کاروار: موسم باراں میں کہیں بھی مصنوعی سیلاب کوپیدا ہونے نہ دیں، 24گھنٹوں میں رکاوٹوں کو دور کریں : ضلع نگراں کاروزیر کی آئی آر بی افسران کو سخت ہدایت

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 22nd June 2022, 8:47 PM | ساحلی خبریں |

کاروار:22؍ جون   (ایس اؤ نیوز)قومی شاہراہ فورلین کی تعمیر ی کاموں کی وجہ سے ساحلی علاقوں میں مصنوعی سیلاب کے حالات پیدا ہوگئے ہیں۔ 22جون تک جہاں جہاں بارش کا پانی بہنے کےلئے رکاوٹیں ہیں ان سب کو دور کرنے اور پانی آسانی کے ساتھ بہہ کر سمندر میں جاملنے کا انتظام کرنے  ضلع نگراں وزیر کوٹاشری نواس پجاری نے آئی آر بی کمپنی افسران کو سخت تاکید کی۔

ڈی سی دفتر ہال میں  ماقبل مانسون پیشگی تیاری اقدامات اور دیگر لوازمات کے متعلق منعقدہ میٹنگ کی صدارت کرتےہوئے انہوں نےکہاکہ ساحلی پٹی سے گزرنے والے قومی شاہراہ پر فورلین کے تعمیری کاموں کی وجہ سے جہاں تہاں بارش کا پانی جمع ہونے اور بہنے میں مسائل پیدا ہونےکے متعلق شکایتیں موصول ہوئی ہیں، مصنوعی سیلاب کی صورت حال پیدا ہونے سے راہ گیروں اور سواروں کاگزرنا محال ہورہاہے۔ بدھ سے پہلے پہلے یعنی 22تک سبھی رکاوٹوں کو دور کرتےہوئے بہتر انتظامات کرنے کی ہدایات دیں۔ بارش کے موسم میں سیلاب، پہاڑوں کا کھسکنا جیسے سماوی حادثات ہونےو الے مقامات پر پیشگی اقدامات کو جلدی مکمل کرلیں۔ کہیں پر عوام کو چلنے پھرنےمیں مشکلات پیش آتی ہیں تو 24گھنٹوں میں اس کی درستی ہو۔ جن برجوں کے تعمیری کام جاری ہیں انہیں جلد سے جلد ختم کرتےہوئے عوام کو سہولت عطا کرنےمحکمہ آب پاشی کے افسران سے کہا۔

ضلع میں 75ہزارہیکڑ زرعی زمین ہے۔ ابھی تک 25000ہزار ہیکڑ زرعی زمین پر بیج بوئےگئےہیں، زراعت کے متعلق کسانوں کے لئے ضروری کھاد، مشنیں وغیرہ بہم پہنچائیں انہیں کسی قسم کی تکلیف نہ ہو اس کا خاص خیال رکھنے کہا۔  میٹنگ میں کاروار کی رکن اسمبلی روپالی نائک ، ڈی سی ملئی مہیلن وغیرہ موجود تھے۔

بجلی کا مسئلہ ہرسال رہتاہے:ضلع نگراں کارو زیر نے افسران کو ہدایت دی کہ ہرسال بارش کے موسم میں بجلی کا مسئلہ سردر د بنا رہتا ہے  لیکن اس مرتبہ پیشگی طورپر انتظامات کئےجانے سے کوئی مسئلہ پیدا نہیں ہو ۔ افسران ضلع انتظامیہ  کا خیال رکھتےہوئے عوامی مفاد میں کام کریں کسی کو کوئی تکلیف نہ پہنچے اس طرح کی تیار ی کرنے کہا۔

ایک نظر اس پر بھی

موڈ بیدری میں انجینئرنگ کالج کمپاونڈ کی دیوار گرنے سے 4 کاروں کو نقصان 

میجارو گرام پنچایت حدود میں واقع مینگلورو انسٹی ٹیوٹ آف ٹیکنالوجی اینڈ انجینئرنگ (مائٹ) کی کمپاونڈ وال بھاری برسات کی وجہ سے گر گئی جس کے نتیجہ میں حالانکہ کسی کا جانی نقصان نہیں ہوا مگر وہاں پارک کی گئی طلبہ اور والدین کی 4 کاروں کو نقصان پہنچا ۔ 

اتر کنڑا ضلع میں موسلادھار بارش جاری : یلاپور میں بجلی لائن درستی کے دوران ایک شخص فوت ،درخت اور بجلی کے کھمبے گرنےسے نقصانات

اترکنڑا ضلع میں منگل کو بھی موسلادھار بارش جاری رہی۔ کاروار، بھٹکل ، سرسی ، یلاپور سمیت کئی تعلقہ جات میں رک رک کر طوفانی ہواؤں کےساتھ تیز رفتار بارش برستی رہی ہے۔ سڑکیں، قومی شاہراہیں ، گلی محلوں میں بارش کا پانی جمع ہونےسے چھوٹے چھوٹے تالاب بن گئے ہیں ، بجلی کے کھمبے اور ...

بھٹکل سمیت اُترکنڑا میں موسلادھار بارش کا سلسلہ جاری؛ کل بدھ کو بھی اسکولوں اور کالجوں میں چھٹی کا اعلان

بھٹکل سمیت ضلع اُترکنڑا میں موسلادھار بارش کا سلسلہ جاری ہے جسے  دیکھتے ہوئے اُترکنڑا  ڈپٹی کمشنر ملئے مہیلن نے کل بدھ کو بھی پیشگی حفاظتی انتظامات کے تحت  اسکول اور کالجس سمیت تمام تعلیمی اداروں میں چھٹی کا اعلان کیا ہے۔ بھٹکل کی طرح ہوناور، کمٹہ ، انکولہ اور کاروار میں ...