شاہ سلمان کے دورِ حکومت میں سعودی عرب میں تاریخی ڈھا نچہ جاتی اصلاحات

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 3rd June 2018, 11:32 AM | خلیجی خبریں |

ریاض،2جون ( ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا )شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے 2015میں شاہ عبداللہ کے انتقال کے بعد عنانِ اقتدار سنبھالی تھی۔ان کے زیر قیادت حکومت نے تب سے اب تک بڑے پیمانے پر مرحلہ وار ڈھانچا جاتی اصلاحات پر عمل درآمد کیا ہے۔اس کا مقصد سعودی عرب میں خواہشات پر مبنی ترقیاتی اہداف کا حصول ہے۔شاہ سلمان نے ہفتے کے روز محنت ، اسلامی امور اوراطلاعات و ثقافت کے ورزا کو تبدیل کردیا ہے۔انھوں نے ایک شاہی فرمان کے ذریعے ثقافت کی اطلاعات سے الگ ایک نئی وزارت قائم کردی ہے۔انھوں نے مقدس شہر مکہ کے لیے الگ سے ایک شاہی کمیشن اور ماحول کے تحفظ کے لیے ایک کمیشن کے قیام کا اعلان کیا ہے اور ساحلی شہر جدہ میں واقع تاریخی جگہوں کے تحفظ کے لیے ایک اتھارٹی کے قیام کی منظوری دی ہے۔شاہی فرامین کے تحت داخلہ ، ٹیلی مواصلات ، ٹرانسپورٹ ،توانائی ، صنعت اور معدنیات کی و زارتوں میں متعدد نائبین کا تقرر کیا گیا ہے۔شاہ سلمان نے شاہی کمیشن برائے ینبوع اور جبیل اور شاہ عبداللہ سٹی برائے جوہری اور قابل تجدید توانائی کے نئے سربراہوں کا بھی تقر ر کیا ہے۔تجزیہ نگاروں نے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ سعودی عرب میں انتظامی اصلاحات کا مقصد ریاستی اداروں کو افسر شاہی کی سرخ فیتے کی روایتی پابندیوں اور رکاوٹو ں سے آزاد کرنا ہے کیونکہ ان کی وجہ سے انتظامیہ کی کارکردگی اور فعالیت متاثر ہو رہی ہے۔ان کے بہ قول ڈھانچا جاتی اصلاحات دراصل موثر کارکردگی کے مقصد کے حصول کے لیے ایک مسلسل عمل ہیں۔مختلف اعلیٰ عہدوں پر نئے تقرر اور وزراء سے یہ بھی ظاہر ہوتا ہے کہ مختلف سرکاری محکموں میں اب نجی شعبے کو بھی شریک کار کیا جارہا ہے۔جیسا کہ نجی شعبے سے تعلق رکھنے والی کاروباری شخصیت احمد بن سلیمان الراجحی کو محنت اور سماجی ترقی کی وزرات کا قلم دان سونپا گیا ہے۔انھیں علی بن ناصر الغفیص کی جگہ یہ ذمے داری سونپی گئی ہے۔حکومتی ذرائع کے مطابق سعودی عرب کی 90 فی صد وزارتوں میں انڈر سیکریٹریز تعینات نہیں۔ نئی اصلاحات سے ان وزارتو ں میں اب اعلیٰ تعلیمی اہلیت اور قابلیت کے حامل افراد کے بہ طور انڈر سیکریٹری تقرر کی راہ ہموار ہوگی۔

ایک نظر اس پر بھی

جدہ میں بھٹکل کمیونٹی کی جانب سے "پیغام انسانیت اور دورِحاضر میں ہماری ذمہ داریاں" کے موضوع پر خوبصورت پروگرام

معروف عالم دین ، داعی اور کل ہند تحریک پیام انسانیت کے جنرل سکریٹری  مولانا بلال حسنی ندوی کی عمرہ کے لئے مکہ مکرمہ کی آمد پر  پیر  17فروری کو بھٹکل کمیونٹی جدہ کی جانب سے جدہ میں "پیغام انسانیت اور دورِحاضر میں ہماری ذمہ داریاں" کے موضوع پر ایک پروگرام منعقد کیا گیا جس ...

سعودی عرب: ٹرانسپورٹ سے متعلق جُرمانوں کی نئی فہرست میں 221 خلاف ورزیوں کا تعین

سعودی عرب میں ٹریفک کے نظام کی بہتری کے لیے نئے اقدامات کا سلسلہ جاری ہے۔ اس حوالے سے تازہ ترین پیش رفت میں ٹرانسپورٹ اور بسوں کو کرائے پر دیے جانے کی سرگرمیوں سے متعلق 221 خلاف ورزیوں کا تعین کیا گیا ہے۔ ٹریفک کے نظام کے تحت ان میں سے بعض خلاف ورزیوں پر جرمانے کی رقم 5 ہزار ریال تک ...

 کیا نئے قطری وزیراعظم بدعنوانی کے کیس میں ماخوذ ہیں؟

قطر کے نئے وزیراعظم شیخ خالد بن خلیفہ آل ثانی کامبیّنہ طور پر ملک میں کھیلوں کے عالمی مقابلوں کے انعقاد کے لیے بدعنوانی کی ایک ڈیل سے تعلق رہا ہے۔شیخ خالد قطر کے شاہی خاندان کے رکن ہیں۔وہ ملک کے وزیر داخلہ بھی رہ چکے ہیں۔فرانسیسی آن لائن تحقیقاتی جریدے میڈیا پارٹ اور برطانوی ...

سعودی وزارت ثقافت کی جانب سے’نیشنل تھیٹر پروجیکٹ‘کا آغاز

سعودی عرب میں وزارت ثقافت کے زیر انتظام ’نیشنل تھیٹر پروجیکٹ‘ کا آغاز ہو گیا ہے۔ پروجیکٹ کے آغاز کا اعلان منگل کی شام درالحکومت ریاض کے ’کنگ فہد کلچرل سینٹر‘ میں وزیر ثقافت شہزادہ بدر بن عبداللہ بن فرحان کی سرپرستی میں ہوا۔ اس موقع پر نامور فن کاروں، دانش وروں اور سعودی عرب ...