ملیکارجن کھرگے کو بہت پہلے ہی وزیراعلیٰ بن جانا چاہئے تھا: کمار سوامی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 16th May 2019, 2:28 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،16/مئی(ایس او نیوز) وزیر اعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی نے کہا ہے کہ سینئر کانگریس رہنما ملیکارجن کھرگے کو کرناٹک کا وزیراعلیٰ بہت پہلے ہی بنادیناچاہئے تھا۔ وزیر اعلیٰ کا عہدہ دینے کے معاملے میں ماضی میں ان کے ساتھ ناانصافی ہوئی ہے۔ کمار سوامی کا یہ بیان بعض کانگریس اراکین اسمبلی کی طرف سے سدرامیا کو دوبارہ وزیر اعلیٰ بنانے کے لئے کئے جارہے مطالبات کے پیش نظر اہمیت کا حامل ہوگیا ہے۔ وزیر اعلیٰ نے آج کلبرگی میں ایک جلسہئ عام سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ وہ واضح کردینا چاہتے ہیں کہ ملیکارجن کھرگے نے جو کام کیا ہے اس کا صحیح طریقے سے اعتراف نہیں کیا گیا ہے۔ ریاست میں مخلوط حکومت کے استحکام کو لے کر سابق وزیراعلیٰ یڈیورپا کی طرف سے دئے گئے بیان پر نکتہ چینی کرتے ہوئے کمار سوامی نے دعویٰ کیا کہ لوک سبھا انتخابات کے نتائج کے بعد ان کی حکومت اور بھی مضبوط ہوجائے گی، وزیراعلیٰ نے کہاکہ ریاست میں سدرامیا اور ملیکارجن کھرگے جسے قائدین کی رہنمائی میں ان کی حکومت اپنے پانچ سال مکمل کرے گی۔ وزیر اعلیٰ نے کہاکہ اس حکومت کو گرانے کے لئے بی جے پی ہر موقع پر ایک نئی تاریخ کا انتخاب کرتی ہے لیکن اگلے چار سال کے دوران بھی وہ تاریخ طے کرتی رہے گی لیکن اس حکومت کا کچھ بگاڑ نہیں پائے گی۔ 

ایک نظر اس پر بھی

آئی ایم اے کیس کی ایس آئی ٹی جانچ تقریباً مکمل، 9ستمبر کو چارج شیٹ ممکن

کروڑوں روپے کے آئی ایم اے فراڈ کیس کی جانچ میں لگی ریاستی پولیس کی خصوصی تحقیقاتی ٹیم(ایس آئی ٹی) اس معاملے میں 9ستمبر کو چارج شیٹ دائر کرنے کی تیاری میں لگی ہے تو دوسری طرف اس کیس کی جانچ ابھی ابھی اپنے ماتحت لینے والی مرکزی تحقیقاتی ایجنسی سی بی آئی کی طرف سے اس کیس میں ایک سابق ...

ایڈی یورپا کو پارٹی ہائی کمان کی تنبیہ۔ وزارتی قلمدان تقسیم کرو یا پھر اسمبلی تحلیل کرو

عتبر ذرائع سے ملنے والی خبر کے مطابق بی جے پی ہائی کمان نے وزیراعلیٰ کرناٹکا ایڈی یورپا کو تنبیہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ وزارتی قملدانوں سے متعلق الجھن اور وزارت سے محروم اراکین اسمبلی کے خلفشار کو جلد سے جلد دور کرلیں ورنہ پھر اسمبلی کو تحلیل کرتے ہوئے از سرِ نو انتخابات کا سامنا ...

اے پی سی آر نے داخل کی انسداددہشت گردی قانون میں ترمیم کے خلاف سپریم کورٹ میں اپیل

مرکزی حکومت نے انسداد دہشت گردی قانون یو اے پی اے میں جو حالیہ ترمیم کی ہے اور کسی بھی فرد کو محض شبہات کی بنیاد پر دہشت گرد قرار دینے کے لئے تحقیقاتی ایجنسیوں کو جو کھلی چھوٹ دی ہے اسے چیلنج کرتے ہوئے ایسوسی ایشن فار  پروٹیکشن آف سوِل رائٹس (اے پی سی آر) نے سپریم کورٹ میں اپیل ...