جموں و کشمیر: پلوامہ تصادم میں دو بھگوڑے ایس پی او سمیت 4 ملی ٹینٹ ہلاک

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 7th June 2019, 11:48 PM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

سری نگر،7؍ جون (ایس او نیوز؍یو این آئی) جنوبی کشمیر کے ضلع پلوامہ کے پنجرن لاسی پورہ میں جمعرات اور جمعہ کی درمیانی رات کو ہونے والے ایک تصادم میں چار ملی ٹینٹ مارے گئے۔ مہلوک ملی ٹینٹوں میں ریاستی پولس کے دو سپیشل پولس آفیسرس بھی شامل ہیں جو محض چوبیس گھنٹے قبل دو ہتھیاروں کے ساتھ روپوش ہوکر ملی ٹینٹوں کی صفوں میں شمولیت اختیار کرچکے تھے۔

جموں وکشمیر پولس کے آفیشل ٹویٹر ہینڈل پر ایک ٹویٹ میں کہا گیا 'پلوامہ تصادم میں چار ملی ٹینٹ مارے گئے۔ وہ مبینہ طور پر جیش محمد سے وابستہ تھے۔ آپریشن اپنے اختتام کو پہنچ چکا ہے'۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ ضلع پلوامہ کے پنجرن لاسی پورہ میں ملی ٹینٹوں کی موجودگی سے متعلق خفیہ اطلاع ملنے پر فوج، ریاستی پولس کے اسپیشل آپریشن گروپ اور سی آر پی ایف نے مذکورہ علاقہ میں گزشتہ شام کارڈن اینڈ سرچ آپریشن شروع کیا۔

انہوں نے بتایا کہ تلاشی آپریشن کے دوران علاقہ میں موجود ملی ٹینٹوں نے فورسز کو نشانہ بناکر فائرنگ کی۔ فورسز کی جوابی فائرنگ کے بعد طرفین کے درمیان تصادم چھڑ گیا۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ ابتدائی فائرنگ میں ایک ملی ٹینٹ مارا گیا۔ تاہم طرفین کے درمیان فائرنگ کا تبادلہ جمعہ کی صبح تک جاری رہا جس میں مزید تین ملی ٹینٹ مارے گئے۔

مہلوکین میں مبینہ طور پر دو ایس پی او بھی شامل ہیں جو جمعرات کی صبح ڈسٹرکٹ پولس لائنز پلوامہ سے اپنے سروس ہتھیاروں کے ساتھ لاپتہ ہوکر ملی ٹینٹوں کی صفوں میں شامل ہوگئے تھے۔ ان کی شناخت شبیر احمد ساکنہ تجن پلوامہ اور سلیمان احمد ساکنہ اٹھمولہ شوپیاں کے طور پر ہوئی ہے۔ تصادم میں مارے گئے دیگر دو ملی ٹینٹوں کی شناخت عاشق احمد ساکنہ پنجرن پلوامہ اور عمران احمد ساکنہ آری ہل پلوامہ کے طور پر کی گئی ہے۔

موصولہ اطلاعات کے مطابق تصادم کے مقام پر مقامی لوگوں کی سیکورٹی فورسز کے ساتھ جھڑپیں بھی ہوئیں۔ مقامی لوگوں بالخصوص نوجوانوں نے فورسز پر پتھرائو کیا جنہوں نے ردعمل میں آنسو گیس کے گولے داغے۔ انتظامیہ نے احتیاط کے طور پر پلوامہ اور شوپیاں اضلاع میں موبائیل انٹرنیٹ خدمات منقطع کردی ہیں۔ قبل ازیں جنوبی کشمیر کے ضلع اننت ناگ میں نامعلوم اسلحہ برداروں نے گزشتہ شام ٹریٹوریل آرمی سے وابستہ ایک اہلکار کو گولی مار کر ہلاک کردیا۔ ریاستی پولس نے اس ہلاکت کے لئے ملی ٹینٹوں کو ذمہ دار ٹھہرایا ہے۔

پولس کے ایک بیان میں کہا گیا 'ضلع اننت ناگ میں ملی ٹینٹوں نے جمعرات کی شام ٹریٹوریل آرمی سے وابستہ اہلکار جس کی شناخت منطور بیگ ساکنہ سڈورا اننت ناگ کے بطور ہوئی ہے پر نزدیک سے گولیاں چلائیں جس کے نتیجے میں وہ شدید طورپر زخمی ہوااگر چہ اُسے فوری طورپر علاج ومعالجہ کی خاطر نزدیکی اسپتال منتقل کیا گیاتاہم وہ وہاں زخموں کی تاب نہ لا کر چل بسا۔ یہ واقعہ کیسے اور کن حالات میں رونما ہوا اس سلسلے میں جانچ پڑتال کی جارہی ہے'۔

ایک نظر اس پر بھی

کورونا ہندوستان کو تباہ کرنے کے درپے، ریکارڈ 27 ہزار نئے کیسز درج، مزید 519 ہلاکتیں

  ہندوستان میں کورونا وائرس کے یومیہ کیسز بہت تیزی کے ساتھ بڑھ رہے ہیں اور ایسا محسوس ہو رہا ہے جیسے کورونا نے ہندوستان کو تباہ کرنے کا عزم کر لیا ہے۔ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 27،114 نئے کیسزرپورٹ ہوئے ہیں جو ایک دن میں متاثرہ افراد کی سب سے زیادہ تعداد ہے اور اسی عرصہ میں 519 افراد ...

ایمبولینس نے کورونا مریض سے 7 کلومیٹر کے لئے وصول کئے 8 ہزار روپئے، معاملہ درج

مہاراشٹر میں کورونا وائرس کے انفیکشن کی صورت حال مسلسل بگڑتی جا رہی ہے۔ مریضوں کی تعداد بڑھنے کے ساتھ اسپتالوں میں بیڈ بھی کم پڑنے لگے ہیں۔ کورونا وبا کے اس بحران کی گھڑی میں بھی کچھ لوگ مریضوں کو لوٹنے سے باز نہیں آ رہے ہیں۔

اُڈپی میں کووڈ۔19 جانچ سنٹر قائم ، روزانہ 300 نمونوں کی جانچ ممکن

ساحلی کرناٹک کے اُڈپی شہر میں 45 لاکھ کی لاگت سے ہائی ٹیک مکمل ایئر کنڈیشنڈ کووڈ۔19 جانچ سنٹر قائم کردیا گیا ہے۔ اس لیب کیلئے ایک  مائکرو بیالوجسٹ اور 8 لیب ٹیکنیشن کا بھی تقرر کردیا گیا ہے۔ ان احباب نے بنگلورو کے نمہانس اسپتال میں تربیت حاصل کی ہے۔

گریجویٹ،پوسٹ گریجویٹ اورڈپلولہ کے سال آخرکے طلبہ کاامتحان ستمبرمیں ہوگا:اشوتھ نارائن

مہاماری کوروناوائرس کے پیش نظرطلبہ کومفادات کی حفاظت کی خاطرریاستی حکومت نے ایک اہم فیصلہ کیاہے۔ریاستی وزیربرائے اعلیٰ تعلیم ونائب وزیراعلیٰ ڈاکٹراشوتھ نارائن نے آج کہا کہ تعلیمی سال 2019-2020ء کے انجینئرنگ،گریجویٹ اورپوسٹ گریجویٹ سمیت ڈپلومہ میں زیرتعلیم انٹرمیڈیٹ سمسٹرکے ...

کیا بھٹکل میں کورونا کے معاملات قابو میں آگئے ؟ ضلع میں پھر آئے 33 پوزیٹیو

اللہ کا شکرہے کہ بھٹکل میں کورونا کے معاملات تھمتے نظر آرہے ہیں اور کورونا کے حالات قابو میں آنے کے امکانات نظر آرہے ہیں، یہی وجہ ہے کہ آج جمعہ کو بھٹکل میں کورونا کا کوئی پوزیٹیو معاملہ سامنے نہیں آیا، اسی طرح کل جمعرات بھی بھٹکل میں صرف ایک معاملہ کورونا پوزیٹیو کا ...

بھٹکل سے میڈیکل ضروریات کے تحت اُڈپی یا مینگلور جانے اور واپس آنے میں کوئی روک نہیں ؛ اسسٹنٹ کمشنر کا بیان

میڈیکل ضروریات کے تحت کوئی اگر بھٹکل سے کنداپور یا مینگلور جاتا ہے اور واپس بھٹکل آتا ہے تو اس کے لئے کسی قسم کی اجازت لینے کی ضرورت نہیں ہے،ایسے لوگ صبح جاکر شام کو  واپس لوٹ سکتے ہیں، اس بات کی اطلاع بھٹکل اسسٹنٹ کمشنر مسٹر بھرت نے دی۔