بھٹکل :مودی کی دیپ جلاؤ مہم سے بجلی فراہم کرنے والے’پاور گرِڈ‘کوہو سکتا ہے خطرہ!

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 5th April 2020, 2:42 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بھٹکل  5/اپریل (ایس او نیوز) وزیراعظم نریندر مودی نے کورونا وائرس کے خلاف متحدہ جنگ کی علامت کے طور پر پورے دیش میں آج یعنی 5/اپریل کی رات کو۹ بجے سے ۹ منٹ تک بجلی بند کرکے گھروں کی بالکنی میں دیپ یا موم بتی جلانے کی جو صلاح دی ہے، اس کی وجہ سے پورے ملک میں بجلی فراہم کرنے والے ’پاورگرِڈس‘ کو خطرہ لاحق ہوگیا ہے۔

 مسئلہ یہ ہے کہ پورے ملک میں مختلف مقاما ت پرقائم پاورگرڈس کے ذریعے حسب معمول بجلی کی سپلائی ہورہی ہوتو اس وقت اچانک ہر جگہ سے بیک وقت بجلی بند کردی جائے گی تو اس سے مشینری سسٹم پر برا اثر پڑنا یقینی ہے۔اوربجلی فراہم کرنے والے عملے کے سامنے سب سے اہم سوال یہ ہے کہ اس بجلی کو ۹ منٹ تک روک کر کہاں رکھا جائے؟!

 پاورسیکٹر کے ماہرین کا کہنا ہے کہ اگر رات میں دیپ جلانے کی مہم میں شامل ہونے کے لئے ملک بھر میں لوگ اپنے گھروں کی  لائٹ10 سے 15 منٹ تک  بند کردیتے ہیں تو تقریباً 10ہزار تا15ہزار میگاواٹ بجلی کی مانگ کم ہوجاتی ہے۔اس وقت ۹ منٹ کے لئے بجلی کی سپلائی میں کٹوتی کرنی پڑے گی۔ پھر اس کے بعد فوری طور بجلی کی سپلائی کو پہلے کی طرح معمول پر لانا ’پاور سسٹم آپریشن کارپوریشن لمیٹیڈ‘ کے لئے ایک بڑا سوال بن گیا ہے۔اس میں ذراسی بھی چوک ہوجائے گی تو ’ہائی اولٹیج‘’لائن ٹریپنگ‘جیسے مسائل یا پھر ’نیشنل پاورگرڈ‘ کو نقصان پہنچنے کے امکانا ت موجود ہیں۔

 اس مسئلے کو حل کرنے کے لئے ریاستی سطح پرگذشتہ  رات کو آٹھ بجے ہی لوڈ شیڈنگ شروع کیے جانے کا فیصلہ کیا گیا ہے، اسی طرح دیش بھر میں لوڈ شیڈنگ کرکے اچانک بجلی بند کرنے سے ہونے والے نقصان سے بچنے کی راہ نکالنے کی توقع کی جارہی ہے۔ جبکہ وزارت توانائی کی جانب سے اس تشویش کو بلاوجہ قرار دیا گیا ہے اور کسی بھی قسم کا مسئلہ پیش نہ آنے کی بات کہی گئی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

اُڈپی میں کورونا وائرس کے معاملات کو لے کر ریاستی وزیر اور محکمہ صحت کے اعداد و شمار میں نمایاں فرق؛ کہیں رپورٹ کو چھپایا تو نہیں جارہا ہے ؟

اُڈپی ضلع میں کورونا وائرس کے معاملات کی تعداد کو لے کر ریاستی وزیر برائے محصولات آر اشوک اور محکمہ صحت کی جانب سے جاری اطلاع میں فرق کی وجہ سے اُڈپی ضلع کے عوام تذبذب کا شکار ہوگئے ہیں۔

اُڈپی ضلع میں کورونا کے بڑھتے ہوئے معاملات سے نمٹنے کے لئے کنداپور اور بیندور میں کووِڈ اسپتالوں کا قیام۔ ڈپٹی کمشنر جگدیش کا اعلان

ضلع اُڈپی کے ڈپٹی کمشنر جی جگدیش نے بتایا کہ ضلع میں کووِڈ 19سے متاثرین کی تعداد میں روزبرو ز اضافہ کو دیکھتے ہوئے کنداپور اور بیندو ر میں 400 بستروں کی سہولت کے ساتھ کووِ ڈ اسپتال قائم کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

کرناٹک میں 25 جون سے شروع ہورہے ہیں ایس ایس ایل سی امتحانات؛ ہر امتحان گاہ میں صرف 18 طلبا کو بیٹھنے کی ہوگی سہولت؛ ایک گھنٹہ پہلے امتحان گاہ پہنچنا ضروری

کورونا وباء کے بعد ملک بھر میں لگے لاک ڈاون کے بعد اب ریاست کرناٹک میں 25 جون سے ایس ایس ایل سی امتحانات شروع ہورہے ہیں جو  4 جولائی کو اختتام کو پہنچیں گے۔ امتحانات کو منعقد کرنے کے لئے ہرممکن احتیاطی اقدامات اُٹھائے جارہے ہیں تاکہ طلبا کویڈ سے  محفوظ رہیں،  طلبا کے درمیان ...

اُڈپی میں کورونا وائرس کے معاملات کو لے کر ریاستی وزیر اور محکمہ صحت کے اعداد و شمار میں نمایاں فرق؛ کہیں رپورٹ کو چھپایا تو نہیں جارہا ہے ؟

اُڈپی ضلع میں کورونا وائرس کے معاملات کی تعداد کو لے کر ریاستی وزیر برائے محصولات آر اشوک اور محکمہ صحت کی جانب سے جاری اطلاع میں فرق کی وجہ سے اُڈپی ضلع کے عوام تذبذب کا شکار ہوگئے ہیں۔

کرناٹک میں کورونا کے 24 گھنٹوں میں 267 نئے معاملات ، داونگیرے میں مریض کی موت سے مرنے والوں کی تعداد 53

گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران منگل کی شام 5 بجے تک ریاست میں 267 نئے کو رونا مریض پائے جانے سے ریاست میں کووڈ۔19 سے متاثر مریضوں کی تعداد بڑھ کر 2494 تک پہنچ گئی اور داونگیرے میں مزید ایک مریض کے ریاست میں فوت ہونے سے ریاست میں اس وبائ سے مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 53 ہوگئی۔

یکم جولائی سے کرناٹک میں اسکول کھل جائیں گے۔کلاسس شروع کرنے کے لئے مرحلہ وار تاریخوں کا اعلان

کرناٹک حکومت نے ریاست بھر میں یکم جولائی سے مرحلہ وار پرائمری اور سکینڈری اسکول کھول دینے کے احکامات جاری کر دئیے ہیں - وزیر برائے بنیادی و ثانوی تعلیم سریش کمار کی صدارت میں محکمہ تعلیمات عامہ کے اعلیٰ عہدیداروں کی میٹنگ کے بعد کمشنر برائے تعلیمات عامہ کی جانب سے اسکولس ...

ہوناور: لاری میں بے ہوش پڑے ہوئے ڈرائیور کو پولیس نے عوام کے تعاون سے پہنچایا اسپتال، کورونا کا شبہ

ہوناور کے شراوتی سرکل پر کھڑی ایک لاری  میں ڈرائیور بے  ہوش پائے جانے کےبعد پولس نے اسے مقامی لوگوں کی مدد سے اسپتال پہنچادیا ہے۔ عوام کو شبہ ہے کہ اس پر کورونا وائرس کا حملہ ہوا ہے۔

لاک ڈاؤن کے دوران جان گنوا نے والے مہاجر مزدوروں کے اہل خانہ کو 25لاکھ روپئے معاوضہ دینے ایس ڈی پی آئی کا مطالبہ

   سوشیل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا  کے قومی صدر ایم کے فیضی نے اخباری بیان جاری کرتے ہوئے   مرکزی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ بغیر تیاری کے اعلان کردہ لاک ڈاؤن کی وجہ سے کام کرنے کی جگہ اور اپنے گھروں کو پیدل سفر کرنے والے جو مہاجر مزدور بھوک اور تھکن سے جان گنو ا چکے ہیں،  ان کے ...

کرناٹک میں ایک ہی دن 187 افراد کورونا پوزیٹیو، تین ہزار سے پار ہوا اکڑہ

ریاست کرناٹک میں پیر کے دن 187 افراد کورونا پوزیٹیو پائے گئے ، جس سے کل تعداد 3408 ہوگئی ۔ 2026 افراد زیر علاج ہیں۔ 110 مریض شفایاب ہو کر رخصت ہوئے ۔ اب تک رخصت ہونے والوں کی تعداد 1328 ہوگئی ہے، 52 ؍ افراد ہلاک ہوئے ہیں۔