گیارہ ہفتوں بعد مسلمانوں نے مساجد میں ادا کی جمعہ کی نماز؛ بھٹکل میں مسجدیں نمازیوں سے رہیں فل، عمر رسیدہ لوگوں اور بچوں کو بھیجا گیا واپس

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 12th June 2020, 9:11 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل 12/جون (ایس او نیوز) کورونا وباء کے چلتے  ملک بھر میں جاری کئے گئے لاک ڈاون کے بعد جہاں تمام عبادت گاہیں بند کردی گئی تھیں ، اسی طرح گیارہ ہفتوں سے  مسلمان جمعہ کی نماز سے بھی محروم ہوگئے تھے،  لاک ڈاون میں ڈھیل دئے جانے کےبعد آج ملک کے مختلف علاقوں میں نماز جمعہ ادا کی گئیں۔ بھٹکل میں بھی نماز جمعہ میں مسلمانوں نے پورے جوش  وخروش کے ساتھ حصہ لیا اور اکثر مساجد وقت سے پہلے ہی فُل نظر آئیں۔ مساجد میں اللہ سے تمام عوام کو   کورونا وباء سے پناہ دینے اور  اس بیماری سے محفوظ رکھنے   کےلئے دعائیں مانگی گئیں۔

دوپہر قریب بارہ بجے تمام جمعہ مساجد کے گیٹ کھولے گئے تھے،ایک دوسرے سے دوری  برقرار رکھتے ہوئے صفوں کو قائم کرنے  پہلے سے مساجد میں  مارکنگ ڈالی گئی تھی،  اس بناء پر آدھے پونے گھنٹے کے اندرہی پوری مساجد فل ہوگئیں، جس کے  بعد بعض لوگوں کو واپس جاتے ہوئے دیکھا گیا تو وہیں بعض لوگ  جو اپنے ساتھ مصلیٰ (جائے نماز) لے کر آئے تھے،  ملنے والی جگہ پر ہی مصلیٰ بچھا کر  نماز میں شریک ہوئے۔ بعض مساجد میں عمر رسیدہ لوگوں کو واپس بھیجا گیا تو بعض مساجد میں بارہ اور تیرہ سال کے لڑکوں کو بھی چھوٹے بچے سمجھ کر واپس گھر بھیجا گیا۔ بعض کو ماسک پہن کر نہ آنے پر بھی واپس بھیجا گیا اور اُن سے کہا گیا کہ وہ ماسک پہن کر ہی مسجد میں داخل ہوسکتےہیں۔

زیادہ تر لوگ باوضو ہوکر اور جائے نماز ساتھ لے کر ہی مساجد میں جمعہ کی نماز میں شریک ہوئے اور خطیب نے مختصراً خطبہ پیش کیا۔بھٹکل کی تمام مساجد میں  تھرمل اسکیننگ کا انتظام کیا گیا تھا اور والنٹیرس کو  اسکیننگ کی ذمہ داری سونپی گئی تھی۔ 

اُدھر مینگلور سے موصولہ  اطلاع کے مطابق   زینت بخش مسجد (بندر) میں جمعہ نماز میں دعائے قنوت بھی پڑھی گئی، جبکہ ضلع اُڈپی کے گنگولی میں  فاصلہ رکھتے ہوئے نماز پڑھنے سے جگہ کی قلت کو دیکھتے ہوئے  دس مساجد میں جمعہ کی نماز ادا کی گئیں۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل کا نوجوان اُدیاور میں ہوئے سڑک حادثہ میں شدید زخمی؛ علاج کے لئے مالی تعاون کی اپیل

بھٹکل مخدوم کالونی کا ایک نوجوان اُڈپی کے اُدیاور میں سڑک حادثہ میں شدید زخمی ہوا ہے اور اسے منی پال کستوربا اسپتال شفٹ کیا گیا ہے، نوجوان کی مالی حالت کمزور ہونے  کی وجہ سے علاج کے لئے  قریب تین لاکھ  روپیوں کی فوری ضرورت ہے۔ نوجوان کی شناخت سمیرسوکیری (34) کی حیثیت سے کی گئی ...

دبئی میں ایک سواری نے ایک شخص کو رونڈ ڈالا؛ مہلوک ایشیائی شخص کی شناخت ہنوز نہیں ہوپائی؛ پولس نے عوام سے کی تعاون کی اپیل

یہاں ایک سواری کی ٹکر میں ایک شخص ہلاک ہوگیا مگر اُس شخص کی شناخت ابھی تک معمہ بنی ہوئی ہے اور یہ کون ہے، کس ملک یا کس  شہر سے ہے کچھ پتہ نہیں چل پایا ہے۔ پولس کا کہنا ہے کہ یہ ایشیاء کے  کسی ملک سے تعلق رکھتا ہے۔

دبئی :شیرورگرین ویلی اسکول کے صدر ڈاکٹر سید حسن کی دختر دانیا کو ملا شیخہ فاطمہ بنت مبارک ایوارڈ آف ایکسلینس‘

عرب امارات میں بہترین ہمہ جہتی تعلیمی کارکردگی کے لئے طالب علموں کو دیا جانے والا ’’ہَرہا ئنیس شیخہ فاطمہ بنت مبارک ایوارڈ آف ایکسلینس“ امسال دانیا حسن کو تفویض کیا گیا ہے جس کا تعلق  بھٹکل کے پڑوسی علاقہ شرور سے ہے۔

بھٹکل میں الحاج محی الدین مُنیری کے نام سے موسوم ہائی ٹیک ایمبولنس کا خوبصورت افتتاح

   یہاں نوائط کالونی میں  دبئی کے معروف تاجر جناب عتیق الرحمن  مُنیری کی طرف سے ان کے والد مرحوم الحاج محی الدین مُنیری کے نام سے منسوب ایک ہائی ٹیک ایمبولنس کا خوبصورت افتتاح عمل میں آیا جس میں بھٹکل کی سرکردہ شخصیات سمیت علماء و عمائدین   موجود تھے۔