موب لنچنگ کے خلاف پی ایم مودی کو خط لکھنے والوں کی حمایت میں آئے کمل ہاسن

Source: S.O. News Service | Published on 9th October 2019, 1:35 PM | ملکی خبریں |

چنئی،9؍اکتوبر (ایس او نیوز؍ایجنسی) اداکار سے سیاستداں بنے کمل ہاسن نے منگل کو ملک کی 49 مشہور ہستیوں کے خلاف بہار میں داخل غدار وطن کے مقدمہ کو ختم کرنے کی عدالت سے اپیل کی۔ انھوں نے ٹوئٹ کر کہا کہ ’’ایک شہری ہونے کے ناطے میں گزارش کرتا ہوں کہ ہماری اونچی عدالتیں جمہوریت کے ساتھ انصاف کرنے کی سمت میں قدم اٹھائیں اور بہار میں دائر مقدمے کو ختم کریں۔‘‘

اپنے ٹوئٹ میں کمل ہاسن نے آگے لکھا کہ ’’وزیر اعظم خیرسگالی والا ہندوستان چاہتے ہیں۔ پارلیمنٹ میں دیا گیا ان کا بیان اس کی تصدیق کرتا ہے۔ ریاست اور اس کے قانون کو کیا خط اور جذبات کی قدر نہیں کرنی چاہیے؟ میرے 49 ساتھی وطن سے غداری کے ملزم بنائے گئے ہیں، یہ وزیر اعظم کی امیدوں کے برعکس ہے۔‘‘ ان کا اشارہ ملک میں پیٹ پیٹ کر قتل کے واقعات پر وزیر اعظم کو خط لکھنے والے فلمکار منی رتنم، اداکارہ ریوتی اور مورخ رام چندر گوہا سمیت 49 لوگوں کے خلاف بہار کے ایک تھانہ میں ایف آئی آر درج کیے جانے کی طرف تھا۔

اس سے قبل ڈی ایم کے سربراہ ایم کے اسٹالن نے بھی اس معاملے پر حیرانی ظاہر کرتے ہوئے کہا تھا کہ ’’جمہوریت اور عدم برداشت برقرار رکھنے کو کہنا وطن سے غداری کیسے ہو سکتا ہے؟‘‘ اسٹالن نے یہ بھی کہا تھا کہ گوہا، ریوتی اور منی رتنم جیسے لوگوں کو غدار وطن کی شکل میں مشتہر کیا جانا ناقابل قبول ہے۔ اسٹالن نے ان لوگوں کے خلاف ایف آئی آر درج کیے جانے کی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ یہ لوگوں کے دل میں اندیشہ اور خوف پیدا کرتا ہے کہ وہ جمہوری ملک میں رہتے ہیں یا نہیں۔

غور طلب ہے کہ ملک میں بڑھتی موب لنچنگ کے واقعات پر پی ایم مودی کو کھلا خط لکھنے والے رام چندر گوہا، انوراگ کشیپ، منی رتنم اور اپرنا سین سمیت تقریباً 49 مشہور ہستیوں کے خلاف 3 اکتوبر کو بہار کے مظفر پور کی ایک عدالت کے حکم پر غدار وطن کا معاملہ درج کیا گیا ہے۔ مقامی وکیل سدھیر کمار اوجھا کی جانب سے چیف جوڈیشیل مجسٹریٹ کی عدالت میں دو مہینے پہلے اس معاملے میں ایک عرضی داخل کی گئی تھی، جس پر سماعت کرنے کے بعد سی جے ایم سوریہ کانت تیواری کے حکم پر یہ معاملہ درج کیا گیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

حکومت ریزرویشن کو نویں شیڈیول میں شامل کرے: مایاوتی

بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی) کی صدر مایاوتی نے درج فہرست ذات و قبائل اور دیگر پسماندہ طبقوں (ایس سی، ایس ٹی، اوبی سی) کے لئے ریزرویشن کی سہولت کو آئین کی نویں شیڈیول میں شامل کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے اتوار کو کہا کہ اس سے ان طبقوں کو تحفظ مل سکے گا۔

عمران حسین، جنہوں نے نوجوان لیڈر کے طور پر اپنی پہچان بنائی

 عام آدمی پارٹی کے بلیماران اسمبلی حلقے سے رکن اسمبلی عمران حسین کالج کے دنوں سے ہی سماج کے مظلوم اور محروم طبقے کے درمیان بیداری پھیلانے میں سرگرم رہے اور ضرورت مند لوگوں کو سماجی انصاف دلانے کے لئے ہر ممکن کوشش کی۔