ملیکارجن کھرگے کو بہت پہلے ہی وزیراعلیٰ بن جانا چاہئے تھا: کمار سوامی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 16th May 2019, 2:28 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،16/مئی(ایس او نیوز) وزیر اعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی نے کہا ہے کہ سینئر کانگریس رہنما ملیکارجن کھرگے کو کرناٹک کا وزیراعلیٰ بہت پہلے ہی بنادیناچاہئے تھا۔ وزیر اعلیٰ کا عہدہ دینے کے معاملے میں ماضی میں ان کے ساتھ ناانصافی ہوئی ہے۔ کمار سوامی کا یہ بیان بعض کانگریس اراکین اسمبلی کی طرف سے سدرامیا کو دوبارہ وزیر اعلیٰ بنانے کے لئے کئے جارہے مطالبات کے پیش نظر اہمیت کا حامل ہوگیا ہے۔ وزیر اعلیٰ نے آج کلبرگی میں ایک جلسہئ عام سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ وہ واضح کردینا چاہتے ہیں کہ ملیکارجن کھرگے نے جو کام کیا ہے اس کا صحیح طریقے سے اعتراف نہیں کیا گیا ہے۔ ریاست میں مخلوط حکومت کے استحکام کو لے کر سابق وزیراعلیٰ یڈیورپا کی طرف سے دئے گئے بیان پر نکتہ چینی کرتے ہوئے کمار سوامی نے دعویٰ کیا کہ لوک سبھا انتخابات کے نتائج کے بعد ان کی حکومت اور بھی مضبوط ہوجائے گی، وزیراعلیٰ نے کہاکہ ریاست میں سدرامیا اور ملیکارجن کھرگے جسے قائدین کی رہنمائی میں ان کی حکومت اپنے پانچ سال مکمل کرے گی۔ وزیر اعلیٰ نے کہاکہ اس حکومت کو گرانے کے لئے بی جے پی ہر موقع پر ایک نئی تاریخ کا انتخاب کرتی ہے لیکن اگلے چار سال کے دوران بھی وہ تاریخ طے کرتی رہے گی لیکن اس حکومت کا کچھ بگاڑ نہیں پائے گی۔ 

ایک نظر اس پر بھی

بنگلورو میں موسلادھار بارش سے ٹرافک جام موٹر گاڑیوں پر 25سے زائد درخت گرنے سے شدید نقصان

ہفتہ کی رات تیز ہواؤں کے ساتھ ہوئی موسلادھار بارش سے 25سے زائد درخت کئی گاڑیوں پر گرنے سے کافی نقصان پہنچاہے- ہفتہ کی شام 5بجے شروع ہوئی بارش 6:30بجے شہر کے اہم علاقوں میں کافی تیز ہواؤں کے ساتھ جاری رہی-

بنگلورو سنٹرل حلقہ: بی جے پی امیدوار پی سی موہن کو گاندھی نگر میں اکثریت

کانگریس کمیٹی کے صدر دنیش گنڈو راؤ کے اپنے حلقہ گاندھی نگر میں کانگریس کو اکثریت حاصل ہونے کی بجائے یہاں بی جے پی کو اکثریت ملی ہے- اس حلقہ میں بی جے پی امیدوار پی سی موہن کو 24,723 ووٹوں کی اکثریت حاصل ہوئی ہے-

خواب وخیال میں بھی نہیں تھا کہ لوک سبھا انتخابات کے نتائج کانگریس کے حق میں اتنے مایوس کن ہوں گے:دنیش گنڈو راؤ

لوک سبھا انتخابات میں کانگریس پارٹی کی شکست کی ذمہ داری میں اپنے سر لیتا ہوں۔ میرے خواب و خیال میں بھی نہیں تھا کہ ہم ریاست میں صرف ایک سیٹ پرکامیابی حاصل کریں گے۔