سابق گورنر عزیز قریشی نے کہا، جوانوں کی لاشوں پر راج تلک کرنا چاہتے ہیں مودی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 15th April 2019, 10:40 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی، 15 اپریل(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) سابق گورنر عزیز قریشی نے پلوامہ دہشت گردانہ حملے کو سوچی سمجھی سازش قرار دیتے ہوئے وزیر اعظم نریندر مودی کو اس کے لئے ذمہ دار بتایا ہے۔عزیز قریشی نے الزام لگایا ہے کہ پی ایم نریندر مودی نے سازش کے ساتھ پلوامہ حملہ کرایا ہے، تاکہ انہیں دوبارہ اقتدار میں آنے کا موقع مل سکے۔اتراکھنڈ، اترپردیش اور میزورم کے سابق گورنر عزیز قریشی نے مدھیہ پردیش سیہور میں یہ بیان دیا۔انہوں نے یہاں 14 فروری جموں کشمیر کے پلوامہ میں سی آر پی ایف جوانوں کے قافلے پر ہوئے خودکش بم دھماکے کو ایک گہری سازش قرار دیا۔اتنا ہی نہیں عزیز قریشی نے اس سازش کے لئے براہ راست پر وزیر اعظم نریندر مودی کو ذمہ دار ٹھہرایا۔عزیز قریشی نے کہاکہ پلوامہ آنے منصوبہ کر کے کروایا ہے تاکہ پھر موقع مل سکے، لیکن عوام سمجھتی ہے،اگر مودی چاہیں کہ 42 جوانوں کوقتل کرکے، ان چتاؤں کی راکھ سے اپنا راج تلک کر لیں گے تو عوام ایسا نہیں کرنے دے گی،تاہم اس سے پہلے پلوامہ حملے کے لئے سیاسی جماعتوں کی جانب سے براہ راست پی ایم مودی کی جانب انگلی اٹھتی رہی ہیں، لیکن ایک سابق گورنر کا وزیر اعظم پر کیا گیا یہ بیان کافی سنگین ہے۔پلوامہ حملے کے بعد سے ہی اس کی ٹائمنگ کو لے کر سوال اٹھتے رہے ہیں۔مغربی بنگال کی وزیر اعلی ممتا بنرجی بھی حکمراں جماعت پر جوانوں کے خون پر سیاست کرنے کا الزام لگا چکی ہیں،ان کے علاوہ بھی کئی لیڈر پلوامہ حملے کو لے کر موجودہ حکومت کی نیت پر سوال کھڑے کرتے ہیں،اب سابق گورنر نے بھی صاف کہہ دیا ہے کہ اقتدار میں واپسی کے لئے پی ایم مودی نے پلوامہ حملے کی سازش رچی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

پاکستان جب تک دہشت گردی کے خلاف مؤثرکاروائی نہیں کرتا، ایئر اسٹرائک جیسے قدم اٹھاتے رہیں گے: وزارت دفاع

وزارت دفاع نے دو ٹوک کہا ہے کہ جب تک پاکستان دہشت گرد گروپوں کے خلاف قابل اعتماد کارروائی نہیں کرتا، تب تک ہندوستان اپنی قومی سلامتی کو یقینی بنانے کے لئے سخت اقدامات اٹھاتا رہے گا۔