ملازمت پیشہ خواتین کے چشمہ لگانے پر پابندی

Source: S.O. News Service | By INS India | Published on 9th November 2019, 7:24 PM | عالمی خبریں |

ٹوکیو،9نومبر(آئی این ایس انڈیا) جاپان کی مختلف کمپنیوں نے اپنے دفاتر میں کام کرنے والی خواتین کے لیے لباس کے قوانین نافذ کردیے جس کے تحت ڈیوٹی کے دوران چشمہ لگانے اور ہیل والی سینڈل پہننے پر پابندی ہوگی۔غیر ملکی میڈیا رپورٹ کے مطابق کمپنیوں نے یہ فیصلہ اچھا تاثر پیش کرنے کی وجہ سے کیا، پابندی عائد ہونے کے بعد جاپان میں سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر اس اقدام کے خلاف شدید احتجاج کیا گیا۔رپورٹ کے مطابق کمپنیوں نے لباس کے قوانین نافذ کردیے جس کے خلاف خواتین سراپا احتجاج ہیں، نئے قواعد کے مطابق ملازمت پیشہ خواتین ہیل والی سینڈل پہن کر بھی دفتر نہیں آسکتیں۔ملازمت پیشہ جاپانی خواتین نے ٹویٹر پر ہیش ٹیگ بھی چلایا جس میں کمپنیوں سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ وہ فی الفور اس پابندی کو ختم کریں۔ ایک خاتون صارف نے لکھا کہ شاید ہمارے چہرے چشمہ لگا کر زیادہ غصے والے نظر آتے ہیں مگر یہ ہم شوق سے نہیں لگاتے بلکہ مجبوری میں پہنتے ہیں۔جاپان میں انسانی حقوق کے لیے کام کرنے والی رہنما کین ڈوئی کا کہنا تھا کہ اگر یہ قانون صرف خواتین کے لیے نافذ کیا گیا تو یہ امتیازی رویہ کہلائے گا جو کسی صورت قابل قبول نہیں ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

دنیا میں کورونا سے 53 لاکھ سے زیادہ لوگ متاثر

عالمی وبا کورونا وائرس (کووڈ۔19) کی وبا بڑھتی جارہی ہے اور پوری دنیا میں اس سے متاثروں کی تعداد بڑھ کر 53 لاکھ سے زیادہ ہوگئی ہے جبکہ اب تک 3.43 لوگ اس بیماری سے موت کی آغوش میں جاچکے ہیں۔

کورونا کی وبا کے درمیان 8/کروڑ بچوں کی ٹیکہ کاری ہوگی متاثر

عالمی وبا کورونا وائرس(کووڈ 19) نے دنیا بھر میں جہاں قہر برپا کیا ہوا ہے وہیں اس کی وجہ سے خسرہ،پولیو اور ڈپ تھیریا جیسی بیماریوں کا سامنا کررہے کم از کم 68؍امیرو غریب ملکوں کے ایک سال سے کم عمر کے تقریباً آٹھ کروڑ بچوں کی ٹیکہ کاری مہم میں رخنہ آنے کا خدشہ ہے -

برازیل میں ایک دن میں 1179 مریض چل بسے

لاطینی امریکہ میں کرونا وائرس سے بدترین متاثر ملک برازیل میں منگل کو 1179 افراد ہلاک ہوئے، جو ملک میں 24 گھنٹوں کے دوران ہلاکتوں کا نیا ریکارڈ ہے۔ ان میں سے 324 اموات صرف ایک صوبے ساؤپولو میں ہوئی ہیں۔