گجرات کے وزیراعلیٰ کی طرح میں نے قتل عام نہیں کیا: وزیراعلیٰ کمار سوامی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 15th April 2019, 11:25 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،15؍اپریل (ایس او  نیوز) وزیر اعظم نریندرمودی پر سنٹیج پس منظر سے ہی آئے ہو ئے ہیں ۔ یہی وجہ ہے کہ وہ جب بھی ریاست آتے ہیں، پرسنٹیج کی بات کرتے ہیں، اس حدود سے باہر آکر وہ کبھی نہیں بولتے ۔ نریندر مودی کے 20پرسنٹیج طنزپر رد عمل ظاہر کرتے ہوئے وزیراعلیٰ کمار سوامی نے مذکورہ باتیں کہی ہیں۔ دستور کاز ڈاکٹربی آر امبیڈکر کے جنم دن کی مناسبت سے ودھان سودھا کے سامنے امبیڈکر کے مجسمہ پر پھول ہار ڈالنے کے بعدانہوں نے کہا کہ وزیر اعظم کا پس منظر دیکھتے ہیں تو پتہ چلتا ہے کہ وہ کمیشن پر سنٹیج سے آئے ہیں۔ اس لئے ہمیشہ ان کو اسی کی فکر رہتی ہے،ریاستی حکومت کے بارے میں کہنے کیلئے ان کے پاس کچھ بھی نہیں ہے ۔ اس لئے وہ جھوٹا الزام لگا کر چلے جاتے ہیں۔ مودی کی سطح پر اترکر میں بات نہیں کرتا ۔ انکم ٹیکس سمیت کسی بھی تحقیق کیلئے میں نے کبھی خوف نہیں کھایا ۔ کیونکہ میں نے وزیر اعلیٰ کے عہدہ پر رہتے ہوئے گودھرا جیسے فسادات بھڑ کا کر معصوموں کی جانیں تلف کرنے کاکوئی کام نہیں کیا۔ اس لئے میں مودی کی سطح پر اتر نہیں سکتا۔ آئی ٹی افسروں کی چھاپہ مار کارروائی کے خلاف ہم نے احتجاج کیا ۔ اس پرمودی طنز کرتے ہیں۔ کیا آئی ٹی محکمہ جانبداری سے کام کررہا ہے؟ اس پر توجہ دینے کی ضرورت ہے ۔ سابق وزیر اعظم ایچ ڈی دیوے گوڈا کسی قریہ میں کسی شخص کے بلانے پر اس کے گھر کھانے کیلئے جاتے ہیں تو تیسرے دن آئی ٹی افسر اس غریب کے گھر پر چھاپہ مار دیتے ہیں۔ کیا مرکز میں انسانیت رکھنے والی حکومت ہے؟ میں انکم ٹیکس کے چھاپوں سے ڈرتا نہیں ۔ کسی بھی تحقیق سے میں خوف نہیں کھاتا ۔ وزیراعظم نریندر مودی نے گجرات کے وزیراعلیٰ رہتے ہوئے گودھرا قتل عام کے معاملہ میں پولیس تحقیقات کاسامنا کیاتھا ۔ وزیراعلیٰ کے طو رپر انہوں نے معصوموں کا قتل عام کیا ہے ۔ ان سے مجھے سبق لینے کی ضرورت نہیں ہے ۔ ہماری حکومت کوریموٹ کنٹرول کہنے والے مودی کس ریموٹ کنٹرول میں ہیں بتانا ہوگا۔

ایک نظر اس پر بھی

ملک میں مجبور پی ایم چاہتی ہے کانگریس، کرناٹک میں ریلیوں میں پھرپاکستان کے حوالے سے مودی کاخطاب

معلق لوک سبھاکے تجزیئے کے درمیان اب بی جے پی نے واضح اکثریت مانگنی شروع کردی ہے ۔وزیر اعظم نریندر مودی نے جمعرات کو دعوی کیا کہ کانگریس ملک میں ایک مجبور وزیر اعظم بنوانا چاہتی ہے۔انہوں نے لوگوں سے مرکز میں قومی سلامتی پر زور دینے والی مضبوط حکومت بنوانے کی اپیل بھی کی۔شمالی ...

لوک سبھا انتخابات کا دوسرا مرحلہ ؛کشمیر سے کنیا کماری تک ہورہی ہے پولنگ؛ شام تک 61 فیصد پولنگ؛ جموں و کشمیر میں سب سے کم ووٹنگ

  لوک سبھا انتخاب کے دوسرے مرحلے کے لیے صبح 7 بجے سے ووٹنگ شروع ہو گئی ہے۔ دوسرے مرحلے میں ملک کی 12 ریاستوں کی 95 لوک سبھا سیٹوں پر ووٹنگ ہو رہی ہے، جس کے لئے 1.78 لاکھ پولنگ بوتھ بنائے گئے ہیں۔ اس میں 1629 امیدوار اپنی قسمت آزمائی کر رہے ہیں۔ دوسرے مرحلے کے دوران اتر پردیش کی 8، مغربی ...