رسوئی گیس کی اضافی شرح کے خلاف ’مہیلا کانگریس‘ کا مظاہرہ

Source: S.O. News Service | Published on 14th February 2020, 12:52 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،13/فروری(ایس او نیوز/ایجنسی) رسوئی گیس کی قیمتوں میں ہوئے اضافے کے خلاف مہیلا کانگریس کی کارکنان نے جمعرات کو شاستری بھون کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا اور کہا کہ جب بین الاقوامی بازار میں ایندھن کی قیمتیں گھٹ رہی ہیں تو حکومت شہریوں سے اس کے لیے زیادہ رقم کیوں وصول رہی ہے؟

مہیلا کانگریس کی صدر سشمتا دیو کی قیادت میں تنظیم کی سینکڑوں کارکنان یہاں شاستری بھون کے سامنے جلوس کی شکل میں پہنچی اور ہاتھوں میں ایل پی جی کی قیمتوں میں ہوئے اضافے کے خلاف نعرے لکھے بینر اور تختیاں لے کر نعرے لگاتے ہوئے مظاہرہ کرتی رہیں۔

مظاہرین ہاتھوں میں سلنڈر والے پوسٹر لیے ہوئے تھے جن میں دہلی، ممبئی، چنئی اور کولکاتا میں گیس سلنڈر میں اضافی شرح کے ساتھ سلنڈر کی قیمت تحریر تھی۔ مظاہرین حکومت سے من مانی نہ کرنے، رسوئی گیس سلنڈر کی قیمت میں کمی اور عوام کو حساب دینے کا مطالبہ کر رہی تھی۔ بعد میں خاتون مظاہرین سڑک پر بیٹھ کر دھرنا دینے لگیں۔

دہلی کے علاوہ ملک کے دیگر شہروں میں بھی مہیلا کانگریس کی قیادت میں مہنگائی کے خلاف احتجاج کیا گیا۔ لوگوں کا کہنا ہے کہ انہیں بڑھی ہوئی قیمتوں کی معلومات نہیں تھی اور جب بدھ کے روز وہ وہ سلنڈر لینے گئے تو اچانک بتایا گیا کہ ایل پی جی کی قیمت میں اضافہ ہو گیا ہے۔

واضح رہے کہ غیر سبسڈی والے ایل پی جی سلنڈر کی قیمتوں میں تقریباً 150 روپے کا اضافہ کیا گیا ہے، جسے لے کر عام لوگوں میں سخت ناراضگی تھی۔ کانگریس کے ترجمان آر پی سنگھ نے ایل پی جی کے داموں میں ہوئے اضافہ پر کہا کہ جب مرکز میں یو پی اے حکومت اقتدار میں تھی تو بی جے پی مہنگائی کو ڈائن قرار دیتی تھی لیکن اب بی جے پی نے مہنگائی کو اپنی ’محبوبہ‘ بنا لیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

متھرا : کرشن مندر کے لئے مسجد کے انہدام کا اعلان کرنے والے دیو مراری کے خلاف ایف آئی آر

 ایودھیا میں بابری مسجد کو شہید کرنے کے بعد فیصلہ مندر کے حق میں آنے کے بعد سے ایک طبقہ کے حوصلہ بلند نظر آ رہے ہیں اور اب ان کی نظریں ملک کی دیگر ان مساجد پر مرکوز ہیں جہاں تنازعہ کھڑا ہوتا رہا ہے۔

یوپی میں نظم و نسق کی حالت کافی خراب: مایاوتی

بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی) سپریمو مایاوتی نے اترپردیش میں نظم ونسق پر سوالیہ نشان کھڑے کرتے ہوئے کہا کہ ریاست میں جرائم پر کنٹرول اور نظم ونسق کے معاملے میں سابقہ سماج وادی پارٹی(ایس پی) اور برسراقتدار بی جے پی میں اب کوئی فرق نہیں رہ گیا ہے۔

دبئی میں ایک سواری نے ایک شخص کو رونڈ ڈالا؛ مہلوک ایشیائی شخص کی شناخت ہنوز نہیں ہوپائی؛ پولس نے عوام سے کی تعاون کی اپیل

یہاں ایک سواری کی ٹکر میں ایک شخص ہلاک ہوگیا مگر اُس شخص کی شناخت ابھی تک معمہ بنی ہوئی ہے اور یہ کون ہے، کس ملک یا کس  شہر سے ہے کچھ پتہ نہیں چل پایا ہے۔ پولس کا کہنا ہے کہ یہ ایشیاء کے  کسی ملک سے تعلق رکھتا ہے۔