باندی پورہ ریپ کیس: سری نگر میں سکیورٹی فورسز اور طالب علموں کے درمیان جھڑپ، پھینکے گئے پتھر

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 15th May 2019, 11:31 AM | ملکی خبریں |

سرینگر،15/ مئی (ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا) جموں و کشمیر میں باندی پورہ ضلع کے سنبل علاقے میں 3 سال کی بچی کے ساتھ ریپ کے خلاف وادی میں ہنگامہ جاری ہے۔سری نگر کے امر سنگھ کالج کے طالب علم واقعہ کی مخالفت میں مظاہرہ کر رہے تھے۔اسی دوران طلبہ اور حفاظتی دستوں کے درمیان جھڑپ ہو گئی۔طالب علموں کومظاہرے سے روک رہی پولیس پر پتھر بازی کی گئی۔طلبہ نے جھڑپ کے دوران ساکٹ بھی توڑ دیں۔اس سے پہلے پیر کو بھی جموں و کشمیر اتحادالمسلمین کے رکن مولانا مسرور عباس انصاری (حریت رہنما عباس انصاری کے بیٹے) کی قیادت میں واقعہ کی مخالفت میں مظاہرے ہوئے۔سرینگر کے بیشتر حصوں میں بند دیکھا گیا،کئی مقامات پر احتجاجی مظاہروں پر بہت سے دیگر افراد زخمی ہوئے، جن میں سے کچھ شدید زخمی ہوئے ہیں۔پولیس نے کہا کہ جھڑپوں کے دوران 47 سیکورٹی زخمی ہو گئے۔بتایا جا رہا ہے کہ مظاہرے کے دوران سیکورٹی فورسز پر پتھر پھینکے گئے جس کی وجہ سے وہ زخمی ہوئے۔یہ واقعات مرگڈ، چینابل، ہرناتھ، سگھپورا، جھیل پل، کرپالپرا پیین اور ہاجیویرا علاقوں میں ہوئے۔باندی پورا میں 3 سال کی بچی کے ساتھ ریپ کے خلاف مظاہرہ، دھرنا اور جھڑپ کا سلسلہ جاری ہے۔بتایا جا رہا ہے کہ ملزم اسکول میں بچی کو ٹافی کے بہانے ٹوائلٹ میں لے گیا اور وہاں اس کے ساتھ ریپ کیا۔اس معاملے میں اسکول پرنسپل نے ملزم کی عمر بھی غلط بتائی جس کی وجہ سے انہیں بھی گرفتار کر لیا گیا ہے۔بتایا جا رہا ہے کہ بچی جہاں رہتی ہے وہیں کے ایک مقامی نوجوان نے اسے ٹافی کھلانے کی بات کہی،وہ اس ٹافی دلانے کے بہانے ایک اسکول کے اندر لے گیا اور وہاں کے ٹوائلٹ میں بچی کو اپنی ہوس کا شکار بنایا۔پولیس نے ملزم نوجوان کو پہلے ہی گرفتار کر لیا تھا۔واقعے کی تحقیقات کے لئے ایک خصوصی تفتیشی ٹیم کا قیام کیا گیا ہے۔پولیس نے ملزم کی عمر کے بارے میں غلط معلومات دینے کے لئے اسکول کے پرنسپل کو بھی گرفتار کیا ہے۔حکام نے لوگوں سے اپیل کی ہے کہ وہ مجرمانہ کارروائیوں کو ایک فرقہ وارانہ رنگ نہ دیں۔اس معاملے میں جموں و کشمیر کے گورنر ستیہ پال ملک نے حیرانی ظاہر کرتے ہوئے اسے سنگین جرم قرار دیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

مہاراشٹر الیکشن: خواتین ریزرویشن کی بات کرنے والی پارٹیاں خود خواتین کو نہیں دے رہیں حق

مہاراشٹر کے مراٹھواڑہ کی 46 اسمبلی سیٹوں کے لئے 21 اکتوبر کو ہونے والے انتخابات کے واسطے کل 676 امیدواروں میں سے صرف 30 خواتین امیدوار انتخابی میدان میں ہیں جس سے واضح ہوجاتا ہے کہ ایک بار پھر سبھی سیاسی جماعتوں نے خواتین كو 33 فیصد ریزرویشن دینے کا وعدہ پورا نہیں کرپائی ہیں۔

حکومت کی غلط پالیسیوں کی وجہ سے ملک میں کساد بازاری: سیتا رام یچوری

کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا مارکسسٹ (سی پی آئی ایم) کے جنرل سکریٹری سیتا رام یچوری نے بدھ کے روز کہا کہ نوٹ بندی اور’ اشیاء اور خدمات ٹیکس‘ (جی ایس ٹی) جیسی غلط پالیسیوں کی وجہ سے ہی آج ملک میں اقتصادی مندی کادور آیا ہے اور بڑھتی مہنگائی سے عوام پریشان ہیں۔

کساد بازاری پر حکومت نے ابھیجیت بنرجی کی بات نہیں سنی: چدمبرم

کانگریس کے سینئر لیڈر اور سابق وزیر خزانہ پی چدمبرم نے آج حکومت کو نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ نوبل انعام سے سرفراز ماہر اقتصادیات ابھیجیت بنرجی نے جب اقتصادی بحران کے سلسلے میں آگاہ کیا تھا تو حکومت میں کسی نے ان کی بات ہی نہیں سنی۔

حکومت کا رپورٹ کارڈ پارلیمان سے قبل آرایس ایس ایک کے سامنے پیش ہوتا ہے: اشوک گہلوت

بی جے پی حکومت آرایس ایس کے اشارے پرکام کر رہی ہے۔ حکومت کا رپوریٹ کارڈ پارلیمنٹ میں پیش کئے جانے سے قبل آر ایس ایس سربراہ کے سامنے پیش کیا جاتا ہے۔ بی جے پی حکومت کے دور میں ملک کی جمہوریت و آئین پر خطرہ منڈلا رہا ہے، ووٹ کی طاقت کے استعمال سے جمہوریت کو بچانے کا یہی وقت ہے۔ یہ ...

مودی پی ’ایم سی بینک‘ سے رقم نکالنے پر عائد پابندی ہٹا کر دکھائیں، کانگریس کا چیلنج

  کانگریس نے پنجاب اور مہاراشٹر کو آپریٹو (پی ایم سی) بینک گھپلے کی وجہ صدمے میں آئے کئی اکاؤنٹ ہولڈروں کی موت پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے وزیر اعظم نریندر مودی کو چیلنج کیا ہے کہ اگر ان میں ہمت ہے تو وہ 24 گھنٹے کے اندر بینک سے رقم نکالنے پر عائد پابندی ہٹانے کا اعلان کریں۔

بابری مسجد ملکیت مقدمہ: سپریم کورٹ میں حتمی بحث آج ختم، فیصلہ محفوظ۔ رام للا کے وکیل کی طرف سے پیش کردہ نقشہ ڈاکٹر راجیو دھون نے کیوں پھاڑا ؟ کیا ہے پورا معاملہ ؟

بابری مسجد رام جنم بھومی ملکیت تنازعہ معاملہ میں آج بالآخر سپریم کورٹ نے فریقین کے دلائل کی سماعت کے بعد فیصلہ محفوظ کرلیا اور فریقین کو حکم دیا کہ وہ تین دن کے اندر اپنے تحریری جوابات داخل کردیں نیز عدالت نے فریقین سے سپریم کورٹ کو حاصل خصوصی اختیارات پر مشورہ بھی طلب کیا ہے۔