کنداپور:تین طلاق کی متاثرہ خاتون نے شوہر اور اس کے گھر والوں کے خلاف پولیس میں درج کی شکایت، شوہر گرفتار

Source: S.O. News Service | Published on 9th September 2019, 1:11 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

منگلورو9/ستمبر (ایس او نیوز) طلاق ثلاثہ یا ایک ہی وقت میں تین طلاق کہتے ہوئے ازدواجی رشتہ ختم کرنے پر پابندی لگاتے ہوئے مرکزی حکومت نے جو نیا قانون بنایا ہے، اس کے تحت اڈپی ضلع کا سب سے پہلا کیس کنداپور ٹاؤن پولیس اسٹیشن میں درج کیا گیا ہے۔

بتایاجاتا ہے کہ الفیہ اختر(29سال) نامی خاتون نے ہیری اڈکا کے رہنے والے اپنے شوہر حنیف سید (32سال)، اس کے والدین عباس سید، والدہ زیتون اور اس کی بہن عائشہ کے خلاف یہ کہتے ہوئے کیس درج کروایا ہے کہ تین طلاق کے ذریعے غیر قانونی طور پر اس کا ازدواجی رشتہ توڑا گیا ہے۔ شکایت پر کاروائی کرتے ہوئے پولس نے شوہر کو گرفتار کرلیا ہے۔

خیال رہے کہ حال ہی میں مرکز ی حکومت نے ایک ترمیمی بل کے ذریعے تین طلاق کے ذریعے بیوی کو چھوڑدینے کو قابل تعزیر جرم قرار دیا ہے۔

 الفیہ نے پولیس کے پاس جو شکایت درج کی ہے اس میں کہا گیا ہے کہ اس کی شادی موڈو گوپاڈی گاؤں کے رہنے والے حنیف سید کے ساتھ اسی سال 4جولائی کو ہوئی تھی۔اس وقت اس کی سسرال والوں نے جہیز میں پانچ لاکھ روپے طلب کیے تھے۔ لیکن اس کے والدین صرف 2لاکھ روپے ہی ادا کرسکے۔ ”اس وجہ سے میرے شوہر اور اس کے گھروالوں نے مجھے مسلسل ہراسا ں کرنا شروع کیا۔اور پھر 15اگست کے دن میرے شوہر نے تین بار طلاق کہتے ہوئے مجھے اپنی زندگی سے الگ کرنے کا اعلان کیا ہے۔“

 الفیہ کی شکایت پر کارروائی کرتے ہوئے کنداپور پولیس نے طلاق،جہیز ہراسانی اور گھریلو ہراسانی سے متعلقہ قوانین کے تحت حنیف سید اور اس کے گھر والوں کے خلاف کیس درج کرلیا  اور حنیف سید کو گرفتار کرلیا۔

ایک نظر اس پر بھی

کاروارکے بیت کول میں آدھی رات کو ٹرک ڈرائیوروں پر حملہ۔ نقدی اور موبائل لوٹنے کے ساتھ لاریوں کو پہنچایاگیا نقصان۔پولیس اسٹیشن سے قریب ہی پیش آئی واردات

بیت کول ماہی گیری بندر کے علاقے میں پولیس اسٹیشن سے چار قدم کے فاصلے پر جمعرات کی شب میں شرپسندوں کے ذریعے بیرونی ریاستوں سے تعلق رکھنے والے ٹرک ڈرائیوروں کو لوٹنے اور گاڑیوں کو نقصان پہنچانے کی واردات پیش آئی ہے۔

افسران کی مبینہ ملی بھگت سے بھٹکل میں حد سے بڑھ گئی پتھروں کے لئے غیر قانونی کھدائی۔ منڈلّی کی پہاڑی کو نابود کرنے کی ہورہی ہے تیاری

بھٹکل میں قانون کی پاسدار ی کرنے والے کئی اسسٹنٹ کمشنرز اور اور کئی تحصیلدار تعینات کیے جاچکے ہیں، لیکن یہاں پر چل رہے ریت اور پتھروں کے غیر قانونی کاروبار پر کسی نے بھی پوری طرح روک لگائی ہو، ایسا دیکھنے میں نہیں آیا۔ بلکہ عوام کا ااحساس تو یہ ہے کہ کچھ افسران کی ملی بھگت سے ہی ...

شیرور میں کار اور لاری کی ٹکر۔کار ڈرائیور ہلاک۔ ایک مسافر شدید زخمی

پڑوسی علاقہ شیرور میں    نیشنل ہائی وے پرواقع سنکد گنڈی پُل کے قریب جمعرات   شام کو پیش آئے کار اور لاری کے تصادم میں کار ڈرائیور موقع پر ہی ہلاک ہوگیا ، جبکہ ایک مسافر شدید زخمی ہوگیا  جسے علاج کے لئے قریبی  اسپتال میں منتقل کیا گیا ہے۔

این آر سی دستاویزات کی تیاری میں اقلیتوں کی رہنمائی کرنے روشن بیگ نے اقلیتی کمیشن کے نئے چیرمین سے کیا مطالبہ

مرکزی حکومت کی ہدایت پر ریاستی حکومت کی طرف سے کرناٹک میں این آر سی نافذ کرنے کے لئے جو تیاری کی جا رہی ہے اس کے پیش نظر ریاستی اقلیتی کمیشن کی طرف سے اقلیتوں بالخصوص مسلمانوں کودستاویزات کی تکمیل میں آسانی فراہم کرنے کے لئے فوری طور پر قدم اٹھانے چاہئے۔ کمیشن کی طرف سے مساجد ...

تیراکی میں یونیورسٹی بلیو کا خطاب جیتنے والے بھٹکل انجمن کالج کے محمد اشفاق اب کریں گے آل انڈیا ٹورنامنٹ میں کرناٹکا یونیورسٹی دھارواڑ کی نمائندگی

انجمن آرٹس سائنس  کامرس  کالج اور پی جی سینٹر  بھٹکل کے ایک طالب العلم   محمد اشفاق ابن محمد  اسلم  تیراکی میں  بہترین مظاہرہ پیش کرتے ہوئے  کرناٹکا یونیورسٹی  بلیو   کا خطاب حاصل کرنے میں کامیاب ہوگئے ہیں  ۔کالج کے فزیکل ڈائرکٹر نے   بتایا کہ  تیراکی میں یونیورسٹی ...

پانچ مہینوں بعد  آئی پی ایس  اناملئی کا استعفیٰ منظور : کیا وہ تمل ناڈو کے سنگھ پریوار میں شامل ہوں گے ؟

آئی پی ایس عہدے سے پانچ مہینے پہلے  استعفیٰ دئیے اناملئی کا اب  جا کر مرکزی حکومت نے منظور کیا ہے۔ مستقبل میں اناملئی سنگھ پریوار کے کسی ایک ذیلی ادارے سے جڑ کر زندگی کا دوسرا دور شروع کرنے کے امکانات ظاہر کئے گئے ہیں۔

بابری مسجد مقدمہ میں شامل مسلم پارٹیوں کی طرف سے سپریم کورٹ آف انڈیا میں دیا گیا ایک بیان؛ مسلم پرسنل لاء بورڈ نے جاری کی پریس ریلیز

بابری مسجد کے تعلق سے  آل انڈیا مسلم  پرسنل لاء بورڈ کی بابری مسجد کے کو۔کنوینر   ڈاکٹر قاسم رسول الیاس نے پریس ریلیز جاری کرتے ہوئے مندرجہ ذیل نکات پیش کئے  ہیں :