لیز پر دیے گئے اردنی علاقوں میں اسرائیلیوں کے داخلے پر پابندی

Source: S.O. News Service | By INS India | Published on 9th November 2019, 7:24 PM | عالمی خبریں |

مقبوضہ بیت المقدس،9نومبر(آئی این ایس انڈیا)اردنی حکام نے اسرائیلی عہدیداروں کو بتایا ہے کہ عمان نے تل ابیب کو لیز پر دیئے گئے علاقوں ’الباقورہ‘ اور ’الغمر‘ میں کل اتوار سے اسرائیلیوں کے داخلے پر پابندی عائد کر دی ہے۔خیال رہے کہ ان دونوں علاقوں کو اسرائیلی ریاست نے اردن سے 1994ء میں ایک معاہدے کے تحت لیز پر لیا تھا۔سنہ 1994 میں دستخط کیے گئے اردنی - اسرائیلی امن معاہدے کی دفعات میں سے باقورا اور غمر کے اردنی علاقوں کو 25 سال کے لیے اسرائیل کو دیا گیا تھا اور یہ مدت 26 اکتوبر 2019 کو ختم ہوگئی ہے۔گذشتہ سال اردن نے اسرائیلی حکومت کو مطلع کیا تھا کہ عمان باقورا اور الغمر کے لیز کے معاہدے کی تجدید نہیں کرے گی۔ذرائع کے مطابق اردنی حکام کا کہنا ہے کہ انہوں نے اسرائیلی حکام کو بتا دیا ہے کہ کل اتوار 10 نومبر سے الباقورہ اور الغمر میں اسرائیلیوں کے داخلے پرپابندی عاید کردی ہے۔عبرانی ویب سائٹ''I24'' کے مطابق اردن نے اسرائیل کی طرف سے الباقورہ اور الغمر کی لیزمیں توسیع کی اسرائیلی درخواست مسترد کردی ہے۔ اُردن کا کہنا ہے کہ اسرائیل کی طرف سے الباقورہ اور الغمر میں اسرائیلی قبضہ برقرار رہنا خطرناک ہوسکتا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

لیبیا : فائز السراج اکتوبر کے اختتام تک اقتدار سے دست بردار ہونے کے لیے تیار

لیبیا میں وفاق حکومت کی صدارتی کونسل کے سربراہ فائز السراج نے اعلان کیا ہے کہ وہ آئندہ ماہ اکتوبر کے اختتام تک اقتدار سے دست بردار ہونے اور اپنی ذمے داریاں ایگزیکٹو اتھارٹی کے حوالے کرنے کی خواہش رکھتے ہیں۔ ...

سمندری طوفان 'سیلی' امریکی ساحل سے ٹکرا گیا، شدید بارشوں کی پیشن گوئی

سمندری طوفان 'سیلی' بدھ کی صبح امریکی ریاست الاباما کے ساحلی قصبوں سے ٹکرا گیا۔ اپنے ساتھ تند و تیز ہوائیں اور شدید بارشیں لانے والے طوفان کے متعلق موسمیات کے ماہرین نے خبردار کیا ہے کہ وہ خلیجی ساحل کے کئی علاقوں میں بڑے پیمانے پر تباہی اور سیلاب لا سکتا ہے۔ ...

امن مذاکرات کے باوجود افغانستان میں طالبان کے حملوں میں 17 ہلاکتیں

دوحہ میں افغان حکومت اور طالبان کے وفود کے درمیان امن مذاکرات کے دوران طالبان افغانستان کے اندر بدستور اپنی عسکری کارروائیاں جاری رکھے ہوئے ہیں۔ ملک کے شمالی حصے میں گزشتہ 24 گھنٹوں میں مختلف واقعات میں کم از کم 17 افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔ ...