بریکنگ نیوز

کاروار : جھوٹی خبروں اور افواہوں پر روک لگانے کی ضرورت ہے - ریٹائرڈ چیف جسٹس این وی رمن 

Source: S.O. News Service | Published on 22nd January 2023, 10:11 PM | ساحلی خبریں |

کاروار،22 / جنوری (ایس او نیوز) کاروار کے ہندو ہائی اسکول کے 125 ویں سالانہ جلسہ کی تین دروزہ تقریبات کا افتتاح کرتے ہوئے سپریم کورٹ کے ریٹائرڈ چیف جسٹس ایم وی رمن نے کہا کہ انٹرنیٹ کا غلط استعمال کرکے سماج کا امن و امان بگاڑنے کی کوششیں ہو رہی ہیں ۔ یہ ایک خطرناک صورتحال ہے ۔ ہر جگہ افواہیں پھیلانے کا کام ہو رہا ہے ۔ اخلاقی اقدار اور ہر شہری کے ساتھ عدل و مساوات جیسے دستوری اصولوں کو مظبوطی سے تھامنے اور اس کا تحفظ کرنا ضروری ہے ۔ 
    
انہوں نے کہا کہ آج کے جدید دور میں انٹرنیٹ کے ذریعہ خبریں بہت ہی تیز رفتاری سے پھیل جاتی ہیں ۔ ایسے میں پھیلائی جارہی جھوٹی خبریں اور افواہیں صحت مندانہ سماج کے لئے ہلاک خیز ہوتی ہیں ۔ اس سے آپسی ہم آہنگی کا ماحول خراب ہوجاتا ہے ۔ ہم جیسے پڑھے لکھے افراد کو درست اور معتبر ذرائع سے آنے والی خبروں پر ہی بھروسہ کرنا چاہیے ۔
    
انہوں نے مزید کہا کہ دو حرف لکھنے پڑھنے سیکھنا ہی تعلیم کا مقصد سمجھنے کے بجائے ہمیں اس چوکھٹے سے باہر نکل کر سماجی ذمہ داریاں سمجھانے والی تعلیم بچوں کو فراہم کرنی چاہیے ۔ صرف نصابی تعلیم کو ہی اعلیٰ تعلیم سمجھا جا رہا ہے ۔ طالب علم کی جانچ کے لئے صرف یہ دیکھا جاتا ہے کہ اس نے نصابی سبق کس حد تک یاد کیا ہے ۔ مگر یہ حقیقی تعلیم نہیں ہے ۔ 
    
سابق چیف جسٹس نے زور دے کر کہا کہ ہر قسم کی تعلیم میں آئین کے اصولوں کو شامل رکھنا چاہیے ۔ مخلصانہ سوچ کو فروغ دینے کی تربیت ہونی چاہیے ۔ سماج کے لئے نقصان دہ تعلیم و تربیت سے دور رہنا چاہیے ۔ ملک میں جو کچھ ہوا ہے اور جو ہو رہا ہے اس کے بارے میں بچوں کو آگاہ رہنے کی طرف راغب کرنا چاہیے ۔ طلبہ کے اندر ایک دوسرے کو برداشت کرنے کا جذبہ ، انسانیت نوازی، اخلاص جیسے اوصاف ہونے چاہئیں ۔ نصاب تعلیم میں مساوات ، باہمی بقاء اور ایک دوسرے کے ساتھ تعاون کا پیغام شامل کیے جانے کی صورت میں ہی بچوں کا باشعور شہری بننا ممکن ہو سکے گا ، کیونکہ موجودہ نظام تعلیم سے یہ تبدیلی ممکن نہیں ہے ۔ 
    
سیںئر ایڈوکیٹ دیو دت کامت ک ستائش :اس موقع پر کاروار سے تعلق رکھنے والے سپریم کورٹ کے معروف سینئر ایڈوکیٹ دیو دت کامت کے تعلق سے ستائشی کلمات پیش کرتے ہوئے سابق چیف جسٹس این وی رمن نے کہا وہ ایک عقلمند اور بڑے ہی با صلاحیت وکیل ہیں ۔ آئین کے ساتھ جڑے رہ کر اپنے دلائل پیش کرنے کا طریقہ وہ کبھی نہیں چھوڑتے ۔ جب میں ہائی کورٹ کا جج تھا تو انہوں نے میرے فیصلے کو سپریم کورٹ میں چیلنج کیا تھا ۔ اُس وقت مجھے میری ان کی جان پہچان نہیں تھی ۔ ہندو اسکول کے وہ ایک سابق طالب علم ہیں ، یہ بڑے فخر کی بات ہے ۔ 

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل میں کپڑا بینک کے زیرانتظام منعقد ہوا دانتوں کےمفت علاج کا کیمپ؛ 300 لوگوں نے کیا استفادہ

ھیل ہیومینٹی سروس المعروف کپڑا بینک کے زیرانتظام بھٹکل کی پرانی شفاء نرسنگ ہوم کی عمارت میں آج اتوار کو دانتوں کے علاج کا مفت کیمپ منعقد ہوا جس میں 300 سے زائد لوگوں نے شرکت کرتے ہوئے اپنے اپنے دانتوں کا علاج معالجہ کرایا۔

بھٹکل: آسارکیری مندر میں شادی کی رسم ادا کرنے سے برہمن پجاری نے کیا انکار؛ نامدھاری سماج کے نائب صدر نے کیا تشویش کا اظہار

ہم 21ویں صدی  میں ہیں لیکن 18ویں اور19ویں صدی کی  طرح دھرم اور ذات کے نام پر  ظلم وہراسانی کا سلسلہ  آج بھی  جاری ہے۔ 21ویں صد ی میں بھی اسی ذات پات اور چھوت چھات کا نظام ہرجگہ چھایا ہواہے۔ اس کےلئے آسارکیری کی نچل مکی شری وینکٹ رمن مندر اس کا منہ بولتا  ثبوت ہے، جہاں ں  شادی کی ...

بھٹکل : آسارکیری میں تعمیر کردہ مہادوار کا رکن اسمبلی کے ہاتھوں افتتاح

تعلقہ کی مشہور آسارکیری نامدھاری سماج کی نچل مکی شری ترومل وینکٹ رمن مندر تجدید کردہ مورتی کی نصب کاری ، پالکی مہوتسومذہبی پروگرام سمیت  رکن اسمبلی سنیل کی جانب سے مندر کے لئے تعمیر کردہ مہا دوار(صدردروازہ) کی افتتاحی تقریب کاانعقاد ہوا۔  شری رام اکشھتر کے شری برہمانند ...

بھٹکل میں دس سال مکمل ہونے کے باوجود نیشنل ہائی وے کام نامکمل؛ سرکل پر سے فلائی اوور غائب؛ این ایچ ڈیولپمنٹ کمیٹی نے رکھے مطالبات؛ نہ ماننے کی صورت میں زبردست احتجاج کادیا انتباہ

  بھٹکل  میں دس سال سے جاری نیشنل ہائی وے فورلائن  کا کام مکمل ہونے کا نام نہیں لے رہا ہے، ہر طرف کام کو ادھورا چھوڑا گیا ہے جس سے ہائی وے  کی خستہ حالی ظاہر ہورہی ہے۔ ایسے میں پتہ چلا ہے کہ ہائی وے کو تعمیر کرنے والی کنٹریکٹ کمپنی آئی آر بی نے  شمس الدین سرکل پر  جو فلائی اوور ...

انجمن پی یوکالج فورویمن بھٹکل میں چوہترواں جشن ِیوم جمہوریہ

26 جنوری بروز جمعرات صبح  آٹھ بجے انجمن پی یو کالج فار ویمن کے خدیجہ سید علی کیمپس  کے احاطے میں بدستِ پرنسپل ڈاکٹر فرزانہ محتشم کے رسمِ پرچم کشائی کی تقریب کاانعقاد کیا گیا۔ اس موقع پرطالبات سے خطاب کرتے ہوئے فرزانہ محتشم نے بتایا کہ 26 جنوری کی اہمیت یہ ہے کہ حکومت ہند ایکٹ ...