کرناٹک میں کورونا سے نپٹنے کیلئے نئے قواعد وضع-کیسوں میں اضافہ ہوا تو سخت اقدامات ناگزیر: آر اشوک

Source: S.O. News Service | Published on 28th November 2021, 10:27 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،28؍نومبر(ایس او  نیوز)حکومت کرناٹک نے کورونا وائرس کے تازہ معاملات میں اضافہ کے پیش نظر حکومت کرناٹک نے سخت احتیاطی اقدامات کا اعلان کیا ہے۔ ہفتہ کی شام وزیر اعلیٰ بسوراج بومئی کی صدارت میں ایک اعلیٰ سطحی اجلاس میں کورونا وائرس کے تازہ کیسوں کی صورتحال اور جنوبی افریقہ سے پھیلنے والے اومیکرون وائرس کے ممکنہ خطروں کا جائزہ لینے کے بعد چند اہم اعلانات کئے گئے۔ میٹنگ کے بعد وزیر محصولات آر اشوک نے میڈیا کو تازہ فیصلوں سے آگاہ کروایا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے طے کیا ہے کہ کورونا وائرس کے کیسوں میں اگر آنے والے دنوں میں اضافہ کا سلسلہ جاری رہتا ہے تو سخت قدم اٹھائے جائیں گے۔یہ طے کیا گیا کہ مہاراشٹرا اور کیرلا سے ریاست میں آنے والوں کیلئے آر ٹی پی سی آر جانچ اور اس کی نگیٹیو رپورٹ لازمی ہو گی۔ قومی شاہراہوں اور مہاراشٹرا وکیرلا کی سرحدوں سے جڑے علاقوں میں چوکسی بڑھانے کے ساتھ ساتھ جا بجا کووڈ جانچ نے مراکز قائم کئے جائیں گے جہاں جانچ کا سلسلہ 24 گھنٹے جاری رہے گا۔ 16دن یا اس سے کم عرصہ میں کیرلا سے جو لوگ ریاست میں داخل ہوئے ہیں ان کیلئے آر ٹی پی سی آر جانچ لازمی قرار دی گئی ہے۔ہاسٹلوں میں مقیم طلباء کی جانچ کے بعد بھلے ہی نگیٹیو رپورٹ ملی ہو لیکن سات دن بعد دوبارہ ان کی جانچ کی جائے گی۔ ہوٹلوں، ریستورانوں، سنیما گھروں، لائبریری، سوئمنگ پول، زواور بیالوجیکل پارکوں میں کام کرنے والوں کیلئے کووڈ ویکسین کے دونوں ڈوز لازمی قرار دئیے گئے ہیں۔ میڈیکل کالجوں کور نرسنگ کالجوں کے طلباء کیلئے کووڈ ٹسٹ میں اضافہ کیا جائے گا۔ سرکاری دفاتر، مالس اوردیگر مقامات پر کام کرنے والوں کیلئے کووڈ ویکسین کے دونوں ڈوز لازمی قراردئے گئے ہیں۔ ایرپورٹ پر دیگر مقامات سے پہنچنے والوں کی جانچ میں تیزی لانے کا فیصلہ کیا گیا ہے اور کہا گیا ہے کہ جانچ میں اگر کوئی بھی پازیٹیو نظر آئے تو اسے فوری طور پر اسپتال روانہ کیا جائے۔اشوک نے بتایا کہ اسکولوں اور کالجوں کے ذمہ دارو ں سے کہا گیا ہے کہ وہ ان کے کلچرل پروگراموں کو ملتوی کردیں۔بعض اسکولوں میں کووڈ کیسوں میں اضافے کے بارے میں ایک سوال پر انہوں نے کہا کہ اگر کیسو ں میں اضافہ ہوتا ہے تو اس کے بارے میں مناسب فیصلہ کرنے اضلاع کے ڈپٹی کمشنروں کو اختیار دیا گیا ہے۔اس میٹنگ میں وزیر صحت ڈاکٹر سدھاکر، کرناٹک میں کووڈ ٹاسک فورس کے سربراہ ڈاکٹر سدرشن اور دیگر موجود تھے-

ایک نظر اس پر بھی

کوروناکے معاملات میں مسلسل اضافہ۔ رام نگرم ضلع کا کووڈ ہاٹ اسپاٹ ہونا خود عوام کو ستانے لگا

پچھلے دنوں ریاست بھر میں کووڈ کی تیسری لہرکے دوران اور اومیکرون کے تیزی سے پھیلنے کے باوجود ضلع میں کووڈ کے مریضوں کی تعداد کم ہی نظرآرہی تھی،مگر پچھلے ایک ہفتے سے کووڈ کے مریضوں کی تعداد میں اضافہ ہواہے۔

بنگلورو: 19سے زیادہ جرائم سے معا ملات میں ملوث ملزم راہل پر ہنومنت نگر پو لیس گو لی چلا کر گرفتار کرنے میں کا میاب

منشیات کے دھندہ سمیت جرائم کے19معا ملات میں ملوث ہوکر عدالت سے8مرتبہ وارنٹ جاری ہو نے کے باوجود پو لیس کو چکمہ دے کر فرار ہو رہے غنڈہ راہل پر گو لی چلا کر ہنو منت نگر پو لیس گرفتار کر نے میں کامیاب رہی۔

کووڈ پر قابو پانے کے لئے مہا لکشمی لے آ ؤٹ علاقہ میں وار روم کاقیام، کورونا متا ثرین کو فوری علاج کیلئے درکار اقدامات کئے جا ئیں گے:ریاستی وزیرگو پا لیا

ریاستی وزیر برائے آبکاری کے گوپالیا نے کہا کہ شہر میں روزانہ کووڈ معا ملات میں اضافہ کے پیش نظر اس پر قابو پانے کے لئے ریاستی حکومت نے احتیاطی اقدامات کئے ہیں۔

بنگلورو میں کووڈ کے بڑھتے معا ملات، سلیکان سٹی ڈینجر سٹی میں تبدیل ہوتادکھا ئی دے رہا ہے

بنگلورو شہر میں روزانہ کووڈ کے معا ملات میں اضافہ کے پیش نظر سلیکان سٹی ڈینجر سٹی کے طور پر تبدیل ہوتے دکھا ئی دے رہا ہے۔آنے والے دنوں میں شہر میں کووڈ کے معا ملات میں مزید اضافہ کے خدشات ہیں۔کل شہر میں کووڈ کے 23ہزار معاملات درج ہو ئے تھے،جس سے شہریوں میں خوف کا ماحول دکھا ئی ...

کووڈ کی دوسری اور ممکنہ تیسری لہر کے خدشات کے باوجود۔ بی بی ایم پی نے2,589کروڑ روپئے جائیدادا ٹیکس کے طور پر وصول کئے

کووڈ کی دوسری لہر اور ممکنہ تیسری لہر کے درمیان ہی بروہت بنگلور مہا نگر پا لیکے(بی بی ایم پی) نے جاریہ ما لی سال کے9ماہ کے دوران جملہ2,589 کروڑ روپیوں کا جائیداد ٹیکس وصول کیا ہے۔