹھیوں کی توقع کے ساتھ ہی طلبہ احتجاجی سرگرمیوں میں شامل ہوتے ہیں ۔ اگر جیل میں قید رکھنے سے بزدل ساورکر کی طرح ہم لوگ معافی مانگ کر باہر نکلنے والے نہیں ہیں ۔ ہمیں جتنا روکنے کی کوشش کی جائے گی ہماری رفتار اتنی ہی تیز ہوجائے گی ۔
    
اس موقع پر سی ایف آئی کے ریاستی خزانچی سواد کلرپے، نیشنل جنرل سیکریٹری اشوان صادق کے علاوہ دیگر ذمہ داران اور طلبہ کی بڑی تعداد موجود تھی۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل : کرناٹک میں پیر سے پہلی تا پانچویں جماعت کے کلاسوں کا ہوا آغاز؛ ریاست میں 90 فیصد اور اُترکنڑا میں 93 فیصد طلبہ کی حاضری؛ زیادہ تر والدین میں خوشی کی لہر

ریاست کرناٹک میں کووڈ لاک ڈاون کی وجہ سے  20  ماہ سے بند  پرائمری اسکولس پیر سے دوبارہ کھل گئے جس کے ساتھ ہی اکثر والدین میں خوشی کی لہر دوڑ گئی ہے۔ ریاست میں    پہلے دن  90 فیصد طلبہ حاضر رہے،اسی طرح ضلع اُترکنڑا میں  طلبہ کی حاضری 93.26 فیصددرج کی گئی۔ 

منکی میں مہاتما گاندھی گرام سوراجیا پروگرام کا افتتاح :ہندوتوا کے نام پر سیاست کرنےو الوں کو چترنجن، تمپانائک اور پریش میستا کا قتل سیاسی اشیاء ہیں : منکال وئیدیا کا خطاب

ڈاکٹر  چترنجن ، تمپانائک  اور  پریش میستا کےقتل بی جےپی کے لئے سیاسی اشیاء ہیں، یہ لوگ ہندوتوا کے نام پر سیاست کرتےہیں،  آگے اب یہ لوگ اپنی سیاست کےلئے مزید کس کو استعمال کرتےہیں دیکھنا ہوگا۔ ان خیالات کا اظہار  بھٹکل حلقہ کے سابق رکن اسمبلی منکال وئیدیا نے کیا۔

منگلورو پولس فائرنگ؛ ریاستی حکومت نے پولس کو دی کلین چٹ، کہا؛ کسی بھی پولس اہلکار سے غلطی نہیں ہوئی

ریاست کی برسر اقتدار بی جے پی حکومت نے ہائی کورٹ کو بتایا ہے کہ منگلورو میں شہریت قانون (سی اے اے ،این آر سی) مخالف ترمیمی قانون کے احتجاج کو روکنے کےلئےپولس اہلکاروں کی طرف سے کی گئی فائرنگ میں پولس   سے  کوئی غلطی نہیں ہوئی ہے۔

بھٹکل میں اجتماعی شادیوں کے رواج کو عام کرنے لبیک نوائط نے کی پہل؛ بھٹکل سمیت پاس پڑوس کے قریوں کے لوگوں سے بھی اجتماعی شادی پروگرام سے فائدہ اُٹھانے کی اپیل

  اسلام  میں شادی کو آسان بناکر پیش کرنے کے احکامات موجود  ہیں اور سادہ طریقہ پر شادی  کرنے پر زور دیا گیا ہے، لیکن  آج شادی بیاہ  اتنی مہنگی  ہوگئی ہے کہ ایک عام  انسان یا مڈل کلاس  خاندان  کے لئے شادی بے حد مشکل ہوکر رہ گئی  ہے۔  کورونا  وباء اور اس کے بعد قریب دو سال تک ...