مینگلور: ہندتوا کے نام پر اقتدار پانے والی حکومت پورے دیش کو برباد کر سکتی ہے : ایچ جے وی کے بانی صدر رمیش شیٹی نے ظاہر کیا خدشہ

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 24th September 2021, 7:47 PM | ساحلی خبریں |

مینگلور  24/ ستمبر (ایس او نیوز) میسور میں ہوئے مندرانہدام کی مذمت میں ریاستی حکومت کے خلاف منعقدہ احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے ہندو جاگرن ویدیکے کے بانی صدر رمیش شیٹی تمیروڈی نے کہا کہ ہندوتوا کے نام پر اقتدار پر آنے والی مرکزی حکومت دیش کی املاک فروخت کرنے میں لگی ہوئی ہے اور ایسا لگتا ہے کہ آنے والے دنوں میں یہ لوگ پورے دیش کو برباد کرکے چھوڑیں گے ۔

کنڑا روزنامہ وارتھا بھارتی میں شائع رپورٹ کے مطابق  مینگلور کے قریب بیلتنگڈی میں     منی ودھان سودھا کے روبرو مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے رمیش شیٹی نے کہا کہ ہندوتوا کی بنیاد پر اقتدار حاصل کرنے والی بی جے پی حکومت ہندووں کے ہی مقدس مقامات کو نشانہ بنارہی ہے ۔  یہ سب دیکھتے ہوئے بھی اراکین اسمبلی اور اراکین پارلیمان نے چپکی سادھ رکھی ہے ۔ انہوں نے اس کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ آزاد ہندوستان کی تاریخ میں ایسی ذلیل حرکت نہیں ہوئی ہے ۔ مذہبی مقامات کو چاہے جو بھی منہدم کرے ، وہ دہشت گرد ہیں ۔ بی جے پی کے لئے ہندوتوا صرف اقتدار کی ضرورت ہے ۔ بی جے پی میں بدعنوان اور بدکردار افراد بھر گئے ہیں ۔ اور کمی پوری کرنے کے لئے باہر سے بھی منگوائے جا رہے ہیں ۔ اقتدار پر آنے کے دو سال کے اندر ہی کئی اراکین اسمبلی کروڑوں کے اثاثے بنا چکے ہیں ۔ 

    رمیش شیٹی نے سنسنی خیز انداز میں کہا کہ کئی اراکین اسمبلی اور اراکین پارلیمان کی سی ڈیز میرے پاس موجود ہیں ۔ جب ضروری محسوس ہوگا ، میں اسے ریلیز کردوں گا ۔      انہوں نے وزیر اعلیٰ بومئی کو ذہنی طور پر ایک غیر متوازن شخص قرار دیتے ہوئے آر ایس ایس سے پوچھا کہ کیا انہیں وزارت اعلیٰ کے لئے سنگھ پریوار کا کوئی لیڈر نہیں ملا ۔

    سابق وزیر اعلیٰ ڈی وی سدا نند گوڈا پر نشانہ سادھتے ہوئے رمیش شیٹی نے کہا کہ جب سوجنیا نامی لڑکی کی عصمت دری اور قتل کا معاملہ پیش آیا تھا تو اس وقت سدانند گوڈا وزیر اعلیٰ تھے ۔ اس وقت انہوں نے مقتولہ کا ساتھ دینے کے بجائے مجرموں کا ساتھ دیا تھا ۔ آج سداگونند گوڈا خود بے عزتی اور ذلت کا سامنا کر رہے ہیں اور یہ مقتول سوجنیا کی بد دعا کا اثر ہے ۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل کے اعلیٰ افسران کے خلاف ہتک ذات مقدمہ درج ہونے کا معاملہ : سرکاری ملازمین سنگھا کی کڑی مذمت

18اکتوبر کو بھٹکل میونسپالٹی کے دکانوں کی نیلامی میں شریک ہوئے بھٹکل اسسٹنٹ کمشنر، تحصیلدار اور چیف آفیسر کے خلاف بغیر کسی وجہ کے ، غیرقانونی طورپر ہتک ذات کا معاملہ درج کئےجانے کی کرناٹکا ملازمین سنگھ بھٹکل شاخ نے مذمت کی ہے۔

کاروار: طلبا اور روزگار وں کےلئے تعلقہ ، ضلعی ، ریاستی اور قومی سطح کا تقریری مقابلہ : 18سے 29سال کی عمر والے توجہ دیں؛ قومی سطح پر اول آنے پر دولاکھ روپیہ انعام

یوتھ اینڈ اسپورٹس وزارت کے تعاون سے نہرو یوا کیندر کی جانب سے تعلقہ ، ضلع، ریاستی اور قومی سطح پر ہندی اور انگریزی زبانوں میں  تقریری مقابلوں کا انعقاد کئے جانے نہرو یوا کیندر کے ذمہ داروں نے پریس ریلیز کے ذریعے جانکاری دی ہے۔

بھٹکل جماعت اسلامی ہند اور سدبھاؤنا منچ بھٹکل کے اشتراک سے’حضرت محمد  ﷺ مثالی رہنما‘ کے عنوان پر پروگرام کا انعقاد

آخری نبی حضرت محمد ﷺ کی تعلیمات کو ریاستی عوام کے سامنے پیش کرنےکی غرض وغایت لے کر جماعت اسلامی ہند کرناٹکا کی طرف سے 17سے 26اکتوبر تک منائی جارہی ’سیرتؐ مہم ‘ کی مناسبت سے بھٹکل کے دعوت سنٹر میں 26اکتوبر بروزمنگل کو  منعقدہ سیرت پروگرام میں مقررین نے اپنے خیالات کا اظہار ...

بھٹکل ہیبلے گرام پنچایت انتظامیہ پر رشوت خوری کا الزام : خصوصی میٹنگ میں الزام ثابت کرنے کا مطالبہ

تعلقہ کے ہیبلے گرام پنچایت کے چند ممبران نے گرام پنچایت انتظامیہ  پر رشوت خوری کا الزام عائد کئےجانےکو لےکر ہیبلے پنچایت ہال میں پنچایت ممبران کی  خصوصی میٹنگ منعقد ہوئی ۔