آئی اے ایس افسر محمد اعجاز اسد 'راشٹریہ گورو ایوارڈ' کے لئے نامزد

Source: S.O. News Service | Published on 11th July 2020, 11:23 AM | ملکی خبریں |

سری نگر،11؍جولائی (ایس او نیوز؍ایجنسی) جموں وکشمیر کے ضلع پونچھ کے مینڈھر سے تعلق رکھنے والے آئی اے ایس افسر محمد اعجاز اسد کو ایڈمنسٹریشن اور لٹریچر کے شعبوں میں نمایاں کام کرنے پر راشٹریہ گورو ایوارڈ کے لئے نامزد کیا گیا ہے۔ انڈیا انٹرنیشنل فرنڈشپ سوسائٹی کی طرف سے یہ ایوارڈ اُن غیر معمولی بھارتی شہریوں کو دیا جاتا ہے جو تعلیم، سیاست و سوشل ورک، فائن آرٹس، انڈسٹری، سائنس اور ٹیکنالوجی جیسے شعبوں میں نمایاں کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہیں۔

انتظامی خدمات کی مثالی فراہمی اور اپنی اردو شاعری کے لئے مشہور محمد اعجاز اسد کو یہ ایوارڈ قومی راجدھانی نئی دہلی میں منعقد ہونے والی ایک تقریب میں دیا جائے گا جس کی تاریخ کا کورونا وائرس وبا کی وجہ سے ابھی اعلان نہیں کیا گیا ہے۔ آئی اے ایس افسر ہونے کے علاوہ محمد اعجاز اسد اردو زبان کے شاعر بھی ہیں۔ 'برف زار' ان کا پہلا شعری مجموعہ ہے جس پر انہیں ایوارڈ بھی مل چکا ہے۔ ان کی غزلیں 'ریختہ ڈاٹ او آر جی' پر دستیاب ہیں۔

سن 2012 بیچ کے آئی اے ایس افسر اعجاز اسد فی الوقت کشمیر پاور ڈسکام کے منیجنگ ڈائریکٹر کے طور پر اپنی خدمات انجام دے رہے ہیں۔ وہ جموں وکشمیر کے دونوں صوبوں میں بحیثیت ضلع مجسٹریٹ اپنی خدمات انجام دے چکے ہیں اور اپنی انسانیت نوازی کی وجہ سے لوگوں میں کافی مقبول ہیں۔ اعجاز اسد سرحدی ضلع پونچھ سے آئی اے ایس امتحان پاس کرنے اور قبل ازیں آئی آئی ٹی دلی میں داخلہ پانے والے پہلے نوجوان تھے۔ آئی اے ایس امتحانات پاس کرنے سے قبل انہوں نے آئی آئی ٹی دلی سے میکینکل انجینئرنگ میں بی ٹیک کیا تھا۔

ایک نظر اس پر بھی

کشمیر میں بی جے پی کارکنان کو ایک منصوبہ کے تحت نشانہ بنایا جارہا: الطاف ٹھاکر

 بی جے پی جموں و کشمیر یونٹ کے ترجمان الطاف ٹھاکر نے پارٹی کارکنوں پر ہونے والے حملوں کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ کشمیر میں بی جے پی کے کارکنوں کو ایک منصوبہ بند سازش کے تحت نشانہ بنایا جا رہا ہے۔

مرکزی حکومت کا ہتھیاروں کی درآمد پر پابندی کا فیصلہ ناقابل فہم: سوگت رائے

مرکزی حکومت کے ذریعہ 101ملٹری ہتھیاروں کی درآمدگی پر پابندی عاید کیے جانے پر ترنمول کانگریس نے سوال کھڑے کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ قدم اٹھانے سے قبل ملک میں اسلحہ سازی کی صلاحیت میں اضافہ کرنے کی ضرورت تھی اور اس کے لئے روڈ میپ تیار کیا جانا چاہیے۔

کشمیر: ڈاکٹر شاہ فیصل نے اٹھایا حیرت انگیز قدم، پارٹی کے صدارتی عہدہ سے دیا استعفیٰ

 کشمیری قوم کے لئے نیلسن منڈیلا بننے کی تمنا رکھنے والے 36 سالہ سابق آئی اے ایس افسر ڈاکٹر شاہ فیصل نے گزشتہ برس مارچ میں 'ہوا بدلے گی' نعرے کے تحت لانچ کردہ اپنی جماعت 'جموں و کشمیر پیپلز موومنٹ' کے صدارتی عہدے سے استعفیٰ دے دیا ہے۔ ان کی جگہ پر پارٹی کے نائب صدر فیروز پیرزادہ کو ...