پی ایف آئی پر مودی حکومت کی یلغار اور سو سے زائد کارکنان کی گرفتاریوں کے بعد آج کیرالہ بند؛ احتجاج کے دوران توڑ پھوڑ کی وارداتیں؛ 70 بسوں کو نقصان؛ ہائی کورٹ نے لی ازخود نوٹس

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 23rd September 2022, 6:39 PM | ساحلی خبریں | ملکی خبریں |

کالی کٹ 23 ستمبر (ایس او نیوز/ایجنسیاں)  جمعرات علی الصباح  کیرالہ سمیت ملک کی 15 ریاستوں کے 93 مقامات پر  مودی حکومت کی پی ایف آئی پر  یلغار  اور  سو سے زائد لوگوں کی گرفتاریوں  کے بعد ایک طرف ملک کے  مختلف حصوں میں جمعرات کو ہی پی ایف آئی اور ایس ڈی پی آئی کارکنوں نے احتجاج کرتے ہوئے اپنی ناراضگی کا اظہار کیا ہے  وہیں آج جمعہ کو ریاست کیرالہ میں ہڑتال کا اعلان کرتے ہوئے دکانوں اور کاروباری اداروں کو بند رکھا گیا ہے۔

میڈیا میں آئی رپورٹوں کے مطابق  آج جمعہ کو ہڑتال کے دوران کیرالہ میں  کئی جگہوں پر پتھراو اور توڑ پھوڑ کی وارداتیں پیش آئی ہیں، تروننت پورم، کولّم، کالیکٹ، وائناڈ اور الاپوزا میں  پتھراو  اور توڑ پھوڑ کے بعد ہڑتال تشدد میں تبدیل ہونے  کی اطلاعا ت ہیں۔

رپورٹوں کے مطابق  مظاہروں کے پرتشدد ہونے کے بعد، کیرالہ ہائی کورٹ نے PFI کے رہنماؤں کے خلاف از خود نوٹس لیتے ہوئے  ان  کے خلاف   فوری کاروائی کرنے کا حکم دیا ہے۔بتایا گیا ہے کہ  پی ایف آئی نے   ریاست میں اچانک   ہڑتال کا اعلان کیا،  حالانکہ ہڑتال پر  عدالت نے پہلے  ہی پابندی عائد کررکھی ہے۔ عدالت نے کہا کہ جاری حملوں کے خلاف فوری کارروائی کی جائے۔ کہا گیا ہے کہ ہڑتال کرنا ہے تو پہلے پیشگی اطلاع دینی چاہئے ۔  بند کے خلاف معاملے کی سماعت کرتے ہوئے ہائی کورٹ نے کیرالہ پولیس کو ہدایت دی کہ وہ بند کی حمایت نہ کرنے والے شہریوں اور سرکاری املاک کے تحفظ کے لیے مناسب انتظامات کرے۔

میڈیا میں آئی رپوٹوں کو مانیں تو پاپولر فرنٹ آف انڈیا (PFI) کے خلاف ملک گیر چھاپوں اور گرفتاریوں کے بعد آج جمعہ کو کیرالہ بند کی کال دی  گئی تھی  جس کے دوران کیرالہ کے کئی شہروں میں توڑ پھوڑ اور ہنگامہ آرائی کی اطلاعات ملی  ہیں۔ کولّم میں دو  پولیس اہلکاروں  پر حملہ  کئے جانے کے ساتھ ساتھ  کنّور   میں آر ایس ایس کے  ایک دفتر پر پٹرول بم پھینکے جانے کی بھی  اطلاعات ہیں۔ اس دوران تمل ناڈو کے کوئمبتور میں   بی جے پی کے دفتر میں توڑ پھوڑ  کئے جانے کی  بھی اطلاع ملی ہے۔

خبر رساں ایجنسی اے این آئی نے خبر دی ہے کہ NIA کے چھاپوں کے خلاف پاپولر فرنٹ آف انڈیا کی طرف سے آج بلائے گئے ریاست  گیر سطح پر بند کی حمایت کرنے والے لوگوں نے مبینہ طور پر ایک آٹو رکشہ اور ایک کار کو نقصان پہنچایا، ساتھ ساتھ کیرالہ اسٹیٹ روڈ ٹرانسپورٹ کارپوریشن  (KSRTC) کی کئی بسوں  میں توڑ پھوڑ کرتے ہوئے نقصان پہنچایا۔ میڈیا رپورٹوں کی مانیں تو  قریب 70 بسوں کو نقصان پہنچایا گیا ہے جس کے نتیجے میں کے ایس آرٹی سی کو  قریب دیڑھ کروڑ روپیوں کا نقصان ہوا ہے۔اس کے علاوہ  آج ریاست میں بس سروس بند ہوجانے سے جو نقصان ہوا ہے، وہ پھر الگ ہے۔

رپورٹوں کے مطابق پی ایف آئی کے ریاستی جنرل سکریٹری اے عبدالستار نے جمعرات کو ایک بیان میں کہا تھا کہ پی ایف آئی لیڈران اور کارکنان کی گرفتاریوں کی مخالفت میں جمعہ کو  ہڑتال کی کال دی گئی ہے جو  صبح 6 بجے سے شام 6 بجے تک ہوگی۔

بتایا گیا ہے کہ پولیس نے کیرالہ بند کے پیش نظر ریاست میں سیکورٹی سخت کر دی تھی  اور امن و امان برقرار رکھنے کے لیے ضلعی پولیس سربراہان کو ہدایات جاری کر دی گئی تھی ۔ پولیس کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ قانون شکنی کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل: ایس پی کے تبادلے کی افواہوں کو ڈسٹرکٹ انچارج منسڑ نے دی مزید ہوا، کہا؛ افسران کے تبادلے کوئی نئی بات نہیں!

ایماندار افسر کے طورپر مشہور اترکنڑا ضلع ایس پی ڈاکٹر سمن پنیکر کے تبادلے کی افواہوں کو ہوا دیتےہوئے ضلع نگراں کار وزیر پجاری نے کہاکہ افسران کے تبادلے کوئی نئی بات تو نہیں ہے۔

بھٹکل: معاوضہ تقسیم میں تفریق پر رکن اسمبلی کا سخت اعتراض : وزیر شری نواس پجاری نے افسران کو کی فوری کارروائی کی تاکید

گذشتہ ماہ 2اگست کو برسی موسلا دھاربارش سےنقصان اٹھانے والےمتاثرین میں امداد تقسیم کےدوران تفریق کی گئی ہے اور غریبوں کو امداد فراہم کرنےمیں افسران پس و پیش کئے جانے پر رکن اسمبلی سنیل نائک نے سخت اعتراض جتایا ۔

ہلیال:  آوارہ کتوں کو پکڑنے کا معاملہ - چیف آفیسر کے خلاف کیس درج 

آوارہ کتوں کو پکڑ کر جنگل میں چھوڑنا ہلیال ٹی ایم سی کے چیف آفیسر پرشورام شیندے کو مہنگا پڑا کیوںکہ اس کارروائی کو ظالمانہ انداز میں انجام دئے جانے کا الزام لگاَتے ہوئے چیف آفیسر کے خلاف پولیس میں معاملہ درج کیا گیا ہے ۔

کہاں غائب ہو گئے نوٹ بندی کے بعد چھاپے گئے 9.21 لاکھ کروڑ روپے، آر بی آئی کے پاس بھی تفصیل موجود نہیں!

مرکز کی مودی حکومت نے بلیک منی پر قدغن لگانے کے مقصد سے 2016 میں نوٹ بندی ضرور کی، لیکن اس مقصد میں کامیابی قطعاً ملتی ہوئی نظر نہیں آ رہی ہے۔ اپوزیشن پارٹیوں نے نوٹ بندی کے وقت بھی مرکز کے اس فیصلے پر سوالیہ نشان لگایا تھا،

ہندوستان میں 10 سالوں کے دوران شرح پیدائش میں 20 فیصد کی گراوٹ، رپورٹ میں انکشاف

 پچھلے 10 سالوں میں ہندوستان میں عام زرخیزی کی شرح (جی ایف آر) میں 20 فیصد کی کمی درج کی گئی ہے۔ اس کا انکشاف حال ہی میں جاری کردہ سیمپل رجسٹریشن سسٹم (ایس آر ایس) ڈیٹا 2020 میں ہوا ہے۔ جی ایف آر سے مراد 15-49 سال کی عمر کے گروپ میں ایک سال میں فی 1000 خواتین پر پیدا ہونے والے بچوں کی تعداد ...

الیکشن کمیشن نے تین برسوں میں جموں و کشمیر کی 7 سیاسی جماعتوں کو رجسٹر کیا

الیکشن کمیشن آف انڈیا (ای سی آئی) نے گزشتہ تین برسوں کے دوران جموں و کشمیر کی7 سیاسی جماعتوں کو رجسٹر کیا ہے جن میں کچھ غیر معروف جماعتیں بھی شامل ہیں۔ ای سی آئی ریکارڈس کے مطابق کمیشن نے سال 2019 سے تمام ضروری لوازمات کی ادائیگی کے بعد جموں و کشمیر کی 7 سیاسی جماعتوں کو رجسٹر ...

بامبے ہائی کورٹ سے گوشت کے اشتہارات پر پابندی کی درخواست خارج

بامبے ہائی کورٹ نے ٹی وی اور اخبارات میں نان ویجیٹیرین کھانے کے اشتہارات پر پابندی لگانے کی درخواست خارج کر دی ہے، چیف جسٹس دیپانکر دتہ اور جسٹس مادھو جمدار نے پیر کو جین چیریٹیبل ٹرسٹ کی عرضی کو یہ کہتے ہوئے خارج کر دیا کہ عدالت صرف اس صورت میں مداخلت کر سکتی ہے جب شہریوں کے ...

پی ایف آئی پر پھر چھاپے، شاہین باغ میں دبش، جامعہ میں دفعہ 144 نافذ

نیشنل انویسٹی گیشن ایجنسی (این آئی اے) سے ملی لیڈ کی بنیاد پر، 8 ریاستوں کی پولیس نے آج یعنی منگل کو ملک بھر میں پاپولر فرنٹ آف انڈیا (پی ایف آئی) کے کئی مقامات پر چھاپے مارے۔ نیوز پورٹل ’آج تک‘ پر شائع خبر کے مطابق اسے دوسرے راؤنڈ کا چھاپہ بتایا جا رہا ہے۔