ایوان میں جے ڈی ایس کے دھرنے کے درمیان اسمبلی اجلاس ملتوی

Source: S.O. News Service | Published on 24th September 2022, 11:13 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو، 24؍ستمبر (ایس او نیوز) شہر کا بی ایم ایس ٹرسٹ عوامی ملکیت ہے۔اس ملکیت کو نجی کرنے کے لئے ریاستی وزیر ڈاکٹر اشوتھ نارائن ذمہ دار ہیں۔مذکورہ ادارہ کو غیر قانونی طریقہ سے نجی ادارہ کرنے والے اشوتھ نارائن کو وزارت سے استعفیٰ دے دینا چاہئے۔اس ادارہ میں مختلف غیر قانونی سرگرمیوں کے لئے بھی اشوتھ نارائن ذمہ دار ہیں۔سابق وزیراعلیٰ ایچ ڈی کمارسوامی نے وزیر اشوتھ نارائن کے استعفیٰ کا مطالبہ کیا ہے۔آج جب اسمبلی اجلاس میں کارروائی کا آغاز ہوا تو جے ڈی ایس اراکین نے اپنے کل کے دھرنے کو ایوان میں جاری رکھا۔

کمارسوامی نے کہا کہ بی ایم ایس ایک تعلیمی ادارہ ہے۔اس کے مقاصد سے ہٹ کر اس ادارہ کو نجی ادارہ میں تبدیل کرکے اشوتھ نارائن نے قانون کی خلاف ورزی کی ہے۔اس ٹرسٹ کے بائی لاس اور ڈیڈ ہزاروں کروڑ لاگت کی یہ عوامی جائیداد کو ہڑپنے بی جے پی حکومت نے اس ٹرسٹ کو نجی ادارہ میں تبدیل کیا ہے۔وزراء بی ایم ایس انجینئرنگ کالج میں اپنے ذاتی مفاد کے لئے سیٹیں ریزرو کروارہے ہیں۔اس ٹرسٹ میں جاری غیر قانونی سرگرمیوں سے متعلق دو افسروں نے حکومت اور وزیراعلیٰ کو خطوط بھی لکھے ہیں۔ لیکن حکومت نے اپنی آنکھ اور کان بند کرلئے ہیں۔

اس دھرنے کے دوران اپوزیشن لیڈر سدارامیا اور وزیر قانون مادھو سوامی نے اسمبلی اسپیکر کو مشورہ دیا کہ دونوں فریقین کو اپنے کمرے میں بلا کر معاملہ حل کریں۔ایوان کی کارروائی10منٹ کے لئے ملتوی کرکے اسپیکر نے ثالثی کرتے ہوئے معاملہ کو حل کرنے کی کوشش کی لیکن وہ ناکام رہے۔ واپس ایوان میں آ کر دھرنا واپس لینے کی جے ڈی ایس اراکین سے اپیل کی لیکن یہ اپیل ناکام رہی۔ایوان میں شور وغل جاری رہا۔ اس پورے معاملے کی جانچ کروانے اور اشوتھ نارائن کے فوری استعفیٰ کا کمارسوامی اور مظاہرین نے مطالبہ کیا۔

دریں اثناء سدارامیا نے کہا کہ ایوان میں جے ڈی ایس اراکین کا دھرنا جاری ہے۔ یہ معاملہ کافی سنجیدہ بھی ہے۔اس دوران ہم ایوان میں بات بھی نہیں کرسکتے۔اس مرحلہ پر اسپیکر وشویشور ہیگڈے کاگیری نے کہاکہ جے ڈی ایس کے دونوں مطالبات پر ایوان میں کچھ کیا نہیں جاسکتا۔اس کے لئے حکومت بھی تیار نہیں ہوگی۔یہ سن کر جے ڈی ایس اراکین نے ایوان میں شور شرابے میں شدت پیدا کردی۔ اس کو دیکھتے ہوئے اسپیکر کاگیری نے اسمبلی اجلاس کو غیر معینہ مدت تک ملتوی کردیا۔

ایک نظر اس پر بھی

منگلورو:کانگریس لیڈر رماناتھ رائے نے کہا؛ سی ٹی روی کے بیان نے بی جےپی کو ننگا کردیا ہے

بی جے پی میں راؤڈی شیٹر وں کی شمولیت کی حمایت میں سی ٹی روی نے جو بیان دیا ہے، اُس بیان نے بی جے پی کو ننگاکردیا ہے۔ ان خیالات کا اظہار  سابق وزیر  اور کے پی سی سی کے نائب صدر بی ، رماناتھ رائی  نے کیا۔

مہاراشٹر-کرناٹک سرحد تنازعہ میں شدت، بیلگاوی میں مہاراشٹر کے ٹرکوں پر پتھراؤ، حالات کشیدہ

کرناٹک اور مہاراشٹر کے درمیان جاری سرحد تنازعہ نے بیلگاوی علاقہ میں حالات کو کشیدہ کر دیا ہے۔ سرحدی علاقہ بیلگاوی میں تشدد کے واقعات پیش آ رہے ہیں اور منگل کے روز تو بیلگاوی کے باگیواڑی میں شدید احتجاجی مظاہرہ دیکھنے کو ملا۔ اس دوران کرناٹک رکشن ویدیکے سے جڑے کارکنان نے ...

’مہاراشٹر کے وزراء نے بیلگاوی میں قدم رکھا تو ہوگی قانونی کارروائی‘، کرناٹک کے وزیر اعلیٰ بسوراج بومئی نے کیا متنبہ

مہاراشٹر اور کرناٹک کے درمیان سرحدی تنازعہ کو لے کر بیان بازی لگاتار بڑھتی جا رہی ہے۔ تازہ بیان کرناٹک کے وزیر اعلیٰ بسوراج بومئی کا سامنے آیا ہے جس میں انھوں نے مہاراشٹر حکومت کو متنبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر ان کے وزراء نے کرناٹک کے بیلگاوی میں قدم رکھنے کی کوشش کی تو ان کے ...

منڈیا : مالا دھاری بھکتوں نے لگائے سری رنگا پٹن جامع مسجد کو ہنومان مندر بنانے کے نعرے - مسجد میں گھسنے کی کوشش پولیس نے کر دی ناکام  

زعفرانی جھنڈے اٹھائے ہوئے ہزاروں  مالا دھاری ہنومان بھکتوں کا جلوس 'سیکیرتھنا یاترا' کی شکل میں ہنومان مندر کی طرف جاتے ہوئے جب تاریخی سری رنگا پٹن جامع مسجد کے سامنے پہنچا تو نوجوان بھکتوں نے اچانک اشتعال انگیزی شروع کر دی اور جامع مسجد کو ہنومان مندر میں بدلنے کے نعرے لگانے ...

مرکزی حکومت کی طرف سے دلت، پسماندہ اور اقلیتی طلباء کا اسکالرشپ ختم کیا جانا انہیں تعلیمی حقوق سے بتدریج محروم کرنے کی حکمت عملی ہے: ایس ڈ ی پی آئی

سوشیل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا کرناٹک کے ریاستی صدر عبدالمجید نے اپنے جاری کردہ اخباری بیان میں کہا ہے کہ مرکزی حکومت کی طرف سے تعلیمی سال 23۔2022سے ایس سی، ایس ٹی، پسماندہ طبقات، اور اقلیتی برادریوں سے تعلق رکھنے والے پہلی سے آٹھویں جماعت کے تمام طلباء کو کوئی اسکالرشپ ختم ...