دیوے گوڈا نے بی جے پی کی حمایت کا واضح اشارہ دیا ضمنی انتخاب بی جے پی ہار بھی گئی تو حکومت کو خطرہ نہیں

Source: S.O. News Service | Published on 12th November 2019, 10:37 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،12؍نومبر(ایس او  نیوز) ریاست میں ایک او ر بار بی جے پی اور جے ڈی ایس کے درمیان مفاہمت کے واضح اشارے دیتے ہوئے سابق وزیر اعظم اور جے ڈی ایس سربراہ ایچ ڈی دیوے گوڈا نے کہا ہے کہ ضمنی انتخابا ت کا نتیجہ جو بھی ہو لیکن ریاست میں بی جے پی حکومت کے استحکام کو متاثرہونے نہیں دیا جائے گا۔ انہوں نے کہا ہے کہ ضمنی انتخابات کے بعد بی جے پی حکومت کو کسی بھی طرح کے خطرے کا کوئی امکان نہیں۔ ریاستی اسمبلی کے اپوزیشن لیڈر سدارامیا کے اس دعوے پر کہ ضمنی انتخابات میں کانگریس زیادہ سیٹوں پر کامیابی حاصل کرے گی اور بی جے پی حکومت کا گرنا طے ہے دیوے گوڈا نے کہا کہ ایسی صورت میں بھی بی جے پی حکومت مستحکم رہے گی۔ ریاست کی بدلی ہوئی سیاسی صورتحال میں دیوے گوڈا اور کمارسوامی نے جس طرح بی جے پی کے تئیں ہمدردی ظاہر کرنے کا سلسلہ شروع کیا ہے اسے دیکھتے ہوئے اس امکان کو خارج نہیں کیا جا سکتا کہ ضمنی انتخابات میں اگر بی جے پی کا مظاہرہ ناقص رہا تو جے ڈی ایس اس حکومت کو بچانے میں کلیدی رول ادا کرسکتی ہے۔ ریاست میں وسط مدتی انتخاب کے امکان کو مسترد کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ جن15اسمبلی حلقوں میں ضمنی انتخابات ہونے جا رہے ہیں وہاں پارٹی کی طرف سے امیدوار کھڑے کئے جائیں گے لیکن پانچ حلقوں میں جے ڈی ایس کا مقا بلہ انتہائی سنجیدہ اور جیت کے لئے ہوگا۔ باقی دس حلقوں میں پارٹی اپنے وجود کے لئے امیدوار میدان میں اتارے گی۔ انہوں نے کہا کہ ریاست بھر میں وہ پارٹی کو مضبوط کرنے کے لئے متحرک ہیں۔ انہوں نے اس امکان کو بھی مسترد کردیا کہ صمنی انتخابات میں اگر بی جے پی کو اکثر یت نہ مل سکی تو دوبارہ کانگریس اور جے ڈی ایس کے درمیا ن اتحاد ہو سکتا ہے۔انہوں نے کہا کہ بار بار دھوکہ کھانے کے بعد اب کانگریس کے ساتھ کسی بھی طرح کی مفاہمت کا سوال ہی نہیں اٹھتا۔

ایک نظر اس پر بھی

مرکزی حکومت کے خلاف 8/جنوری کو ملک گیر ہڑتال کا اعلان

آل انڈیا اسٹوڈنٹس فیڈریشن (اے آئی ایس ایف) نے تعلیم، روزگار، خواتین کے حقوق کی پامالی، معاشی شعبہ میں گراوٹ اوربے روزگاری کے مسئلہ کو حل کرنے میں ناکام مرکزی حکومت کے خلاف 8/جنوری کو ملک گیر ہڑتال کا اعلان کیا ہے-

شہریت ترمیمی قانون کے خلاف ہلیال میں دیا گیا میمورنڈم

مرکزی حکومت کی جانب سے متنازع شہریت ترمیمی بل منظور کیے جانے کے خلاف ہلیال میں جمیت العلماء الہند ضلع کاروارکے پرچم تلے مسلمانوں اور غیر مسلم ایس سی / ایس ٹی لیڈروں نے مشترکہ طور پر تحصیلدار کی معرفت سے صدر ہند کو میمورنڈم پیش کیا۔

شہریت ترمیمی بل کے خلاف بنگلورو میں کرناٹکامسلم متحدہ محاذ کے زیر اہتمام ملّی و سماجی تنظیموں کا زبردست احتجاجی مظاہرہ

سماج کو مذہبی بنیادوں پر تقسیم کرنے والے مرکزی حکومت کے شہریت ترمیمی بل (سی اے بی) کے خلاف بنگلورو میں کرناٹکا متحدہ محاذ کے زیر اہتمام دوپہر 12بجے ٹاؤن ہال کے پاس ایک زبردست احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔