کرناٹک میں 15 اسمبلی سیٹوں پر 248 امیدواروں نے داخل کی پرچہ نامزدگی

Source: S.O. News Service | Published on 19th November 2019, 8:18 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،19/نومبر(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا) کرناٹک میں 15 اسمبلی سیٹوں پر پانچ دسمبر کو ہونے والے ضمنی انتخابات کے لئے کل 248 امیدواروں نے پرچہ نامزدگی داخل کئے ہیں۔الیکشن افسر نے یہ معلومات دی۔کرناٹک کے چیف الیکشن افسر کی جانب سے بتائے گئے اعداد و شمار کے مطابق 152 امیدواروں نے پرچہ نامزدگی داخل کرنے کے آخری دن یعنی پیر کو 237 نامزدگی داخل کئے۔پیر تک کل 248 امیدواروں نے پرچہ نامزدگی داخل کئے تھے جن میں سے 56 امیدوار قومی پارٹی کے ہیں، 17 امیدوار ریاست کی پارٹیوں سے ہیں۔وہیں 47 امیدوار رجسٹرڈ غیر منظورشدہ پارٹیوں سے ہیں اور 128 آزاد امیدوار ہیں۔سب سے زیادہ 28 امیدواروں نے شیواجی نگر علاقے سے پرچہ نامزدگی داخل کی ہے۔اس کے بعد 27 امیدواروں نے ہوسکوٹے سیٹ سے نامزدگی داخل کی ہے۔پرچہ نامزدگی کی جانچ آج یعنی منگل کو ہوگی اور نام واپس لینے کی آخری تاریخ 21 نومبر ہے۔ووٹوں کی گنتی نو دسمبر کو ہوگی۔

ایک نظر اس پر بھی

اُلال کے رکن اسمبلی یوٹی قادر سے ایس ڈی پی آئی کا مطالبہ

جنوبی کینرا بنٹوال تعلقہ کے سجی پانڈو دیہات میں ہر سال بارش کے موسم میں گزشتہ 30 برسوں سے لوگوں کو ہمیشہ  پریشانی کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ یہ علاقہ اُلال کے رکن اسمبلی یوٹی قادر کے حلقہ میں آتا ہے اور یہاں مسلمانوں کی کثیر آباد ی ہے۔

منگلورو۔کاسرگوڈ سرحد پر مسافروں کیلئے پریشانی

ریاست میں گزشتہ ماہ اپریل سے ہی کورونا وائرس پھیلنے کے نتیجہ میں کیرالہ ۔ کرناٹک کی سرحد پر واقع کاسرگوڈ اور منگلورو کے درمیان روازنہ ملازمت اور تعلیم کے سلسلہ میں آنے جانے والے لوگوں کیلئے ہر دن نت نئی پریشانیوں کا سامنا کرناپڑرہا ہے۔

کرناٹک میں کووڈ۔19 کمیونٹی پھیلاؤ کا کوئی امکان نہیں، مرکزی ٹیم کا چیف منسٹر و عہدیداروں کے ساتھ تبادلہ خیال؛ سری راملو کی پریس کانفرنس

کرناٹک نے منگل کے روز مرکز ی ٹیم کو بتایا کہ ریاست میں کووڈ۔19 کے کمیونٹی پھیلاؤ کا کوئی امکان نہیں ہے۔ریاستی وزیر صحت و خاندانی بہبود بی سری راملو نے میڈیا سے کہا ’’ ہم نے یہ واضح کردیا ہے کہ یہاں کمیونٹی پھیلاؤ کا امکان نہیں ہے۔ ہم ، دوسرے اور تیسرے مرحلہ کے درمیان ہیں‘‘۔

کرناٹک میں کورونا کا قہر جاری؛ پھر 1498 نئے معاملات، صرف بنگلور سے ہی سامنے آئے 800 پوزیٹیو

کرناٹک میں کورونا کا قہر جاری ہے اور ریاست  میں روز بروز کورونا کے معاملات میں اضافہ دیکھا جارہا ہے، ریاست کی راجدھانی اس وقت  کورونا کا ہاٹ اسپاٹ بنا ہوا ہے جہاں ہر روز  سب سے زیادہ معاملات درج کئے جارہے ہیں۔ آج منگل کو پھر ایک بار کورونا کے سب سے زیادہ معاملات بنگلور سے ہی ...

کورونا: ہندوستان میں ’کمیونٹی اسپریڈ‘ کا خطرہ، اموات کی تعداد 20 ہزار سے زائد

  ہندوستان میں کورونا انفیکشن کے بڑھتے معاملوں کے درمیان کمیونٹی اسپریڈ یعنی طبقاتی پھیلاؤ کا  اندیشہ بڑھتا نظر آرہا ہے۔ بالخصوص کرناٹک  میں کورونا انفیکشن کے کمیونٹی اسپریڈ کا اندیشہ ظاہر کیا جارہا ہے ۔ کرناٹک کے علاوہ گوا، پنجاب و مغربی بنگال کے نئے ہاٹ اسپاٹ بننے کے ...

منگلورو:گروپور میں منڈلارہا ہے مزید پہاڑی کھسکنے کا خطرہ۔ قریبی گھروں کو کروایا گیاخالی۔ مکینوں میں مایوسی اور دہشت کا عالم

گروپور میں اتوار کے دن بنگلے گُڈے میں پہاڑی کھسکنے سے جہاں  تین  مکان زمین بوس اور دو بچے، صفوان (16سال) اور سہلہ (10سال) جاں بحق ہوگئے تھے وہاں پر مزید پہاڑی کھسکنے کا خطرہ لوگوں کے سر پر منڈلا رہا ہے۔