ہائی وے زونل آفس کو کاروار سے یلاپور منتقل کرنے ڈسٹرکٹ انچارج وزیر ہیبار کی کوشش : کیا اُترکنڑا کی تقسیم کے ساتھ ضلعی مرکز کے لئے سرسی اور یلاپورمیں مقابلہ شروع ہوگیا ہے؟

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 13th October 2021, 7:14 PM | ساحلی خبریں |

کاروار :13؍ اکتوبر(ایس اؤ نیوز)کاروار میں قائم  نیشنل ہائی وے زونل ٹاسک فورس انجنئیر کے دفتر کو یلاپور لےجانے  ضلع نگراں کاروزیر شیورام ہیبار نے ریاستی آب پاشی وزیر کو خط لکھنے کی اطلاع موصول ہوئی ہے جس کے ساتھ ہی  کہا جارہا ہے کہ ضلع اُترکنڑا کو تقسیم کرنے اور  گھاٹ والے ضلع کے لئے   ضلعی مرکز سرسی کو یا یلاپور  کو  بنائے جانے کو لے کر بھی مقابلہ شروع  ہوچکا ہے۔

بغیر تاریخ والے اس خط نمبر 264/2021میں کہاگیا ہےکہ اترکنڑا ضلع کے کاروار میں  قائم  ہائی وے ٹاسک فورس انجنئیر زونل  آفس کی تحویل میں ساحلی پٹی کی شاہراہ نہیں آتی ہیں اور اس علاقے میں ہائی وے کی نگرانی ضروری نہیں ہے۔ متعلقہ ہائی وے زونل آفس کو عہدوں سمیت ضلع کے  مرکزی مقام یلاپور کو منتقل کرنا ضروری ہے۔ خط میں کہا گیا ہے کہ  منتقلی سے علاقے کی شاہراہوں کی نگرانی ٹھیک طرح سے ہوگی یہ بھی لکھا گیا ہےکہ اس سلسلےمیں متعلقہ محکمہ کو آرڈر جاری کیا جائے۔

ضلع نگراں کاروزیر شیورام ہیبار کے خط کی وجہ سے ضلع میں ملے جلےبیانات کا سلسلہ شروع ہوگیاہے۔ بہت سارے لوگوں نے اس پر سوال اٹھاتے ہوئےپوچھا ہے کہ گھاٹ کے اوپر والا کوئی عوامی نمائندہ وزیر بنتاہے تو کاروار میں موجود دفاتر کو گھاٹ کے اوپر  لےجانے کی کیا وجہ ہے؟اس سے قبل سرسی کے رکن اسمبلی  وشویشورہیگڈے کاگیری جب  ضلع نگراں کار وزیر تھے تو کاروار اور ہلیال سے کئی دفاتر کو سرسی منتقل کیاتھا۔ کاگیری نے کہا تھا کہ  سرسی ضلعی مرکز ہے اور  وہاں سے بہتر طورپر انتظاماتی امور کی نگرانی ہوسکتی ہے اس لئے  دفاتر کو کاروار سے سرسی  منتقل کیاگیا ہے۔ اب یلاپور سے تعلق رکھنے والے  شیورام ہیبار کے لئے  یلاپور ضلعی مرکز بن گیا ہے، اسی لئے انہوں نے  ہائی وے زونل آفس کو یلاپور منتقل کرنےکی اپیل کی ہے۔

عوام کا کہنا ہے کہ  ابھی تو  صرف ابتداء  ہوئی ہے آگے آگے دیکھئے ہوتاہے کیا۔ لوگوں کی مانیں تو  آئندہ دنوں میں کئی دفاتر کاروار سے یلاپور  منتقل کیا جائے گا۔ عوامی سطح پر الزام عائد کیا جارہاہےکہ ضلع نگراں کاروزیر شیورام ہیبار بھی کاگیری کی راہ چل رہےہیں۔

سرسی اور یلاپور کے درمیان مقابلہ ؟:بہت پہلے سرسی علاقے کے چند سیاست دانوں نے ضلعی مرکز کاروارکے تعلق سے بتایا تھا کہ کاروار  دیگر تعلقہ جات کے لئے کافی دورہے، اس لئے ضلع اُترکنڑا کو تقسیم کرنے کی کوشش کی تھی ۔ اب تقسیم کی جدوجہد سرسی تک محدود ہوگئی ہے۔ ضلعی مرکز کےلئے  سرسی کے خلاف یلاپور سمیت گھاٹ کے اوپر والے تعلقہ جات مقابلے میں ہیں۔ اگر ضلع کی تقسیم ہوتی ہے تو یلاپور گھاٹ کے اوپر والے تعلقہ جات کےلئے مرکزی مقام ہے اس بنا پر یلاپور کو ہی ضلعی مرکز بنانے کی آواز لگائی جارہی  ہے تو اس کے خلاف سرسی میں کئی ضلعی دفاتر ہیں سرسی کو ہی ضلعی مرکز بنانے کی حمایت میں بھی صدائیں بلند ہورہی ہیں۔سرسی کے عوام کو شبہ ہےکہ اب یلاپور کو ضلعی دفاتر منتقل کرتےہوئے مستقبل میں یلاپور کو ہی ضلعی مرکز بنانے کےلئے شیورام ہیبار نے  تیار  ی شروع کردی  ہے۔ اسی طرح دفاتر کی منتقلی ہوتی رہی تومستقبل میں  ضلعی مرکز کے لئے سرسی کویلاپور کڑا مقابلہ دےسکتاہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل کے اعلیٰ افسران کے خلاف ہتک ذات مقدمہ درج ہونے کا معاملہ : سرکاری ملازمین سنگھا کی کڑی مذمت

18اکتوبر کو بھٹکل میونسپالٹی کے دکانوں کی نیلامی میں شریک ہوئے بھٹکل اسسٹنٹ کمشنر، تحصیلدار اور چیف آفیسر کے خلاف بغیر کسی وجہ کے ، غیرقانونی طورپر ہتک ذات کا معاملہ درج کئےجانے کی کرناٹکا ملازمین سنگھ بھٹکل شاخ نے مذمت کی ہے۔

کاروار: طلبا اور روزگار وں کےلئے تعلقہ ، ضلعی ، ریاستی اور قومی سطح کا تقریری مقابلہ : 18سے 29سال کی عمر والے توجہ دیں؛ قومی سطح پر اول آنے پر دولاکھ روپیہ انعام

یوتھ اینڈ اسپورٹس وزارت کے تعاون سے نہرو یوا کیندر کی جانب سے تعلقہ ، ضلع، ریاستی اور قومی سطح پر ہندی اور انگریزی زبانوں میں  تقریری مقابلوں کا انعقاد کئے جانے نہرو یوا کیندر کے ذمہ داروں نے پریس ریلیز کے ذریعے جانکاری دی ہے۔

بھٹکل جماعت اسلامی ہند اور سدبھاؤنا منچ بھٹکل کے اشتراک سے’حضرت محمد  ﷺ مثالی رہنما‘ کے عنوان پر پروگرام کا انعقاد

آخری نبی حضرت محمد ﷺ کی تعلیمات کو ریاستی عوام کے سامنے پیش کرنےکی غرض وغایت لے کر جماعت اسلامی ہند کرناٹکا کی طرف سے 17سے 26اکتوبر تک منائی جارہی ’سیرتؐ مہم ‘ کی مناسبت سے بھٹکل کے دعوت سنٹر میں 26اکتوبر بروزمنگل کو  منعقدہ سیرت پروگرام میں مقررین نے اپنے خیالات کا اظہار ...

بھٹکل ہیبلے گرام پنچایت انتظامیہ پر رشوت خوری کا الزام : خصوصی میٹنگ میں الزام ثابت کرنے کا مطالبہ

تعلقہ کے ہیبلے گرام پنچایت کے چند ممبران نے گرام پنچایت انتظامیہ  پر رشوت خوری کا الزام عائد کئےجانےکو لےکر ہیبلے پنچایت ہال میں پنچایت ممبران کی  خصوصی میٹنگ منعقد ہوئی ۔