کورونامتاثرین کے ساتھ ناانصافی ناقابل برداشت، خاطیوں کوسزادینے حقوق انسانی کمیشن آگے آئے:ایچ کے پاٹل

Source: S.O. News Service | Published on 11th July 2020, 10:59 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،11؍جولائی (ایس او نیوز) کانگریس کے سینئرقائداورسابق ریاستی وزیرایچ کے پاٹل نے آج حکومت پر سخت برہمی ظاہرکرتے ہوئے کہا کہ کوروناوائرس کے پھیلاؤ سے عوام بری طرح متاثرہوئے ہیں،نہایت مشکل حالات سے دوچارعوام کے لیے مناسب علاج ومعالجہ کا نظم نہیں،یہاں تک کہ اچھے اسپتال دستیاب نہیں۔مزیددکھ کی بات یہ ہے کہ کوروناوائرس سے فوت ہونے والوں کی آخری رسومات صحیح ڈھنگ سے نہیں ہوپارہی ہیں۔کووڈسے فوت ہونے والوں کے ساتھ غیرانسانی سلوک اورتوہین آمیزطریقہ سے آخری رسومات اداکی جانے کی شکایات ہیں۔

انہوں نے کہاکہ یہ حقوق انسانی کی صریح خلاف ورزی ہے۔اس لیے حقوق انسانی کمیشن سے میری درخواست ہے کہ وہ اس معاملہ میں آگے آئیں اورکووڈمریضوں اورفوت شدگان سے ہورہی ناانصافی کے خلاف آوازبلندکریں۔ جوبھی حقوق انسانی کی خلاف ورزی کے مرتکب ہوں ان پرسخت کارروائی کا اقدام کریں۔ حقوق انسانی کمیشن کایہ فریضہ ہے کہ وہ جانی نقصان سے دوچارہونے والوں کے لیے معاوضہ فراہمی کویقینی بنائیں۔لیکن نہایت افسو س کا مقام ہے کہ حقوق انسانی کمیشن اپنی ذمہ داری کوبھول کرخاموش تماشائی بناہواہے۔جبکہ اس موقع پر انتہائی تندی اورچوکسی سے حقوق انسانی کی پامالی کوروکنے کے لیے آگے آناچاہئے تھا۔

ایک نظر اس پر بھی

کیرالہ میں پیش آیا چٹان کھسکنے کا خطرناک حادثہ۔ 15ہلاک اور60سے زائدافراد ہوگئے لاپتہ۔ ملبے میں دب گئیں 30جیپ گاڑیاں 

کیرالہ کے مشہور تفریحی مقام ’مونار‘ سے قریب ’ایڈوکی‘ میں چٹان کھسکنے کا ایک خطرناک حادثہ پیش آیا جس میں تاحال 15افراد ہلاک ہونے اور 60سے زیادہ لوگ لاپتہ ہونے کے علاوہ 30جیپ گاڑیاں چٹان کے ملبے میں دب کر رہ جانے کی خبر ہے۔

کورونا کی وبا اور دعوت رجوع الی اللہ، اس عنوان کے تحت جماعت اسلامی ہند، کرناٹک کی 15 روزہ مہم کا آغاز

  کورونا کی وبا سے اس وقت پوری انسانیت پریشان ہے۔ اس مرض کا مقابلہ کرنے کیلئے حفاظتی اور احتیاطی تدابیر اختیار کرتے ہوئے لوگ اپنے رب سے رجوع ہوں۔ کورونا جیسی بیماریوں پر قابو پانے کیلئے طبی علاج کے ساتھ روحانی اور اخلاقی طاقت کا ہونا بھی ضروری ہے۔

کرناٹک سے 40 امیدوار سیول سرویسز امتحان میں کامیاب

کرناٹک سے زائداز 40 امیدواروں نے 2019 کے یونین پبلک سرویس کمیشن (یو پی ایس سی ) سیول سرویس امتحان میں کامیابی حاصل کی اور اب آئی اے ایس ، آئی ایف ایس اور آئی پی ایس اور دیگر میں ملازمت حاصل کریں گے۔