کرناٹک میں ہفتہ وار کووڈ معاملات میں بتدریج کمی درج

Source: S.O. News Service | Published on 21st September 2021, 11:43 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو ،21؍ستمبر (ایس او  نیوز)ریاست کرناٹک  میں کووڈ معاملات میں بتدریج کمی ہوتی جارہی ہے۔ گذشتہ 8ہفتوں سے یہ کمی ہورہی ہے۔ گذشتہ7دن کے دوران ریاست میں 6,131 معاملات درج ہوئے جو اس سے پہلے والے ہفتے کے 6,571کے مقابلہ 6.6 فی صد کم ہیں۔ معاملات میں اس کمی کے باوجود ایک خوف پیدا ہوگیا تھا جب6دن کی کمی کے بعد اچانک 15 تا 17ستمبر ان کی تعداد روزانہ ایک ہزار سے بڑھنے لگی تھی۔ لیکن ہفتہ وار اوسط کے حساب سے یہ کمی درج ہوئی۔ گذشتہ ہفتہ ریاستی حکومت نے 9.78لاکھ ٹسٹ رکھے جبکہ اس سے پہلے والے ہفتہ کے دوران ٹسٹس کی یہ تعداد 9.84لاکھ تھی۔رکھے گئے ٹسٹس کی تعداد کے اوسط میں گذشتہ 30ماہ کے دوران 20.4فی صد کمی آئی ہے۔کمی کی ایک وجہ یہ بھی بتائی جاتی ہے کہ کچھ دنوں میں معاملات کم درج ہوئے جن میں اتوار کا دن بھی شامل ہے۔ اتوار783معاملات درج ہوئے جن میں صرف بنگلورو کے 267تھے جو ریاست کا 34فی صد ہے۔شہر میں معاملات کم ہونے کی شرح گذشتہ 30 میں 8.6رہی۔ اس کے بعد سب سے زیادہ معاملات جنوبی کنڑا (97)، اڈپی (82) اور میسورو(69)اضلاع میں دیکھے گئے۔ اسی دوران ویکسین لگانے کا سلسلہ بھی پوری رفتار سے جاری ہے۔ گذشتہ ہفتہ ریاست کی ویکسی نیشن شرح 3.5 سے بڑھ کر 75.11 فی صد ہو گئی۔محکمہ صحت اور خاندانی بہبود کی جانب سے جاری اعداد و شمار کے مطابق یہ بہت بڑی بات ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

کرناٹکا کے وزیرا علیٰ کے عمل کا ردعمل والے غیر ذمہ دارانہ بیان کےخلاف ریاست بھر میں احتجاج : بنگلور میں منعقدہ احتجاجی مظاہرے میں وزیراعلیٰ اورہوم منسٹر کو دستور کی یاد دھانی کرائی گئی

کرناٹک کے وزیر اعلیٰ بسوراج بومائی کے عمل کا ردعمل والے غیر ذمہ دارانہ بیان کے خلاف بنگلور کے میسور بینک سرکل پر احتجاجی دھرنا دیتے ہوئے مظاہرہ کیا گیا تو وہیں مختلف اضلاع میں کمشنروں کو میمورنڈم دیتےہوئے وزیر اعلیٰ کو اپنا بیان واپس لینے کا مطالبہ کیا گیا۔

مسلمانوں میں نکاح معاہدہ ہے نہ کہ ہندو شادی کی طرح رسم، طلاق کے معاملے پرکرناٹک ہائی کورٹ کااہم تبصرہ

کرناٹک ہائی کورٹ نے اہم تبصرہ کرتے ہوئے کہاہے کہ مسلمانوں کے یہاں نکاح ایک معاہدہ ہے جس کے کئی معنی ہیں ، یہ ہندو شادی کی طرح ایک رسم نہیں ہے اور اس کے تحلیل ہونے سے پیدا ہونے والے حقوق اور ذمہ داریوں سے دور نہیں کیا جاسکتا۔

کرناٹک سے روزانہ 2100کلو بیف گوا کو سپلائی ہوتاہے : وزیر اعلیٰ پرمود ساونت

بی جے پی کی اقتدار والی ریاست کرناٹک سے روزانہ 2000کلوگرام سے زائد جانور اور بھینس کا گوشت (بیف)گوا کو رفت ہونےکی جانکاری بی جے پی اقتدار والی ریاست گوا کے وزیرا علیٰ پرمود ساونت نے دی۔ وہ گوا ودھان سبھا کو تحریری جواب دیتےہوئے اس بات کی جانکاری دی ۔