بی جے پی لیڈر جی وی ایل بولے، کشمیر پر پاکستان کی زبان بول رہے ہیں اویسی اور راہل گاندھی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 14th August 2019, 10:39 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،14اگست(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)جموں و کشمیر کے مسئلے پر اپوزیشن لیڈر مودی حکومت پر نشانہ سادھ رہے ہیں اے آئی ایم سربراہ اور حیدرآباد سے ممبر پارلیمنٹ اسد الدین اویسی نے مرکزی حکومت پر جموں و کشمیر میں کرفیو لگانے کا الزام لگایا تو وہیں کانگریس ممبر پارلیمنٹ راہل گاندھی بھی کشمیر مسئلے کو لے کر مودی حکومت پر حملہ آور ہیں،جس کو لے کر بی جے پی کے لیڈر جی وی ایل نرسمہا کا کہنا ہے کہ اے آئی ایم چیف اسد الدین اویسی اور کانگریس ایم پی راہل گاندھی کشمیر پر پاکستان کی زبان بول رہے ہیں۔جی وی ایل کا کہنا ہے کہ اویسی جیسے لیڈر ملک کو توڑنے والا بیان دے رہے ہیں۔

بتا دیں کہ اویسی نے بدھ کو کہا تھا کہ مرکزی حکومت جموں و کشمیر کی زمین پر قبضہ کرنا چاہتی ہے، اس کشمیریوں سے محبت نہیں ہے۔اویسی نے کہا ہے کہ اس وقت جموں و کشمیر میں ایمرجنسی جیسے حالات ہیں۔جی وی ایل نرسمہا نے کہا کہ اویسی اور راہل گاندھی بتائیں کہ کیا اس سے پہلے جموں اور کشمیر میں کبھی کرفیو نہیں لگا ہے۔انہوں نے کہا کہ راہل گاندھی کی منشا کو ملک کے عوام جانتی ہے، اس لئے ان کی پارٹی مسلسل کردیتا جارہی ہے۔جی وی ایل نرسمہا نے کانگریس اور اے آئی ایم پر الزام لگایا کہ راہل گاندھی اور اویسی کے بیان سے ایسا نہیں لگتا ہے کہ وہ چاہتے ہیں کہ کشمیر میں حالات معمول ہو۔جی وی ایل نرسمہا نے کہا کہ راہل گاندھی کے جموں کشمیر اور لداخ جانے سے وہاں کے حالات اور بگڑیں گے۔

ایک نظر اس پر بھی