کرناٹک حکومت تیسری لہر کے لیے مستعد، 20 فیصد بیڈ بچوں کے لیے مختص

Source: S.O. News Service | Published on 25th September 2021, 11:00 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو، 25؍ستمبر (ایس او نیوز؍ایجنسی) داکٹر سدھاکر نے بتایا کہ ماہرین پر مشتمل ٹیکنیکل ایڈوائزری کمیٹی کی تجویز پر بچوں کو کووڈ  کی ممکنہ تیسری لہر کے دوران زیادہ خطرے کے پیش نظر حکومت نے سرکاری اور نجی سطح پر 25870 آکسیجن سپورٹ بیڈ اور 502 پیڈیاٹرک وینٹی لیٹر تیار کیے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ تقریبا 285 پیڈیاٹریشنز، 1250 میڈیکل آفیسرز، 1202 نرسوں کے ساتھ ساتھ 6-7 جولائی کو بھرتی ہونے والے 85 پیڈیاٹریشنز کو کووڈ کی تیسری لہر کے علاج کے حوالے سے خصوصی تربیت بھی دی گئی ہے۔

انہوں نے مزید کہا، "تمام مطلوبہ آلات اور انفراسٹرکچر کو تیار رکھا گیا ہے، ابھی کچھ اور سامان آنا باقی ہے، شاید 15 دن سے تین ہفتوں میں وہ ہسپتالوں میں دستیاب ہو جائیں گے".

کے سودھاکر نے کہا کہ ریاست کے کسی بھی ضلع کے ہسپتالوں میں بستروں کی کمی نہیں ہوگی۔ تاہم ایسی صورت میں ہر ممکن کوشش کی جائیگی کہ بستر مہیا کروائے جائیں۔

ایک نظر اس پر بھی

گلبرگہ: پولیس میں بھرتی کے امتحانات میں بد عنوانی و نقل   نویسی کرنے کے الزام میں 9امیدوار گرفتار

 محکمہ پولیس میں بھرتی سے متعلق منعقد کئے گئے امتحانات میں مائیکرو چپ اور بلیو ٹوتھ آلات کا استعمال کرکے بدعنوانی و نقل کرنے والے 9امیدواروں کو پولیس نے گرفتار کرلیا ہے۔یہ افراد اتوار کے دن محکمہ پولیس میں سیول پولیس کانسٹیبل کی جائیدادوں پر بھرتی کے لئے منعقد کئے جانے والے ...

گلبرگہ میں جہیز ہراسانی سے متاثرہ خاتون کی آگ لگا کر دو بچوں کے ساتھ خودکشی

ایک عورت نے پیر کے دن  پنچ شیل نگر، جیورگی روڈ گلبرگہ میں اپنے مکان میں پنے آپ کو اور اپنے بچوں کو آگ لگادی جس کے نتیجہ میں یہ عورت اوراس کی ایک لڑکی جل کر ہلاک ہوگئے جب کہ اس عورت کا تین سالہ بچہ شدید جھلس گیا  تھا اور اسے ہسپتال میں شریک کروادیا گیا تھا  لیکن آج وہ بھی اپنے ...

بھٹکل : کرناٹک میں پیر سے پہلی تا پانچویں جماعت کے کلاسوں کا ہوا آغاز؛ ریاست میں 90 فیصد اور اُترکنڑا میں 93 فیصد طلبہ کی حاضری؛ زیادہ تر والدین میں خوشی کی لہر

ریاست کرناٹک میں کووڈ لاک ڈاون کی وجہ سے  20  ماہ سے بند  پرائمری اسکولس پیر سے دوبارہ کھل گئے جس کے ساتھ ہی اکثر والدین میں خوشی کی لہر دوڑ گئی ہے۔ ریاست میں    پہلے دن  90 فیصد طلبہ حاضر رہے،اسی طرح ضلع اُترکنڑا میں  طلبہ کی حاضری 93.26 فیصددرج کی گئی۔ 

منگلورو پولس فائرنگ؛ ریاستی حکومت نے پولس کو دی کلین چٹ، کہا؛ کسی بھی پولس اہلکار سے غلطی نہیں ہوئی

ریاست کی برسر اقتدار بی جے پی حکومت نے ہائی کورٹ کو بتایا ہے کہ منگلورو میں شہریت قانون (سی اے اے ،این آر سی) مخالف ترمیمی قانون کے احتجاج کو روکنے کےلئےپولس اہلکاروں کی طرف سے کی گئی فائرنگ میں پولس   سے  کوئی غلطی نہیں ہوئی ہے۔