کیجریوال حکومت میں طلبا کی تعداد ہی نہیں گھٹی، دہلی گورنمنٹ اسکول کا ریزلٹ بھی خراب ہوا: کانگریس

Source: S.O. News Service | Published on 14th September 2021, 11:46 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،14؍ستمبر (ایس او نیوز؍ایجنسی) کانگریس جنرل سکریٹری اور سینئر پارٹی لیڈر اجے ماکن نے دہلی کی کیجریوال حکومت میں سرکاری اسکولوں کی حالت زار سے پردہ ہٹانے کا دعویٰ کرتے ہوئے کچھ ایسے گراف پیش کیے ہیں جس نے 2013 کے بعد سرکاری اسکولوں میں طلبا کی گھٹتی تعداد کے ساتھ ساتھ ان کے خراب ہوتے ریزلٹ کی طرف بھی اشارہ کیا ہے۔ منگل کی شام انھوں نے کچھ ٹوئٹس کیے ہیں جس میں ظاہر ہو رہا ہے کہ 14-2013 سے پہلے طلبا کی کارکردگی کیا تھی اور پھر 14-2013 کے بعد جب دہلی میں کیجریوال حکومت کا قیام ہوا تو حالات کیسے رہے۔

اجے ماکن نے ٹوئٹ میں جانکاری دیتے ہوئے بتایا کہ کسی بھی اسکول کا معیار جاننے کے لیے اس کے بورڈ امتحان کے ریزلٹ کو دیکھا جاتا ہے۔ گراف میں صاف دیکھا جا سکتا ہے کہ کیجریوال حکومت میں دہلی گورنمنٹ اسکول کا ریزلٹ دھیرے دھیرے خراب ہوتا چلا گیا۔ ماکن نے بتایا کہ 14-2013 سے پہلے بارہویں بورڈ میں پاس ہونے والے سرکاری اسکول کے طلبا کی تعداد سال در سال بڑھ رہی تھی۔ لیکن جب عآپ حکومت آئی تو یہ ٹرینڈ ریورس میں یعنی الٹا دکھائی دے رہا ہے۔ کانگریس لیڈر نے یہ بھی بتایا ہے کہ 14-2013 میں دہلی گورنمنٹ اسکول کے تقریباً 1.47 لاکھ طلبا بورڈ امتحان میں پاس ہوئے تھے، اور یہ تعداد لگاتار گھٹتے ہوئے 2020 میں تقریباً 1.09 لاکھ پر پہنچ گئی۔

اجے ماکن نے اپنے بیان میں یہ بھی کہا کہ ’’صبح میں جو اعداد و شمار میں نے دہلی اسکول میں طلبا کے داخلے اور پرائیویٹ اسکول میں طلبا کے داخلے سے متعلق جاری کیے تھے، اس سے بھی ثابت ہے کہ کیجریوال حکومت کا تعلیمی ماڈل پوری طرح سے ناکام ثابت ہوا ہے۔‘‘ انھوں نے بتایا کہ صبح کے اعداد و شمار سے ظاہر ہے کہ دہلی کی تاریخ میں پہلی مرتبہ دہلی گورنمنٹ اسکول کے مقابلے پرائیویٹ اسکول میں طلبا کے داخلے کی تعداد زیادہ دیکھنے کو ملی۔ 14-2013 میں دہلی گورنمنٹ اسکول میں طلبا کی تعداد جو 17.75 لاکھ تھی، وہ 2019 میں گھٹ کر 16.47 لاکھ تک پہنچ گئی۔ گویا کہ 1.28 لاکھ طلبا کی کمی درج کی گئی۔

پرائیویٹ اسکولوں کے تعلق سے تفصیل پیش کرتے ہوئے اجے ماکن نے صبح میں جاری اعداد و شمار میں بتایا تھا کہ 2013 میں پرائیویٹ اسکولوں میں 13.57 لاکھ طلبا پڑھ رہے تھے اور 2019 میں یہ تعداد بڑھ کر 16.61 لاکھ ہو گئی، یعنی 3.04 لاکھ طلبا کا اضافہ دیکھنے کو ملا۔ اس سے ظاہر ہے کہ دہلی گورنمنٹ اسکول کا تعلیمی معیار خراب ہوا جس کے سبب سرپرستوں نے اپنے بچوں کو پرائیویٹ اسکولوں میں ڈالنا شروع کر دیا۔

 

ایک نظر اس پر بھی

سول سروسز امتحان میں 27 مسلم امیدوار کامیاب، صدف چودھری کو ملک بھر میں 23 واں مقام حاصل

  ملک کے سب سے اہم قرار دیئے جانے والے یو پی ایس سی کے سول سروسز امتحان کے نتائج جاری کر دیئے گئے ہیں۔ اس مرتبہ مسلم طبقہ سے تعلق رکھنے والے کل 27 امیدواروں نے کامیابی حاصل کی ہے، جن میں سے 7 خواتین شامل ہیں۔

سول سروسز امتحان 2020 کے حتمی نتائج کا اعلان، بہار کے شبھم کمار کو اول مقام حاصل

  یونین پبلک سروس کمیشن (یو پی ایس سی) کی جانب سے جنوری 2021 میں منعقدہ سول سروسز امتحان 2020 کے تحریری حصے اور اگست-ستمبر 2021 میں منعقد پرسنالٹی ٹیسٹ (شخصیت) کے لیے انٹرویو کے نتائج کی بنیاد پر انڈین سول سروسز، انڈین فارن سروسز، انڈین پولیس سروسز اور سینٹرل سروسز میں تقرری کے لیے ...

راکیش ٹکیت کاامریکی صدرجوبائیڈن کو ٹیوٹ 11مہینے میں 700کسانوں کی موت، مانگی مدد

وزیر اعظم نریندر مودی اپنے امریکی دورے پر ہیں، جہاں انہوں نے امریکی نائب صدر کملا ہیرس سے ملاقات کی- اب پی ایم مودی صدر جو بائیڈن کے ساتھ اپنی پہلی ملاقات کرنے والے ہیں، جس میں کئی امور پر بات چیت ہونی ہے- لیکن اس دوران کسان رہنما اور بی کے یو کے ترجمان راکیش ٹکیت نے امریکی صدر جو ...

پسماند ہ طبقہ سے اتنی نفرت کیوں؟ ذات پرمبنی مردم شماری سے مرکزکے انکارپرلالویادوکاحملہ

بہارمیں ذات کی مردم شماری کے معاملے پر سیاست جاری ہے۔ آر جے ڈی کے سربراہ لالو پرساد یادو نے مرکزی حکومت کو نشانہ بنایا ہے کہ اس نے سپریم کورٹ میں حلف نامہ داخل کر کے 2021 میں ذات پرمبنی مردم شماری سے انکار کیا۔